ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

UP Panchayat Chunav 2021: اترپردیش میں پنچایت انتخابات کے پہلے مرحلے کے پولنگ جاری،کووڈ پروٹول پرکی جارہی ہے عمل آوری

UP Panchayat Chunav 2021:صبح سے ہی لوگوں کی بڑی تعداد اپنے حق رائے دہی استعمال کرنے کے لئے گھروں سے نکل رہے ہیں۔ ریاستی الیکشن کمیشن نے اس سلسلے میں اعداد و شمار جاری کردیئے ہیں۔ 18 اضلاع میں 51 ہزار 176 پولنگ بوتھس پر پولنگ ہورہی ہے۔ اس میں 18 اضلاع کے 3 کروڑ 16 لاکھ 46 ہزار 162 ووٹر اپنے حق رائے دہی کا استعمال کررہے ہیں۔

  • Share this:
UP Panchayat Chunav 2021: اترپردیش میں پنچایت انتخابات کے پہلے مرحلے کے پولنگ جاری،کووڈ پروٹول پرکی جارہی ہے عمل آوری
علامتی تصویر

پہلے مرحلے اتر پردیش پنچایت انتخابات 2021(UP Panchayat Chunav 2021) کے  لئے پہلے مرحلے کے لئے پولنگ آج جمعرات کی صبح سات بجے شروع ہوگئی ہے۔ صبح سے ہی لوگوں کی  بڑی تعداد اپنے حق رائے دہی استعمال کرنے کے لئے گھروں سے نکل رہے ہیں۔ ریاستی الیکشن کمیشن نے اس سلسلے میں اعداد و شمار جاری کردیئے ہیں۔ 18 اضلاع میں 51 ہزار 176 پولنگ بوتھس پر پولنگ ہورہی ہے۔ اس میں 18 اضلاع کے 3 کروڑ 16 لاکھ 46 ہزار 162 ووٹر اپنے حق رائے دہی کا استعمال کررہے ہیں۔ پہلے مرحلے میں 18 اضلاع میں ووٹنگ ہوگی۔ جس کے لیے مختلف اضلاع میں 51176 پولنگ بوتھس قائم کیے گئے ہیں۔ صبح 7 بجے سے شام 6 بجے تک ووٹنگ ہوگی۔ کوویڈ پروٹوکول کی رائے دہی کے دوران سختی سے عمل کیا جائے گا۔ یوپی پنچایت انتخابات میں پہلے مرحلے میں پانچ لاکھ سے زیادہ امیدوار میدان میں ہیں۔جن  کی قسمت کا فیصلہ آج بیلٹ باکس میں بند ہوجائیگا۔آج سے  شروع ہونے والے اترپردیش پنچایت انتخابات کے لئے ووٹنگ چار مرحلوں میں ہوگی۔



۔15 اپریل
۔ 19 اپریل
۔ 26 اپریل
۔29 اپریل

 

انتخابات میں بی جے پی، بی ایس پی، سماج وادی پارٹی اور کانگریس جیسی بڑی بڑی سیاسی جماعتیں شامل ہیں۔ اس جے علاوہ اے آئی ایم آئی ایم، عام آدمی پارٹی اور بھیم آرمی چیف، چندر شیکھر آزاد کی آزاد سماج پارٹی شامل ہیں۔ جو یہاں اپنا انتخابی آغاز کرے گی۔ تاہم امیدوار الیکشن کمیشن کے ذریعہ دیئے گئے مفت علامتوں پر مقابلہ کریں گے۔

انتخابات کے لئے امیدواروں میں جون پور کے وارڈ 26 سے ضلعی پنچایت کے عہدے کے لئے مقابلہ کرنے والی مس انڈیا 2015 کی امیدوار اور ماڈل دیکش سنگھ اور بی جے پی کے ممبر اور سیاست دان اور قتل کے ملزم کی اہلیہ جونپور کے وارڈ 45 سے شامل ہیں۔


سماج وادی پارٹی کے سربراہ ملائم سنگھ یادو کی بھانجی سنڈھیا یادو بھی انتخابی میدان میں ہیں اور دلچسپ بات یہ ہے کہ مین پوری پنچایت سیٹ کے لئے بی جے پی کی حمایت حاصل ہے۔

یہاں اضلاع کی فہرست ہے جہاں پہلے مرحلے میں انتخابات ہوں گے:

ایودھیا

آگرہ

کانپور

غازی آباد

گورکھپور

جونپور

جھانسی

الہ آباد

بریلی

بھڈوہی

محبوبہ

رام پور

رئیسبیلی

شروستی

سنت کبیر نگر

سہارنپور

ہردوئی

ہاتراس

کوشل کشور (Kaushal Kishor) سمیت بی جے پی کے متعدد ایم ایل اے اور ارکان پارلیمنٹ نے الیکشن کمیشن سے اترپردیش پنچایت انتخابات (UP Panchayat Polls) ملتوی کرنے کی اپیل کی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ریاست میں کورونا وائرس کے حالیہ اضافے کے درمیان پولنگ ایک خطرہ بن سکتی ہے۔ریاستی الیکشن کمیشن (ایس ای سی) نے مارچ میں کہا تھا کہ پنچایت انتخابات کے لئے گھر گھر جاکر انتخابی مہم کے دوران پانچ سے زیادہ افراد کو امیدوار کے ساتھ جانے کی اجازت نہیں ہوگی۔

ایڈیشنل الیکشن کمشنر وید پرکاش ورما (Ved Prakash Verma) نے بتایا کہ ایس ای سی کی ہدایت پر عمل درآمد کو یقینی بنانے کے لئے اضافی ضلعی مجسٹریٹوں کے تحت تین رکنی ٹیم تشکیل دی گئی ہے۔چیف میڈیکل افسران کو نوڈل آفیسر بنایا گیا ہے اور ضلعی سطح پرکورونا وائرس (کووڈ۔19) کی روک تھام پر دباؤ ڈالا گیا ہے۔ان کا کہنا ہے کہ انتخاب کے دوران رائے دہندگان کو ماسک لگانا اور سماجی دوری برقرار رکھنی ہوگی۔ پولنگ مراکز پر چھ فٹ کے فاصلے پر حلقے بنانے کی بھی ہدایت جاری کردی گئی ہے۔

کانگریس نے اعتماد کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ ’پنچایت انتخابات شاندار طریقے سے انجام دیئے جائیں گے۔ پارٹی کے ترجمان اشوک سنگھ نے کہا ’یوپی میں بی جے پی کی چار سالہ حکومت کے بدانتظامی سے لوگ تنگ آچکے لوگ کانگریس کی طرف امید کی نگاہ سے دیکھ رہے ہیں‘۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: Apr 15, 2021 08:26 AM IST