உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بنگال کی سیاسی گرمی میں اضافہ کر رہے ہیں اسدالدین اویسی، اب ائمہ کرام نے کہا- ہم کریں گے مجلس اتحادالمسلمین کی مخالفت

    بنگال کی سیاسی گرمی میں اضافہ کر رہے ہیں اسدالدین اویسی، اب ائمہ کرام نے کہا- ہم کریں گے مخالفت

    بنگال کی سیاسی گرمی میں اضافہ کر رہے ہیں اسدالدین اویسی، اب ائمہ کرام نے کہا- ہم کریں گے مخالفت

    ممتا بنرجی (Mamata Banerjee) کے ذریعہ اسدالدین اویسی پر تنقید کئے جانے کے بعد اب مغربی بنگال امام ایسوسی ایشن (West Bengal Imams' Association) نے کہا ہے کہ وہ ریاست میں ایم آئی ایم کی سیاسی انٹری کی مخالفت کرے گا۔ ایسوسی ایشن نے الزام لگایا ہے کہ ریاست میں اسدالدین اویسی کی انٹری منصوبہ بند ہے۔ اس کے ذریعہ اقلیتوں کے ووٹ تقسیم کرکے بی جے پی کو فائدہ پہنچانے کی کوشش کی جائے گی۔

    • Share this:
      نئی دہلی: مغربی بنگال اسمبلی انتخابات (West Bengal Assembly Election) میں اسدالدین اویسی (Asaduddin Owaisi) کی انٹری سے سیاسی ماحول گرم ہوتا جا رہا ہے۔ ممتا بنرجی (Mamata Banerjee) کے ذریعہ اویسی پر تنقید کئے جانے کے بعد اب مغربی بنگال امام ایسوسی ایشن (West Bengal Imams' Association) نے کہا ہے کہ وہ ریاست میں آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) کی سیاسی انٹری کی مخالفت کرے گا۔ ایسوسی ایشن نے الزام لگایا ہے کہ ریاست میں اویسی کی انٹری منصوبہ بند ہے۔ اس کے ذریعہ اقلیتی رائے دہندگان کی تقسیم کرکے بی جے پی کو فائدہ پہنچانے کی کوشش کی جائے گی۔

      ضروریت پڑی تو ایک نئی تنظیم بناکر لڑیں گے الیکشن

      مغربی بنگال امام ایسوسی ایشن نے یہاں تک کہا ہے کہ اگر ضرورت پڑی تو ایک نئی تنظیم بناکر الیکشن لڑیں گے اور ایم آئی ایم کے پلان کو برباد کردیں گے۔ غور طلب ہے کہ ریاست میں برسراقتدار پارٹی ترنمول کانگریس کے پاس اس وقت مسلم رائے دہندگان کا یکمشت حمایت ہے۔ کہا جاتا ہے کہ ریاست میں 2011 کے بعد مسلم طبقہ روایتی طور پر ترنمول کانگریس کا ساتھ دیتا رہا ہے۔

      عباس صدیقی سے اویسی کی ملاقات

      اس سے قبل تین جنوری کو اسد الدین اویسی ہگلی ضلع میں پہنچے تھے۔ انہوں نے مقبول مسلم مذہبی رہنما عباس صدیقی سے ملاقات کی۔ عباس صدیقی سے ملاقات کرکے اسدالدین اویسی نے انتخابی بگل بجانے کے اشارے دیئے ہیں۔ مانا جارہا ہے کہ یہ دونوں مل کر ممتا بنرجی کے روایتی ووٹ بینک میں سیندھ لگا سکتے ہیں۔

      ممتا بنرجی نے کی تھی تنقید

      حالانکہ ریاست میں ترنمول کانگریس کے علاوہ سی پی ایم کی طرف سے بھی الزام لگایا جاچکا ہے کہ اسدالدین اویسی کے پیچھے بی جے پی کی حمایت ہے۔ کچھ دنوں پہلے ممتا بنرجی نے کہا تھا- حیدرآباد کی ایک پارٹی کے ذریعہ مسلم نوجوانوں کا ووٹ تقسیم کرنے کے لئے بی جے پی کروڑوں روپئے خرچ کر رہی ہے۔ ممتا بنرجی نے بغیر نام لئے اسد الدین اویسی پر تنقید کی تھی۔ اس پر جواب دیتے ہوئے اسدالدین اویسی نے کہا تھا کہ آج تک ایسا کوئی آدمی پیدا نہیں ہوا، جو اسدالدین اویسی کو خرید سکے۔

       

       
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: