اپنا ضلع منتخب کریں۔

    اُترکاشی:سڑک سے محض 200 میٹر دور رہ گئی چینی سرحد، بی آر او تعمیری کاموں میں مصروف

    اُترکاشی:سڑک سے محض 200 میٹر دور رہ گئی چینی سرحد، بی آر او تعمیری کاموں میں مصروف

    اُترکاشی:سڑک سے محض 200 میٹر دور رہ گئی چینی سرحد، بی آر او تعمیری کاموں میں مصروف

    سرحد پر بی آر او کئی پُلوں کی تعمیر بھی کررہا ہے۔ پاگل نالے پر ایک پُل کی تعمیری کام مکمل بھی ہوچکے ہیں جس کا ایک ماہ قبل ہی افتتاح ہوچکا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Uttarkashi, India
    • Share this:
      بی آر او چینی سرحد پر سڑکوں کا جال بچھا رہا ہے۔ چینی سرحد کے 200 میٹر قریب تک سڑک تعمیر کی جاچکی ہے۔ اب اس نوتعمیرشدہ سڑک پر بلیک ٹاپ کا کام کیا جانا ہے۔ اس کے علاوہ ایک اور سڑک زیرتعمیر ہے جسے بھی جلد پورا کرلیا جائے گا۔

      تزویراتی لحاظ سے اہم چین سرحد پر بی آر او بہت سی سڑکیں بنا رہا ہے۔ اسی سال بی آر او کے دو منصوبے منظور ہوئے جن میں ایک سڑک 16 کلومیٹر اور دوسری 17 کلومیٹر لمبی تھی۔ 16 کلومیٹر طویل سڑک پر اسی سال جولائی سے کام شروع ہوا تھا جس کے کٹنگ کام مکمل ہوچکے ہیں۔ اب اس سڑک پر بلیک ٹاپ کا کام کیا جانا ہے۔ سڑک کے آخری حصے سے صرف 200 میٹر آگے چین کی سرحد ہے۔ وہیں 17 کلومیٹر لمبی سڑک پر بھی کٹنگ کام کافی ہوچکا ہے۔ سڑک کے آخری حصے سے محض 300 میٹر آگے چینی سرحد ہے۔

      بی آر او کا کہنا ہے کہ جلد ہی سڑک کے تعمیراتی کام مکمل کرلیے جائیں گے۔ وہیں بھیرو وادی سے نیلانگ تک قریب 23 کلومیٹر کی سڑک کے تعمیراتی کام مکمل کرلیے گئے ہیں۔ اس  پورے دائرے میں سات میٹر بلیک ٹاپ سڑک کی تعمیر کی گئی ہے جس سے اب بنا رکاوٹ فوج کی بڑی گاڑیاں یہاں سے گزرسکتے ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں:

      وزارت دفاع کی توانگ معاملہ پر جائزہ رپورٹ:ایل اے اسی-ایل او سی پر فوج کی باریکی سے نظر

      یہ بھی پڑھیں:

      پی ایم مودی 6,800 کروڑ روپے کے پروجیکٹوں کا آج کریں گے آغاز، میگھالیہ و تریپورہ میں......!

      سرحد پر جاری ہے کئی پُلوں کی تعمیر
      سرحد پر بی آر او کئی پُلوں کی تعمیر بھی کررہا ہے۔ پاگل نالے پر ایک پُل کی تعمیری کام مکمل بھی ہوچکے ہیں جس کا ایک ماہ قبل ہی افتتاح ہوچکا ہے۔ ابھی چار پُل زیر تعمیر ہیں۔ ہندوستان مالا پروجیکٹ کے تحت اب منڈی تک ڈبل لین سڑک کی تعمیر ہوگی۔ جلد ہی اس کی ڈی پی آر تیار کی جائے گی۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: