ہوم » نیوز » وطن نامہ

ویلنٹائن ڈے 2020 : محبت ، ہوس اور اس کی پیچیدگیاں

پیار اور ہوس کسی بھی شکل میں پیدا ہوسکتے ہیں ۔ کبھی ایک ساتھ ، کبھی الگ الگ ایک دوسرے کے ساتھ یا اس کے بغیر ، الگ الگ شدت میں وقت کے ساتھ دونوں ہی حالات کے میں یہ کم زیادہ ہوتا رہتا ہے ۔

  • RedWomb
  • Last Updated: Feb 13, 2020 06:18 PM IST
  • Share this:
ویلنٹائن ڈے 2020 : محبت ، ہوس اور اس کی پیچیدگیاں
ویلنٹائن ڈے 2020 : محبت ، ہوس اور اس کی پیچیدگیاں

جدید دور میں ریلیشن شپ کے بارے میں چار حروف والا سب سے مقبول ایل لفظ ہے لو یعنی پیار اور اس کے بعد دوسرے مقام پر جو ایل لفظ اس سے مقابلہ کرتا ہے وہ لسٹ ہے۔ یعنی ہوس ۔


یہ دونوں ہی لفظ ہمارے رشتے میں بار بار آتے ہیں اور کئی مرتبہ تو یہ اوورلیپ بھی کرتے ہیں ۔ پیار اور ہوس دونوں کشش کی شکل میں ایک ہی اسپیکٹرم یا اندردھنش سے پیدا ہوتے ہیں ۔ مگر یہ معلوم کرنا کسی کیلئے کافی چیلنگ ہوسکتا ہے کہ اس کی کسشش پیار سے پیدا ہوئی ہے یا ہوس سے ۔


پیار اور ہوس کسی بھی شکل میں پیدا ہوسکتے ہیں ۔ کبھی ایک ساتھ ، کبھی الگ الگ ایک دوسرے کے ساتھ یا اس کے بغیر ، الگ الگ شدت میں وقت کے ساتھ دونوں ہی حالات کے میں  یہ کم زیادہ ہوتا رہتا ہے ۔


جسم کو وہ چاہئے جس کی اس کو خواہش ہے

کسی بھی عمر میں سیکس کی چاہت عام بات ہے اور یہ ہر شخص کے ساتھ الگ ہے اور اس طرح ہوس بھی سبھی افراد کیلئے یکساں نہیں ہوتا ۔ ہارمون سے ڈائریکٹ ہونے والی ہوس کسی شخص کے تئیں جنسی کشش ہوتی ہے ۔ کئی مرتبہ کچھ لوگوں کو حقیقی زندگی میں اپنے ہم سفر کے تئیں زندگی کے الگ الگ مراحل میں بھی شدید خواہش کا تجربہ ہوتا ہے ۔

کالج میں وہ میری پروفیسر ہیں اور وہ انتہائی مشکل موضوع پڑھاتی ہیں ۔ وہ شادی شدہ ہیں اور اپنے شوہر سے خوش نظر آتی ہیں ۔ مگر میں جب بھی ان کو دیکھتا ہوں ، ان کے تئیں شدید جنسی کشش محسوس کرتا ہوں اور  اس کے علاوہ مجھے کسی اور بات کا خیال نہیں رہتا ۔ یہ اخلاقی روکاوٹ ہے کہ وہ میری ٹیچر ہیں ، شادی شدہ ہیں اور میری اپنی گرل فرینڈ ہے ۔ یہ سب کچھ اس وقت دماغ سے غائب ہوجاتا ہے ۔ یہ پوری طرح جسمانی ہے اور کئی مرتبہ جب میں اپنی گرل فرینڈ کے ساتھ بستر میں ہوتا ہوں یا ماسٹربیٹ کرتا ہوں تو ان کے بارے میں تصور کرتا ہوں : روہت ، 23 ، میڈیکل طالب علم ، علی گڑھ ۔

ہوس کو کئی مرتبہ ہندوستان جیسی روایتی ثقافتوں میں انتہائی بدنام کیا جاتا ہے ، ہوس ایک برا لفظ ہے ، لیکن یہ بہت عام اور انسانی ہے۔ ساری زندگی ہوس کا احساس ہونا یا بار بار یہ احساس ہونا انسانی فطرت کا حصہ ہے اور اگر آپ کے تعلقات میں ایسا ہوتا ہے تو اس کے بارے میں فکر مت کریں۔

آپ جس سے پیار کرتے ہیں اس کے بارے میں جنسی قربت کی خواہش رکھنا عام بات ہے۔ کئی لوگ کہتے ہیں کہ ہوس ایک نشے کی طرح ہوتا ہے۔ ہاں ، جب آپ کی عمر کم ہوتی ہے تو جنسی خواہش شدید ہوتی ہے لیکن جب آپ میں پختگی آتی ہے تو کسی کی رضامندی سے اس کے ساتھ محفوظ جنسی تعلقات بنانا نہ تو گناہ ہے اور نہ ہی کوئی جرم ۔

تاہم یہ بھی سمجھنا چاہئے آپ کب تعلقات بنانے کی بجائے جنسی معاملات پر زیادہ توجہ دیتے ہیں ۔ ہوسکتا ہے کہ آپ اس کے بارے میں زیادہ محتاط نہ رہتے ہوں ، اس لئے یہ ضروری ہے کہ آپ تعلقات کی باریکیوں پر غور کریں ۔ ہوس کی کچھ نمایاں خصوصیات مندرجہ ذیل ہیں۔

کسی بھی عمر میں سیکس کی چاہت عام بات ہے
کسی بھی عمر میں سیکس کی چاہت عام بات ہے


صرف محبت ،  ہوس نہیں؟

محبت صرف اس لئے نہیں کیونکہ ہمیں خوشگوار احساس دینے والے ہر طرح کے ہارمونز کو یہ ہمارے خون میں دوڑا دیتی ہے ، بلکہ مقبول عام تصور یہ ہے کہ محبت ایک شدید احساس ہونی چاہئے ۔ نوجوان یہ سوچ کر بڑے ہوتے ہیں کہ محبت کی آہٹ کے ساتھ ہی "گھنٹیاں بجیں گی " ، "دل کی دھڑکنیں گٹار کی طرح بجیں گی" ، اور جو استعارہ استعمال کیا جاتا ہے وہ ہے "فالنگ ان لو" جس کا براہ راست مطلب ہے غیر مستحکم ہوجانا ۔

تاہم عملی ثقافت میں محبت کو عہد اور کسی کے تئیں عبادت کا جذبہ بھی سمجھا جاتا ہے اور بعض اوقات اس کا مطلب پوری وفاداری اور زندگی بھر کا عہد بھی ہوتا ہے ۔ لہذا ، جب ہم محبت کہتے ہیں تو اس سے ہماری مراد شدید جذباتی لگاؤ ​​ہے ، لیکن کیا ہم اس بات کو بھول سکتے ہیں کہ رومانٹک محبت میں جسمانی کشش اور جنسی تعلقات کی خواہش بھی شامل ہوتی ہے؟

ہمیں اپنے رشتے کی جانچ پڑتال کرنی چاہئے اور اس کے جذباتی تعلق اور جنسی کشش کی جڑ تلاش کرنی چاہئے ۔ یاد رکھیں کہ اچھا اور برا کچھ نہیں ہوتا ہے ، کبھی کبھی ہم سنجیدہ وابستگی کی تلاش میں ہوتے ہیں اور کئی مرتبہ ساتھ مل کر مستقبل کا خواب دیکھتے ہیں۔

اگر آپ زیادہ تر وقت جنسی خواہش کے بارے میں ہی سوچتے ہیں تو پھر اس بات کا پورا امکان ہے کہ آپ کو پیار نہیں ہے اور آپ کی جذباتی وابستگی نہیں ہے ۔ لیکن جب ہوس کے ساتھ ساتھ آپ تعلقات کے دیگر اہداف کو بھی حاصل کرنے کے بارے میں سوچنا شروع کردیتے ہیں تو یہ کہا جاسکتا ہے کہ آپ محبت کی طرف مائل ہورہے ہیں۔

ہم ایک کال سنٹر میں ساتھ کام کرتے تھے۔ کافی تھکادینے والے کام کے بعد کشیدگی سے نجات کے طور پر اتفاقا سیکس سے اس کی شروعات ہوئی اور ہم ایک دوسرے کی جنسی خواہش کی تسکین میں برابر کے شراکت دار بن گئے ۔ لیکن کچھ مہینوں کے بعد ہم ایک دوسرے کا خیال رکھنے لگے ، ایک دوسرے کو بہتر طور پر جاننے لگے اور آج ہم لوگوں نے ایک ساتھ مل کر اسٹارٹ اپ شروع کیا ہے اور اب ہم ساتھ رہ رہے ہیں - راجیو اور ریما ، 26/25 ، کاروباری ، کانپور ۔

پیچیدہ اوور لیپس

لوگوں کے لئے سب سے الجھن والی بات یہ ہے کہ محبت اور ہوس مکسڈ ہو جاتے ہیں ۔ بعض اوقات محبت زیادہ جنسی ہو جاتی ہے اور ہوس شدید جذبات میں ڈوب جاتی ہے۔ محبت اور ہوس دونوں ہی کئی مرتبہ پارٹنر کے انسانی عیوب کو نظر انداز کردیتے ہیں اور اس کو پرفیکٹ سمجھتے ہیں ۔ ان کی ہر چیز اچھی ، خوبصورت اور قیمتی لگتی ہے ۔ لیکن طویل مدتی وابستگی کا مطالبہ یہ ہوتا ہے کہ آپ اس بات کو جانتے ہیں کہ آپ کا ساتھی پرفیکٹ نہیں ہے اور اس بات کو پوری طرح قبول کرنا بھی ہوتا ہے ۔

کسی بھی رشتے کے آغاز میں کچھ باتوں کا زیادہ خیال رکھا جاتا ہے ۔ اچھا برتاؤ کیجئے ، نرم رہئے اور اپنا بہترین سلوک دکھائیے ۔ لیکن کچھ عرصے کے بعد باہمی تعلقات میں ایک یقینیت آجاتی ہے اور پھر سب سے اچھا نظر آنے کی بات نہیں بلکہ آپ جو ہیں ، وہ نظر آنے کی بات اہم ہوجاتی ہے ۔

ہوسکتا ہے کہ کوئی جوڑا جسمانی طور پر مباشرت کے لئے اپنا زیادہ وقت صرف کرے ، لیکن جہاں جذبات بیچ میں آجاتے ہیں تو وہ جوڑے کچھ ایسا کام کرکے جو دونوں کو پسند ہیں ، ایک دوسرے کے ساتھ جڑے رہ سکتے ہیں ۔

جب ایک جوڑے میں محبت ہوتی ہے ، تو ان کے مابین جسمانی تقلقات قائم ہوتے ہیں ، لیکن وہ صرف یہی نہیں کرتے ہیں ، تعلقات میں صرف سیکس ہی نہیں ہوتا ۔ آج کے دور میں سیکسٹنگ اور اسنیپ چیٹ میں مشغول رہنا بھلے ہی ٹھیک بات ہو ، لیکن اگر کوئی آگے کا منصوبہ بناتا ہے تو یہ ضروری ہے کہ وہ نہ صرف سیکس کریں ، بلکہ آپس میں بات چیت کریں اور ساتھ میں وقت گزاریں ۔

محبت اور ہوس کو الگ کرکے دیکھنا مشکل ہے ۔ لیکن ایک عام ضابطہ ہے کہ ہوس صرف ایک مختصر مدت کی بات ہوتی ہے ، جبکہ محبت میں ہوس ہوسکتی ہے ، لیکن یہ ایک طویل وقت تک چل سکتی ہے ۔ ہوس ہمیشہ بدلتی رہتی ہے ، اس کے نتیجے میں تعلقات ٹوٹ سکتے ہیں یا پھر یہ محبت کی شکل اختیار کرسکتا ہے ۔ یہ سب اس دل کا کمال ہے ۔
First published: Feb 13, 2020 06:18 PM IST