ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اترپردیش: آگرہ کےنجی اسپتال میں فرضی ماک ڈرل،5منٹ میں22مریضوں کی موت،اسپتال کوکیاگیاسیل

شری پارس اسپتال کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا وائرل ہونے کے بعد ، اب ڈی ایم کے حکم پر اسپتال کو سیل کردیا جارہا ہے۔ اس کے ساتھ ہی اسپتال کے آپریٹر کے خلاف ایپیڈیمیک ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کرنے کی ہدایت بھی دی گئی ہے۔

  • Share this:
اترپردیش: آگرہ کےنجی اسپتال میں فرضی ماک ڈرل،5منٹ میں22مریضوں کی موت،اسپتال کوکیاگیاسیل
ماک ڈرل کے دوران صرف 5منٹ میں 22 افراد کی موت ہوگئی ہے ۔(علامتی تصویر:Shutterstock)-

لکھنؤ۔ اترپردیش کے آگرہ میں ایک نجی اسپتال نے مریضوں کا آکسیجن لیول چیک کرنے کے لیے ماک ڈرل کیا اور اس ماک ڈرل کے دوران صرف 5منٹ میں 22 افراد کی موت ہوگئی ہے ۔ شری پارس اسپتال کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا وائرل ہونے کے بعد ، اب ڈی ایم کے حکم پر اسپتال کو سیل کردیا جارہا ہے۔ اس کے ساتھ ہی اسپتال کے آپریٹر کے خلاف ایپیڈیمیک ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کرنے کی ہدایت بھی دی گئی ہے۔جبکہ پرنسپل سکریٹری ہوم نے پاراس اسپتال کے مالک کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا حکم دیا ہے۔ یادر ہے کہ پارس اسپتال کی ایک وائرل ویڈیو میں 22 سنگین مریض آکسیجن کے بحران میں فرضی ڈرل کی وجہ سے پانچ منٹ میں ہلاک ہونے کے متعلق میں بتایا جارہا ہے۔ ویڈیو میں ، اسپتال کے آپریٹر کا کہنا ہے کہ 22 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔ یہ پوری بات چیت آکسیجن بحران کے تناظر میں ہے جو 26۔27 اپریل کو منظر عام پر آئی تھی۔


سرکاری ریکارڈ میں 26 اپریل کو سری پارس اسپتال میں چار کورونا مریضوں کی موت ریکارڈ کی گئی۔ اس سے قبل ، ڈی ایم پربھو نارائن سنگھ نے کہا تھا کہ 26 اور 27 اپریل کو آکسیجن کی کمی ہے۔ لیکن ساری رات محکمہ صحت کے ساتھ انتظامیہ کی ٹیم اسپتالوں میں آکسیجن پہنچاتی رہی۔ انہوں نے کہا تھا کہ 26 اپریل کو کورونا کے 97 مریضوں کو شری پارس اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا ، ان میں سے 4 کی موت ہوگئی تھی۔ اس معاملے میں ، یوگی حکومت کے ترجمان اور کابینہ کے وزیر سدھارتھ ناتھ سنگھ نے معاملے کو گھناؤنا جرم قرار دیتے ہوئے کارروائی کی بات کی تھی۔


راہل گاندھی نے ٹویٹ کیا تھا


کانگریس کے رہنما راہل گاندھی نے آج آگرہ کے پارس اسپتال کیس میں ٹویٹ کیا تھا۔ انہوں نے اس معاملے میں ذمہ داروں کے خلاف فوری کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔ انہوں نے لکھا ، "بی جے پی حکومت میں آکسیجن اور انسانیت دونوں کی شدید قلت ہے۔ اس خطرناک جرم کے ذمہ داران کے خلاف فوری طور پر کارروائی کی جانی چاہئے۔ اس غم کی گھڑی میں ، میں مہلوکین کے لواحقین سے تعزیت کرتا ہوں "
Published by: Mirzaghani Baig
First published: Jun 08, 2021 05:46 PM IST