ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

حضرت ٹیپو سلطان سے متعلق اوقافی املاک کی نگرانی کے لئے وقف اسٹیٹ کمیٹی قائم

کرناٹک کے تاریخی شہر سری رنگا پٹن میں موجود حضرت ٹیپو سلطان شہید کے گنبد، مساجد اور دیگر اوقافی املاک کی نگرانی اور انتظامات کیلئے کرناٹک ریاستی وقف بورڈ کے تحت حضرت ٹیپو سلطان وقف اسٹیٹ کمیٹی قائم ہے۔ اس کمیٹی کیلئے حکومت نے بی جے پی اقلیتی مورچہ کے ریاستی سکریٹری اے ایس آصف سیٹھ کو نائب چیئرمین نامزد کیا ہے۔

  • Share this:
حضرت ٹیپو سلطان سے متعلق اوقافی املاک کی نگرانی کے لئے وقف اسٹیٹ کمیٹی قائم
بی جے پی حضرت ٹیپو سلطان شہید کے ہرگز خلاف نہیں ہے: آصف سیٹھ

بنگلورو: کرناٹک کے تاریخی شہر سری رنگا پٹن میں موجود حضرت ٹیپو سلطان شہید کے گنبد، مساجد اور دیگر اوقافی املاک کی نگرانی اور انتظامات کیلئے کرناٹک ریاستی وقف بورڈ کے تحت حضرت ٹیپو سلطان وقف اسٹیٹ کمیٹی قائم ہے۔ اس کمیٹی کیلئے حکومت نے بی جے پی اقلیتی مورچہ کے ریاستی سکریٹری اے ایس آصف سیٹھ کو نائب چیئرمین نامزد کیا ہے۔ تین سالہ معیاد کیلئے نائب چیرمین نامزد کئے جانے کے بعد آصف سیٹھ نے بی جے پی اقلیتی مورچہ کے سینئر لیڈروں کے ساتھ سری رنگا پٹن پہنچ کر حضرت ٹیپو سلطان شہید کے مزار شریف پر حاضری دی۔

اس موقع پر نیوز 18 اردو سے خاص بات چیت کرتے ہوئے آصف سیٹھ نے کہا کہ اللہ تعالٰی نے انہیں اس عہدے کیلئے منتخب کیا ہے لہذا وہ حضرت ٹیپو سلطان شہید رحمت اللہ علیہ کا غلام بن کر یہاں اپنی خدمات انجام دیں گے۔ اس اہم ذمہ داری کے دئے جانے پر آصف سیٹھ نے وزیر اعلی بی ایس یدی یورپا، بی جے پی کے ریاستی صدر نلین کمار کٹیل، پارٹی کے سینئر لیڈران سنتوش اور ارون کا شکریہ ادا کیا۔ ساتھ ہی بی جے پی اقلیتی مورچہ کے ریاستی صدر مزمل احمد بابو، اقلیتی کمیشن کے صدر عبدالعظیم اور اقلیتی مورچہ کے تمام ارکان سے بھی اظہار تشکر کیا۔

بنگلورو سے تعلق رکھنے والے آصف سیٹھ نے کہا کہ وہ سری رنگا پٹن میں موجود حضرت ٹیپو سلطان شہید کی یادگاروں کی حفاظت اور ترقی کیلئے ہر ممکن کوشش کرینگے۔ وزیر اعلی یدی یورپا سے ملاقات کرتے ہوئے اس تاریخی مقام کی ترقی کیلئے خصوصی فنڈ حاصل کرنے کی کوشش کرینگے۔ انہوں نے کہا کہ ٹیپو سلطان کے تاریخی مقامات کی جانب زیادہ سے زیادہ سیاحوں کو راغب کرنے کی ضرورت ہے۔ اس کیلئے وہ محکمہ سیاحت سے گفتگو کرتے ہوئے خصوصی پروگرام ترتیب دیں گے۔


آصف سیٹھ نے کہا کہ اللہ تعالٰی نے انہیں اس عہدے کیلئے منتخب کیا ہے لہذا وہ حضرت ٹیپو سلطان شہید رحمت اللہ علیہ کا غلام بن کر یہاں اپنی خدمات انجام دیں گے۔
آصف سیٹھ نے کہا کہ اللہ تعالٰی نے انہیں اس عہدے کیلئے منتخب کیا ہے لہذا وہ حضرت ٹیپو سلطان شہید رحمت اللہ علیہ کا غلام بن کر یہاں اپنی خدمات انجام دیں گے۔


آصف سیٹھ نے کہا کہ بی جے پی حضرت ٹیپو سلطان کے ہر گز خلاف نہیں ہے۔ پارٹی کے چند لیڈروں کی مختلف رائے ہوسکتی ہے لیکن پارٹی نے کبھی ٹیپو سلطان کی مخالفت نہیں کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ حضرت ٹیپو سلطان شہید کے متعلق پائی جانے والی غلط فہمیوں کو دور کرنے کی پوری  کوشش کرینگے۔ آصف سیٹھ نے  کہا کہ حضرت ٹیپو سلطان نہ صرف ایک عظیم حکمران تھے بلکہ ولی اللہ کا درجہ بھی رکھتے تھے۔ یہی وجہ ہے کہ ان کے گنبد پر نہ صرف مسلمان بلکہ بڑی تعداد میں ہندو بھی آتے ہیں، دعائیں مانگتے ہیں اور حضرت ٹیپو سلطان شہید سے اپنی عقیدت کا اظہار کرتے ہیں۔ آصف سیٹھ نے کہا کہ اس عظیم اور بابرکات شخصیت کے سلسلے میں ہرگز سیاست نہیں ہونی چاہئے۔
واضح رہے کہ حضرت ٹیپو سلطان وقف اسٹیٹ کمیٹی 11 ارکان پر مشتمل ہے۔ کانگریس کے سینئر لیڈر اور میسور کے رکن اسمبلی تنویر سیٹھ اس کمیٹی کے چیرمین ہیں۔ کمیٹی میں موجود زیادہ تر ارکان کا تعلق کانگریس پارٹی سے ہے۔ لیکن اب بی جے پی حکومت  اس کمیٹی کیلئے پارٹی کے اقلیتی مورچہ کے لیڈروں کو ترجیح دے رہی ہے۔ کمیٹی میں موجود ارکان کی معیاد مکمل ہونے کے بعد بی جے پی اقلیتی مورچہ کے نمائندے کمیٹی کیلئے نامزد ہو سکتے ہیں۔
نومنتخب نائب چیرمین آصف سیٹھ نے کہا کہ وہ  اس کمیٹی میں کانگریس۔ بی جے پی کی سیاست سے پرے ہوکر اپنی خدمات انجام دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ وہ کمیٹی کے موجودہ چیئرمین تنویر سیٹھ کو تعاون فراہم کرتے ہوئے اپنے طور پر حضرت ٹیپو سلطان کی  یادگاروں کی حفاظت اور ترقی کیلئے کوششیں کرین گے۔ کرناٹک وقف بورڈ کے تحت قائم اس کمیٹی کے زیر انتظام سری رنگا پٹن میں موجود حضرت ٹیپو سلطان شہید کا مقبرہ، دو مساجد سمیت 37 وقف املاک آتے ہیں۔ محکمہ آثار قدیمہ ان املاک کی نگرانی کرتا ہوا آرہا ہے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Mar 10, 2021 08:07 AM IST