ہوم » نیوز » وطن نامہ

شاد نگرانکاؤنٹر: دیشا کے اہل خانہ نے خوشی کا کیا اظہار، پولیس کی کارروائی کی ستائش کی

تمام ملزمین کی ہلاکت کی خبر سے متاثرہ کے اہل خانہ بھی خوش ہیں۔ متاثرہ لڑکی کے والد نے بتایا کہ آج اس کی بیٹی کی روح کو سکون ملا ہے

  • Share this:
شاد نگرانکاؤنٹر: دیشا کے اہل خانہ نے خوشی کا کیا اظہار، پولیس کی کارروائی کی ستائش کی
شاد نگرانکاؤنٹر: دیشا کے اہل خانہ نے خوشی کا کیا اظہار، پولیس کی کارروائی کی ستائش کی

حیدرآباد کے مضافاتی علاقے شاد نگرمیں خاتون ویٹرنری ڈاکٹرسے اجتماعی عصمت ریزی اور قتل کیس کے ملزمین کو پولیس نے انکاؤنٹرمیں ہلاک کردیاہے۔ریمانڈ کے دوران ، پولیس جمعرات کی رات تمام ملزمین کو موقع پر لے گئی تاکہ جرائم کا منظردوبارہ جائزہ لیا جاسکیں۔ پولیس ملزمین کی نظر سے پورے واقعے کو سمجھنا چاہتی تھی۔ کہا جارہا ہے کہ اس دوران ان چاروں نے پولیس کی گرفت سے فرار ہونے کی کوشش کی۔ تب پولیس نے ان پر فائرنگ کردی۔


 


پولیس کے مطابق، یہ انکاؤنٹربنگلورو۔ حیدرآباد نیشنل ہائی وے 44 پرصبح 3:30 بجے ہوا۔اس شاہراہ پرانڈرپاس کے قریب خاتون ڈاکٹر کی بھی جلی ہوئی لاش ملی ہے۔ 27-28 نومبر کی درمیانی شب میں ، ان چاروں ملزمین کوخاتون ڈاکٹر کے ساتھ عصمت ریزی کی اوراسے جلاکرقتل کردیا۔   متاثرہ کے اہل خانہ کا بیان تمام ملزمین کی ہلاکت کی خبر سے متاثرہ کے اہل خانہ بھی خوش ہیں۔ متاثرہ لڑکی کے والد نے بتایا کہ آج اس کی بیٹی کی روح کو سکون ملا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ عصمت ریزی کے تمام معاملوں میں ملزمین کوسزا ملنی چاہیے۔  





کیا یہ سارا معاملہ ہے؟

شاد نگرمیں 27-28 نومبر کی درمیانی شب میں حیدرآباد کے قریب شاد نگر ٹول پلازہ کے قریب ایک عورت کی آدھی لاش ملی۔ خاتون کی شناخت ویٹرنری ڈاکٹرکے طور پرہوئی۔ پولیس کے مطابق، اس خاتون کواجتماعی عصمت دری کے بعد قتل کیا گیاتھا، پھرلاش کو پٹرول سے جلا کر فلائی اوور کے نیچے پھینک دیا گیا تھا۔ اس جرم میں ملوث چاروں ملزمین کی شناخت محمد پاشا ، نوین ، چنتنکونٹا کیشولو اور شیو کے نام سے ہوئی ہے۔

 



پورے ملک میں احتجاج

خاتون ویٹرنری ڈاکٹرسے اجتماعی ریزی اورقتل کے بعد پورے ملک میں احتجاجی مظاہرے کیے گئے تھے۔ خواتین تنظیموں کے علاوہ دیگر ادارے بھی ملزمین کے خلاف سخت کارروائی کرنے کا مطالبہ کیاجارہاتھا۔پولیس نے ملزمین کوپولیس تحویل میں لیا تھا۔تاہم آج انہیں انکاؤنٹرمیں ہلاک کردیاگیاہے۔
First published: Dec 06, 2019 09:52 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading