رمضان کے دوران گیانواپی مسجد میں ہی کیا جائے گا وضو کا انتظام، ہوگیا اتفاق

رمضان کے دوران گیانواپی مسجد میں ہی کیا جائے گا وضو کا انتظام، بن گیا اتفاق

رمضان کے دوران گیانواپی مسجد میں ہی کیا جائے گا وضو کا انتظام، بن گیا اتفاق

رمضان کے پیش نظر مسلم فریق نے سپریم کورٹ سے گیان واپی احاطے میں وضو و ٹوائلٹ کا مناسب بندوبست کرانے کی اپیل کی تھی۔

  • News18 Urdu
  • Last Updated :
  • Varanasi, India
  • Share this:
    رمضان کے دوران گیان واپی مسجد میں ہی وضو کا انتظام کیا جائے گا۔ ڈی ایم کی قیادت والی کمیٹی کی میٹنگ میں کل منگل کو ہی س پر اتفاق ہوگیا ہے۔ میٹنگ میں یہ بھی طئے ہوا ہے کہ سیل کیے گئے وضو خانے کے پاس ہی پرانے باتھ روم کو توڑ کر ٹوائلٹ میں تبدیل کیا جائے گا۔ اس کے اوپر پانی کی ٹانکی رکھی جائے گی۔ پائپ و ٹوٹی کے سہارے وضو کا انتطام کیا جائے گا۔  دوسری جانب، گیان واپی احاطے میں سیل کیے گئے قدیم علاقے میں صورتحال جوں کے توں برقرار رہے گی۔

    رمضان کے پیش نظر مسلم فریق نے سپریم کورٹ سے گیان واپی احاطے میں وضو و ٹوائلٹ کا مناسب بندوبست کرانے کی اپیل کی تھی۔ سپریم کورٹ کے حکم پر وارانسی کے ڈی ایم ایس راج لنگم نے انجمن انتظامیہ مساجد کمیٹی کے ذمہ داران، وشواناتھ مندر انتظامیہ کے ذمہ داران و پولیس افسروں کے ساتھ میٹنگ کی۔ اس میں ہوئے اتفاق کے بعد کام بھی شروع کرادیا گیا ہے۔

    قابل ذکر ہے کہ، یوپی کے وارانسی کی گیان واپی مسجد کے سروے کا کام مئی 2022 میں تین دن کی قواعد کے بعد پورا ہوگیا تھا۔ ہندو فریق نے دعویٰ کیا تھا کہ نندی کے گیٹ کے سامنے مسجد کے وضو خانے سے 12 فٹ 8 انچ کا شیولنگ ملا ہے۔ اس کے بعد عدالت نے شیولنگ والے علاقے کو سیل کرنے کا حکم دیا تھا۔ وہیں ضلع انتظامیہ کی ٹیم نے وضو خانے والے علاقے کو سیل کردیا تھا۔

    یہ بھی پڑھیں:

    ہیٹ اسٹروک کی وجہ سے ممبئی میں 11 کی موت، ڈاکٹروں نے بتایا کیسے کریں بچاؤ، کن باتوں کا رکھیں خاص خیال، جانیں ماہرین کی رائے

    دراصل ہندو فریق کے وکیل ہری شنکر جین نے اہم شواہد کو محفوظ کرنے کے لئے درخواست دی تھی۔ اسی عرضی کے بعد سول جج (سینئر ڈویژن) روی کمار دیواکر کے حکم پر وضو خانے والی جگہ کو سیل کیا گیا ہے۔

    یہ بھی پڑھیں:

    عتیق-اشرف قتل معاملہ: قاتلوں کی عدالت میں پیشی آج، کچہری سے کورٹ تک چپے چپے پر تعینات رہے گی سیکورٹی فورس

    بہر حال گیان واپی مسجد کے وضو خانے کو عدالت کے حکم پر سیل کرنے کی کارروائی کے دوران اے ڈی ایم پروٹوکول موقع پر موجود رہے۔ وہیں، وضو خانے کے پاس سینٹرل ریزرو پولیس فورس (سی آر پی ایف) کی تعیناتی کردی گئی تھی۔
    Published by:Shaik Khaleel Farhaad
    First published: