اپنا ضلع منتخب کریں۔

    اتر پردیش اردو اکادمی کی جانب سے 2019 اور 2021 کے انعامات کا اعلان، جانئے کن کن کو ملا

    اتر پردیش اردو اکادمی کی جانب سے 2019 اور 2021 کے انعامات کا اعلان

    اتر پردیش اردو اکادمی کی جانب سے 2019 اور 2021 کے انعامات کا اعلان

    اتر پردیش اردو اکادمی کے چئرمین چوہدری کیف الوریٰ کہتے ہیں کہ انعامات سے جہاں ایک طرف قلمکاروں کی حوصلہ افزائی ہوتی ہے وہیں دوسری جانب زبان و ادب کی ترقی کے راستے بھی ہموار ہوتے ہیں ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Uttar Pradesh | Lucknow
    • Share this:
    لکھنئو : اتر پردیش اردو اکادمی مجلس عاملہ کی کی جانب سے 2019 اور 2021 کے انعامات کا اعلان آج  لکھنئو میں کر دیا گیا ۔ 2019 کا (مجموعی خدمات ) مولانا آزاد ایوارڈ پروفیسر عبد الحق کو دیا گیا ہے ۔ جبکہ 2021 کا مولانا آزاد ایوارڈ پروفیسرعتیق اللہ کو دیا گیا ہے یہ دونوں ایوارڈ پانچ، پانچ لاکھ روپے اور توصیفی اسناد پر مشتمل ہیں ۔ اس کے علاوہ 2019 میں اردو شاعری کا ایوارڈ اشعر رام نگری اور 2021 کا اردو شاعری ایوارڈ سنبھل کے ڈاکٹر طارق قمر کو دیا گیا ہے ( یہ ایوارڈ ایک ایک لاکھ روپئے پر مشتمل ہیں ) ۔

    ساتھ ہی فکشن، تنقید، ادب اطفال ، فروغ ادب، ترجمہ، قومی یکجہتی،عوامی ادب ، نشر و اشاعت ، تدریس اور فکشن کی تنقید کے زمروں میں بھی ایک ایک لاکھ روپئے پر مشتمل ( مع شاعری کلُ دس اور ڈیڑھ ڈیڑھ لاکھ روپئے پر مشتمل دو ایوارڈ) پیش کئے گئے ہیں ۔ پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا کے لئے پچاس پچاس ہزار روپے پر مشتمل دو ایوارڈ سینئر صحافیوں کو دئے گئے ہیں، جبکہ پچیس پچیس ہزار روپے پر مشتمل دو ایوارڈ اردو زبان کے جونبئر صحافیوں کو بھی دئے گئے ہیں۔

    اس کے علاوہ  25000 / 20000/15000/10000 کے انعامات کتب پر بھی دئے گئے ہیں ۔ 2019 اور 2021 کی تین سو سے زیادہ کتابوں پر یہ انعامات معیار کے مطاطق تقسیم کئے گئے ہیں ۔ اتر پردیش اردو اکادمی کے صدر چوہدری کیف الوریٰ کہتے ہیں کہ انعامات سے قلم کاروں ادیبوں اور شاعروں اور مختلف میدانوں میں اردو کی خدمات انجام دینے والے لوگوں کی حوصلہ افزائی ہوتی ہے ۔

    اتر پردیش مجلسِ عاملہ کے جملہ اراکین اور سکریٹری عادل حسن کہتے ہیں کہ انعامات کی تقسیم میں اردو خدمات معیار و وقار اور دیانت داری کو پوری طرح ملحوظ رکھا گیا ہے ۔ اتر پردیش اردو اکادمی کی کوشش ہے کہ وہ لوگ جو اردو زبان و ادب اور اردو تہذیب سچ ثقافت کے لئے قربانیاں پیش کررہے ہیں ۔ ان کی خدمات کا اعتراف کیا جائے ۔

    یہ بھی پڑھئے: آرٹ آف لیونگ کے بانی سری سری روی شنکر کے ہیلی کاپٹر میں خرابی، ہوئی ہنگامی لینڈنگ


    یہ بھی پڑھئے: لکھیم پور کھیری معاملہ: آشیش مشراکوعبوری ضمانت، جانیےاب تک کی کیاہیں تازہ ترین تفصیلات



    اہم اور خاص بات یہ بھی ہے کہ 2019 یعنی کورونا کے دوران ایوارڈ کی تقسیم کو یقینی نہیں بنایا جاسکا تھا، لیکن چیئرپرسن کی قیادت میں مجلس عاملہ اور سکریٹری کی خصوصی کوششوں سے 2019 کے انعامات کا بھی اعلان کردیا گیا، جو اکادمی کا ایک قابل ستائش قدم ہے ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: