உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Gyanvapi Masjid Case: گیان واپی مسجد کے وضوخانہ میں 'شیولنگ' یا فوارہ؟ پڑھئے کورٹ کمشنر کی رپورٹ

    Gyanvapi Masjid Case: گیان واپی مسجد کے وضوخانہ میں 'شیولنگ' یا فوارہ؟ پڑھئے کورٹ کمشنر کی رپورٹ

    Gyanvapi Masjid Case: گیان واپی مسجد کے وضوخانہ میں 'شیولنگ' یا فوارہ؟ پڑھئے کورٹ کمشنر کی رپورٹ

    Gyanvapi Mosque Survey Report: گیان واپی مسجد کی سروے ۔ ویڈیوگرافی رپورٹ کورٹ کے ذریعہ تشکیل کمیشن نے وارانسی کورٹ کو سونپ دی ہے ۔ یہ سروے اسپیشل کورٹ کمشنر وشال سنگھ ، دوسرے کمشنر اجے مشرا اور اجے پرتاپ سنگھ کی ٹیم نے چودہ ، پندرہ اور سولہ مئی کو کیا تھا ۔

    • Share this:
      وارانسی : گیان واپی مسجد کی سروے ۔ ویڈیوگرافی رپورٹ کورٹ کے ذریعہ تشکیل کمیشن نے وارانسی کورٹ کو سونپ دی ہے ۔ یہ سروے اسپیشل کورٹ کمشنر وشال سنگھ ، دوسرے کمشنر اجے مشرا اور اجے پرتاپ سنگھ کی ٹیم نے چودہ ، پندرہ اور سولہ مئی کو کیا تھا ۔ وہیں وارانسی ضلع سول جج روی کمار دیواکر کے سامنے پیش کی گئی رپورٹ میں کئی باتیں سامنے آئی ہیں ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: بھوپال کی تاریخی جامع مسجد پر سنسکرتی بچاؤ منچ نے کیا شیومندر ہونے کا دعوی


      اسپیشل کورٹ کمشنر وشال سنگھ کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ گیان واپی مسجد کے وضو خانہ کے پانی کو کم کرنے پر ۔۔۔ فٹ کی ایک گول شیپ کی چیز دکھائی دی  اس کے ٹاپ پر کٹا ہوا گول ڈیزائن کا ایک الگ سفید پتھر دکھائی پڑا، جس کے بیچوں و بیچ آدھی انچ سے کم گول شیپ کا چھید تھا ۔ سینک ڈالنے پر یہ 63 سینٹی میٹر گہرا پایا گیا ۔ اس کے گولائی شیپ کو ناپا گیا تو بیس کا حصہ تقریبا چار فٹ پایا گیا ۔ اس دوران عرضی گزار فریق نے اس کو شیولنگ بتایا تو مسجد فریق نے کہا کہ یہ فوارہ ہے ۔ اس کی پوری پوری فوٹوگرافی اور ویڈیوگرافی کی گئی، جو رپورٹ کے ساتھ سیل بند ہے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے : SC کا فیصلہ آنے کے بعد نوجوت سنگھ سدھو کا پہلا ردعمل، کہا: خود کو قانون کے حوالے کروں گا


      اس کے ساتھ ہی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ جب انجمن انتظامیہ کے منشی اعجاز محمد سے پوچھا گیا کہ یہ فوارہ کب سے بند ہے تو انہوں نے کہا کہ کافی وقت سے بند ہے ۔ اس کے بعد ان سے دوبارہ پوچھا گیا تو انہوں نے کہا کہ بیس سال سے بند ہے ۔ پھر اس کے بعد کہا کہ یہ بارہ سال سے بند ہے ۔

      اس دوران ہندو فریقوں نے سروے کے دوران فوارے کو چلاکر دکھانے کیلئے کہا تو مسجد کمیٹی کے منشی نے فوارہ چلانے سے عاجزی کا اظہار کیا ۔ اس کے ساتھ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مبینہ فوارہ میں بیچوں بیچ صرف 63 سینٹی کا ایک سوراخ ملا ہے ۔ اس کے علاوہ کوئی سوراخ کسی بھی سائیڈ یا کسی بھی دیگر جگہ پر کھونے پر نہیں ملا ۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ جانچ کے دوران فوارہ کیلئے کوئی پائپ داخل کرنے کی جگہ نہیں ملی ہے۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: