உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Saharanpur Violence: پولیس نے 64 افراد کو کیا گرفتار، دو کے گھر پر چلا بلڈوزر

    Saharanpur Violence: پولیس نے 64 افراد کو کیا گرفتار، دو کے گھر پر چلا بلڈوزر

    Saharanpur Violence: پولیس نے 64 افراد کو کیا گرفتار، دو کے گھر پر چلا بلڈوزر

    Saharanpur Violence: یوپی کے کئی اضلاع میں نماز جمعہ کے بعد ہونے والے تشدد کے سلسلے میں پولیس نے اب تک 230 لوگوں کو گرفتار کیا ہے۔ اس معاملہ میں سہارنپور پولیس نے بھی کارروائی کی ہے۔

    • Share this:
      سہارنپور: یوپی کے کئی اضلاع میں نماز جمعہ کے بعد ہونے والے تشدد کے سلسلے میں پولیس نے اب تک 230 لوگوں کو گرفتار کیا ہے۔ اس معاملہ میں سہارنپور پولیس نے بھی کارروائی کی ہے۔ سہارنپور کے ایس ایس پی آکاش تومر نے کہا کہ نماز جمعہ کے بعد ہونے والے تشدد کے معاملہ میں اب تک 64 لوگوں کو گرفتار کیا گیا ہے۔ وہیں پولیس نے شہر کے منڈی تھانہ علاقے میں کھتہ کھیڑی اور حبیب گڑھ کے رہنے والے عبدالواقف اور مزمل کے گھروں کو بلڈوز چلا کر گرا دیا ہے۔

      دراصل یوپی کے وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ نے نماز جمعہ کے بعد ریاست کے کئی اضلاع میں ہونے والے تشدد کو لے کر واضح طور پر کہا کہ کوئی بھی قصوروار پولیس کی کارروائی سے بچ نہ پائے۔ ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ پولیس کارروائی کا شکار معصوم نہیں بننا چاہئے۔

       

      یہ بھی پڑھئے : وادی کشمیر میں ٹارگیٹ کلنگز کے خلاف آواز بلند کریں عوام : ایل جی منوج سنہا


      ایس ایس پی آکاش تومر کے مطابق سہارنپور میں نماز جمعہ کے بعد ہوئے تشدد کے سلسلے میں اب تک 64 لوگوں کو گرفتار کیا گیا ہے۔ علاوہ ازیں غیرقانونی تجاوزات اور تعمیرات پر بلڈوزر چلا کر ملزمان کے خلاف کارروائی کی جارہی ہے۔ بلڈوزر کی کارروائی عبدالواقف اور مزمل کے گھر سے شروع ہوئی، جن کی شناخت سی سی ٹی وی فوٹیج کی بنیاد پر کی گئی تھی ۔

       

      یہ بھی پڑھئے : راجیہ سبھا انتخابات میں جیت ملنے پر بی جے پی نے منایا جشن


      اس معاملہ کو لے کر سہارنپور کے ایس پی سٹی راجیش کمار نے کہا کہ ہم مسلسل ملزمین کی مجرمانہ کنڈلی معلوم کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ اسی سلسلے میں دو ملزمان کی غیر قانونی تعمیرات کو بلڈوزر سے مسمار کر دیا گیا ہے۔ اس بلڈوزر کی کارروائی کا مقصد ان ایسے لوگوں کی کمر توڑنا ہے، تاکہ وہ آئندہ کبھی جرائم کا ارتکاب نہ کریں۔ اس کے ساتھ ہی ایس پی سٹی نے کہا کہ تشدد کے معاملہ میں گرفتار ملزمین کے خلاف این ایس اے کے تحت بھی کارروائی کی جائے گی۔

      ویسے اس سے پہلے یوپی کے اے ڈی جی لا اینڈ آرڈر پرشانت کمار نے کہا کہ کل پیش آنے والے اس واقعہ میں کچھ لوگوں نے کچھ اضلاع میں امن و امان کو خراب کرنے کی کوشش کی تھی، جن کی شناخت کر لی گئی ہے۔ ملزمان کے خلاف گینگسٹر ایکٹ کے تحت کارروائی کی جائے گی۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: