ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

تدفین کے 10 دن بعد پولیس نے قبر سے نکالی انیس کی لاش ، اہل خانہ کو ہے یہ بڑا شک ، جانئے کیا ہے معاملہ

انیس کے بھائی نفیس قریشی نے بتایا کہ اس کے بھائی کی موت کے دو دن بعد انہیں لوگوں سے پتہ چلا کہ اس کے ساتھ کافی دنوں سے برا ہورہا تھا ، اسی کی وجہ سے شاید اس کا قتل کردیا گیا ۔

  • Share this:
تدفین کے 10 دن بعد پولیس نے قبر سے نکالی انیس کی لاش ، اہل خانہ کو ہے یہ بڑا شک ، جانئے کیا ہے معاملہ
تدفین کے 10 دن بعد پولیس نے قبر سے نکالی انیس کی لاش ، اہل خانہ کو ہے یہ بڑا شک ، جانئے کیا ہے معاملہ

اتراکھنڈ کے دہرادون میں قتل کے شک میں 10 دن پہلے دفن کی گئی لاش کو پولیس نے قبر سے نکال کر پوسٹ مارٹم کروایا ، جس کے بعد لاش کی دوبارہ تدفین کردی گئی ۔ اس سے پہلے ضلع انتظامیہ کے افسران کی موجودگی مہلوک کا بسرہ لے کر اس کو جانچ کیلئے بھیجا گیا ۔ پولیس کو اب اس معاملہ میں پوسٹ مارٹم کی رپورٹ کا انتظار ہے ، جس کے بعد معاملہ کی جانچ آگے بڑھائی جائے گی ۔


گزشتہ 17 جون کو دہرادون کے کوتوالی تھانہ حلقہ کے کانولی روڈ علاقہ میں 40 سالہ انیس کی موت ہوگئی تھی ۔ اہل خانہ نے پوسٹ مارٹم کروائے بغیر ہی لاش کی تدفین کردی ، لیکن اس معاملہ میں انیس کی والدہ ، بھائی اور دیگر اہل خانہ نے قتل کا شک ظاہر کرتے ہوئے دہرادون کے ڈی ایم اور ایس پی سے پوسٹ مارٹم کر کے معاملہ کی جانچ کرنے کی فریاد کی ۔ اہل خانہ کے اس مطالبہ پر ہفتہ کو چندن نگر قبرستان سے لاش نکالی گئی اور پھر اس کا پوسٹ مارٹم کیا گیا اور بسرہ لے کر جانچ کیلئے بھیج دیا گیا ۔ پولیس کو اب دونوں رپورٹ کا انتظار ہے ۔


انیس کے بھائی نفیس قریشی نے بتایا کہ اس کے بھائی کی موت کے دو دن بعد انہیں لوگوں سے پتہ چلا کہ اس کے ساتھ کافی دنوں سے برا ہورہا تھا ، اسی کی وجہ سے شاید اس کا قتل کردیا گیا ۔ اتنا ہی نہیں انیس کے چہرے اور جسم پر کئی طرح کے نشانات بھی دیکھے گئے تھے ۔ اسی اندیشہ کے پیش نظر ضلع انتظامیہ سے پورے معاملہ کی جانچ کی اپیل کی ۔


ادھر پوسٹ مارٹم کرانے پہنچے تحصیلدار نے کہا کہ یہ معاملہ مشتبہ حالات میں موت کا ہے ، اس لئے پوسٹ مارٹم اور بسرہ کی رپورٹ کی بنیاد پر آگے کی کارروائی کی جائے گی ۔
First published: Jun 27, 2020 09:13 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading