ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

مغربی بنگال : ترنمول کانگریس کے باغی مسلم لیڈران ممتا بنرجی کیلئے کھڑی کرسکتے ہیں مشکلات

ٹکٹ نہیں ملنے سے مایوس ترنمول کانگریس کے ممبر اسمبلی نے کہا کہ بھیر بھوم ضلع میں مسلمانوں کی آبادی 37 فیصد سے زاید ہے مگر 11 اسمبلی حلقے میں صرف ایک حلقے سے مسلم امیدوار کو کھڑا کرنا یہ ثابت کرتا ہے کہ ترنمول کانگریس نے بی جے پی کے ہندتوا کے ایجنڈے کے سامنے خود سپردگی کردی ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Mar 06, 2021 11:55 PM IST
  • Share this:
مغربی بنگال : ترنمول کانگریس کے باغی مسلم لیڈران ممتا بنرجی کیلئے کھڑی کرسکتے ہیں مشکلات
مغربی بنگال : ترنمول کانگریس کے باغی مسلم لیڈران ممتا بنرجی کیلئے کھڑی کرسکتے ہیں مشکلات

ٹکٹ نہیں ملنے سے مایوس ترنمول کانگریس کے ممبر اسمبلی نے کہا کہ بھیر بھوم ضلع میں مسلمانوں کی آبادی 37 فیصد سے زاید ہے مگر 11 اسمبلی حلقے میں صرف ایک حلقے سے مسلم امیدوار کو کھڑا کرنا یہ ثابت کرتا ہے کہ ترنمول کانگریس نے بی جے پی کے ہندتوا کے ایجنڈے کے سامنے خود سپردگی کردی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان کے حلقے انتخاب نلہٹی میں 60 فیصد مسلم آبادی ہے ، اس کے باوجود نہ صرف میرا ٹکٹ کاٹا گیا ہے ، بلکہ یہاں سے کسی اورمسلم امیدوار کو ٹکٹ دینے کی بجائے ایک غیر مسلم کو ٹکٹ دیا گیا ہے ۔


معین الدین شمس نے کہا کہ یہ نلہٹی کے عوام کی توہین ہے ۔ انہوں نے کہا کہ میں یہاں کے لوگوں کی خواہش کے مطابق انتخاب لڑوں گا اور مگر ابھی طے نہیں کیا ہوں کہ کسی پارٹی سے لڑوں گا یا پھرآزاد امیدوار کے طور پر لڑوں گا ۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ پانچ سالوں میں نلہٹی کے عوام کے ساتھ رہا ہوں ، لوگوں کی خدمت کی ہے۔ یہاں کے عوام کے دلوں میرے والد کلیم الدین شمس اب بھی بس رہے ہیں ، لوگوں نے مجھ میں میرے والد کی جھلک دیکھی ۔ معین الدین شمس نے کلکتہ کے ہیوی ویٹ مسلم لیڈر کی طرف اشارہ کرتے ہوئے انہوں نے آخری وقت تک مجھے یقین دلایا کہ ٹکٹ مل رہا ہے ، مگر انہوں نے مایوس کیا ہے ۔


دوسری جانب بھانگر سے ٹکٹ نہیں ملنے سے مایوس عرب الاسلام نے کہا ہے کہ انہیں پارٹی نے مایوس کیا ہے ۔ ان کے حامیوں نے جگہ جگہ احتجاج اور مظاہرہ کیا ہے ۔ آج صبح عرب الاسلام نے پارٹی ورکروں کے ساتھ میٹنگ کی اور درمیان میں ہی میٹنگ چھوڑ کر چلے گئے ۔ انہوں نے کہا کہ میں نے یہاں کے عوام کےلئے بہت کچھ کیا ہے اور لوگوں کے درمیان رہ کر عوام کےلئے کام کیا ہے ۔ میں جوکچھ کروں گا وہ عوام کے لئے ہوگا ۔ یہاں کے لوگ باہری لوگوں کو قبول نہیں کریں گے ۔


خیال رہے کہ بھانگر سے عرب الاسلام رکن اسمبلی ہوا کرتے تھے ، مگر گزشتہ انتخاب میں یہاں سے سی پی ایم چھوڑ کر ترنمول کانگریس میں شامل ہونے والے سینئرلیڈر عبد الرزاق ملا کو امیدوار بنایا گیا تھا ۔ ملا کو عمر کی وجہ سے ٹکٹ نہیں دیا گیا ہے ۔ مگر عرب الاسلام کو امیدوار بنانے کی بجائے رضا الکریم کو ٹکٹ دیدیا گیا ہے ۔ عرب الاسلام ایک متنازع لیڈر ہیں ۔

عرب الاسلام نے کہا کہ کسی بھی صورت میں باہری امیدوار کو قبول نہیں کیا جائے گا۔ میں نے پارٹی کے لئے اپنی جان کو خطرے میں ڈالا ۔ میں نے سی پی ایم سے مقابلہ کیا اور بھانگر میں ترنمول کانگریس کو مقام دلایا ۔ میں لوگوں کے شانہ بشانہ کھڑا رہا ہوں ۔ بھانگرکے عوام جو چاہیں گے میں وہ کروں گا۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Mar 06, 2021 11:55 PM IST