உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    لکھیم پور کھیری واقعہ کیلئے SIT تشکیل، 48 گھنٹوں میں جوڈیشیل کمیٹی بھی شروع کرے گی جانچ

    لکھیم پور کھیری واقعہ کیلئے SIT تشکیل، 48 گھنٹوں میں جوڈیشیل کمیٹی بھی شروع کرے گی جانچ

    لکھیم پور کھیری واقعہ کیلئے SIT تشکیل، 48 گھنٹوں میں جوڈیشیل کمیٹی بھی شروع کرے گی جانچ

    Lakhimpur Kheri News : ایس آئی ٹی میں 6 ارکان پر مشتمل ایک ٹیم لکھیم پور واقعہ کی پوری جانچ کرے گی ۔ اس کے ساتھ ہی خبر ہے کہ لکھیم پور کھیری معاملہ میں جوڈیشل انکوائری کمیٹی کل تشکیل دی جائے گی ۔ جوڈیشل کمیٹی 48 گھنٹوں میں جانچ شروع کرے گی ۔

    • Share this:
      لکھنؤ : اتر پردیش کی یوگی حکومت نے لکھیم پور واقعہ کے لیے خصوصی تحقیقاتی ٹیم (ایس آئی ٹی) تشکیل دینے کا اعلان کیا ہے ۔ جانکاری کے مطابق ایس آئی ٹی میں 6 ارکان پر مشتمل ایک ٹیم لکھیم پور واقعہ کی پوری جانچ کرے گی ۔ اس کے ساتھ ہی خبر ہے کہ لکھیم پور کھیری معاملہ میں جوڈیشل انکوائری کمیٹی کل تشکیل دی جائے گی ۔ جوڈیشل کمیٹی 48 گھنٹوں میں جانچ شروع کرے گی ۔

      وہیں ایس آئی ٹی کی جانب سے معاملہ میں آئی جی رینج لکھنؤ لکشمی سنگھ نے کہا کہ قصورواروں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی ۔ انہوں نے بتایا کہ مرکزی وزیر مملکت برائے داخلہ اجے مشرا ٹینی کے بیٹے آشیش مشرا کو اس کیس میں نامزد ملزم بنایا گیا ہے ۔

      بتادیں کہ لکھیم پور واقعہ میں درج ایف آئی آر کی کاپی نیوز 18 کے پاس ہے ۔ آشیش مشرا عرف مونو کے خلاف یہ ایف آئی آر درج کی گئی ہے ۔ اس میں 15 سے 20 نامعلوم افراد کو بھی ملزم بنایا گیا ہے ۔ ایف آئی آر میں سازش رچنے کا الزام لگایا گیا ہے۔ وہیں قتل (302) کے ساتھ ساتھ حادثہ میں موت ( 304 اے ) کی دفعات بھی لگائی گئی ہیں ۔

      اس کے علاوہ وزیر مملکت برائے داخلہ اجے مشرا کے وائرل ویڈیو کا بھی ایف آئی آر میں ذکر کیا گیا ہے ۔ وائرل ویڈیو پر حکومت ہند کی جانب سے اجے مشرا کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کئے جانے کا تذکرہ بھی ہے ۔ ایف آئی آر کے مطابق واقعہ کے دن آشیش مشرا عرف مونو اپنی تھار گاڑی میں بائیں جانب بیٹھا ہوا تھا۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: