ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

سرکار کا کام ملک کے لوگوں کو بے چین کرنا نہیں بلکہ جمہوریت کو مضبوط بنانا : سوگتا بوس

نیتاجی سبھاش چندر بوس کے پوتے و سابق ایم پی سوگتا بوس نے آین ار ی و سی اےاے سے لوگوں کو خوفزدہ کرنے کی سرکاری کوششوں کو افسوسناک بتاتے ہوٸے عوام کے متحد ہونے کی ضرورت پر زور دیا ۔

  • Share this:
سرکار کا کام ملک کے لوگوں کو بے چین کرنا نہیں بلکہ جمہوریت کو مضبوط بنانا : سوگتا بوس
سرکار کا کام ملک کے لوگوں کو بے چین کرنا نہیں بلکہ جمہوریت کو مضبوط بنانا : سوگتا بوس

سرکار کا کام ملک کے لوگوں کو بے چین کرنا نہیں بلکہ جمہوریت کو مضبوط بنانا ہے ۔ کولکاتہ کے رام لیلا میدان میں جمیعتہ علما ہند بنگال شاخ کی جانب سے منعقدہ تین روزہ احتجاجی دھرنے میں شامل ہوتے ہوئے نیتاجی سبھاش چندر بوس کے پوتے و سابق ایم پی سوگتا بوس نے ملک کی آزادی میں ہندو اور مسلم دونوں کی قربانوں کو یاد رکھنے کی ضرورت پر زور دیا اور کہا کہ مسلمانوں کو نظرانداز کرکے ملک کی ترقی ناممکن ہے ۔

انہوں آین ار ی و سی اےاے سے لوگوں کو خوفزدہ کرنے کی سرکاری کوششوں کو افسوسناک بتاتے ہوٸے عوام کے متحد ہونے کی ضرورت پر زور دیا ۔ دھرنے میں جمیعتہ کے قومی صدر قاری محمدعثمان نے سی اے اے کو زور زبردستی نافذ کرنے کی کو شش سے ملک میں خانہ جنگی جیسی صورتحال کا اندشہ ظاہر کرتے ہوٸے حکومت سے اس قانون کے واپس لینے کا مطالبہ کیا ۔ وہیں ریاستی وزیر و جیعتہ علمإ ہند کے ریاستی صدر صدیق اللہ چودھری نے اس قانون کے خلاف تحریک جاری رکھنے پر زور دیا اور سی اے اے اور آین ار سی مخالف ہر تحریک کی حمایت کا اعلان کیا ۔

انہوں وزیر اعلی ممتا بنرجی کی جانب سے ریاست بھر میں این ار سی اور سی اے اے مخالف ریلیوں کو اہم بتاتے ہوٸے کہا کہ آئندہ 27 جنوری کو بنگال اسمبلی میں وزیر اعلی ممتا بنرجی کی جانب پیش کٸے جانے والے ریزولیشن بڑا قدم ہے ۔ ساتھ ہی ساتھ کانگریس و لیفٹ کی جانب سے بھی اس کی حمایت کی امید ظاہر کی ۔ واضح رہے کہ 27 جنوری کو بنگال  اسمبلی میں سی اے اے و آین ار سی کے خلاف قرار داد پیش کی جائے گی ۔

First published: Jan 26, 2020 12:33 PM IST