உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    VIDEO: مغربی بنگال میں گھمسان، ممتا بنرجی کے خلاف سڑک پر اتری BJP، پولیس سے تصادم

    مغربی بنگال میں بی جے پی اور ٹی ایم سی کے درمیان گھمسان

    مغربی بنگال میں بی جے پی اور ٹی ایم سی کے درمیان گھمسان

    Nabanna Chollo Rally: بی جے پی نے اپنے سینئر لیڈران کی قیادت میں نبنا مہم کو شروع کر دیا ہے، جس میں سبھی کارکنان ریاستی سکریٹریٹ نبان کی طرف مارچ نکال رہے ہیں۔ اس درمیان خبر ہے کہ رانی گنج ریلوے اسٹیشن کے باہر آج یعنی منگل کو بی جے پی کارکنان اور پولیس کے درمیان تصادم ہوگیا ہے۔ رانی گنج میں پولیس نے کئی بی جے پی کارکنان کو احتیاطاً حراست میں لیا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Kolkata, India
    • Share this:
      رانی گنج: مغربی بنگال کی سیاست میں ان دنوں کا کافی گھمسان مچا ہوا ہے۔ ایک بار پھرٹی ایم سی اور بی جے پی آمنے سامنے ہیں۔ بی جے پی لیڈران نے وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی کے خلاف ایک بار پھر سے محاذ کھول دیا ہے۔ ریاستی بی جے پی نے اپنے سینئر لیڈران کی قیادت میں نبنا مہم کو شروع کر دیا ہے، جس میں سبھی کارکنان ریاستی سکریٹریٹ نبنا کی طرف مارچ نکال رہے ہیں۔ اس درمیان خبر ہے کہ رانی گنج ریلوے اسٹیشن کے باہر آج یعنی منگل کو بی جے پی کارکنان اور پولیس کے درمیان تصادم ہوگیا ہے۔ رانی گنج میں پولیس نے کئی بی جے پی کارکنان کو احتیاطاً حراست میں لیا ہے۔

      ANI کی ایک رپورٹ کے مطابق، اس کے علاوہ بول پور ریلوے اسٹیشن کے اندر بی جے پی کارکنان اور پولیس کے درمیان تصادم ہوا ہے۔ یہاں بھی پولیس نے کارکنان کو نبنا چلو مارچ میں حصہ لینے کے لئے کولکاتا جانے سے روکا تھا۔ بول پور میں بھی کئی کارکنان کو حراست میں لیا گیا ہے۔





      بی جے پی لیڈر ابھیجیت دتہ نے کہا کہ سینکڑوں بی جے پی کارکنان ٹرینوں سے بی جے پی کے نبنا مارچ میں شامل ہونے کے لئے کولکاتا کی طرف بڑھ رہے ہیں۔ پولیس نے ریلوے اسٹیشنوں کے راستوں پر بیرکیڈنگ کی ہے۔ ہمارے 20 کارکنان کو پولیس نے درگا پور ریلوے اسٹیشن کے پاس روکا۔ میں دیگر راستوں کا استعمال کرکے یہاں پہنچا ہوں۔

      بی جے پی رکن اسمبلی اگنی متر پال نے پیر کے روز کہا تھا کہ نبنا چلو ابھیان کی تیاریاں کرلی گئی ہیں۔ یہ صرف بی جے پی کا احتجاج نہیں ہے، بلکہ مغربی بنگال کے سبھی لوگوں کی مخالفت ہے۔ ممتا بنرجی کو جواب دینا ہوگا کہ ان کی حکومت نے بنگال کے لوگوں کو دھوکہ کیوں دیا ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: