உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کولکاتہ میں کورونا کے حالات پر مرکزی حکومت فکرمند ، خط لکھ کر دی یہ بڑی ہدایت

    کولکاتہ میں کورونا کے حالات پر مرکزی حکومت فکرمند ، خط لکھ کر دی یہ بڑی ہدایت

    کولکاتہ میں کورونا کے حالات پر مرکزی حکومت فکرمند ، خط لکھ کر دی یہ بڑی ہدایت

    Covid Rising in Kolkata : مرکزی صحت سکریٹری نے خط میں کہا ہے کہ 14 اکتوبر کو ختم ہوئے ہفتہ کے موازنہ میں اس ہفتے نئے معاملات میں 25 فیصد کا اضافہ درج کیا گیا ہے ۔ وہیں ٹیسٹ پازیٹیویٹی ریٹ میں 5.6 فیصد ْاضافہ ہوا ہے ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : مغربی بنگال میں گزشتہ ایک مہینے کے دوران کورونا کے بڑھتے معاملات اور اموات کو لے کر مرکزی وزارت صحت نے منگل کو تشویش ظاہر کی ہے ۔ مرکزی صحت سکریٹری راجیش بھوشن نے مغربی بنگال کے محکمہ صحت کے سکریٹری نارائن سوروپ نگم کو خط لکھ کر ضروری قدم اٹھانے کیلئے کہا ہے ۔

      بھوشن نے کولکاتہ کو سب سے تشویشانک ضلع بتاتے ہوئے ضروری قدم اٹھانے کی بات کہی ہے ۔ دراصل کولکاتہ میں گزشتہ کچھ ہفتہ سے روزانہ آنے والے اوسط کیسز کی تعداد بڑھ رہی ہے ۔ وہیں ہر دن کے پازیٹیویٹی ریٹ میں بھی اضافہ ہوا ہے ۔

      ٹھیک ایک دن پہلے مغربی بنگال کے صحت محکمہ کے سکریٹری نے نیوز 18 کو بتایا تھا کہ حقیقت میں کیسز بڑھے ہیں اور ان کی روک کیلئے سبھی ضروری قدم اٹھائے گئے ہیں ۔ انہوں نے کہا تھا کہ ہم نے کئی سیف ہوم تیار کئے ہیں اور کنٹینمنٹ زون کا اعلان کیا ہے ۔ ان مقامات پر ہم نے پایا ہے کہ مریضوں کی تعداد میں اچانک اضافہ ہوا ہے ۔

      راجیش بھوشن نے اپنے خط میں کہا ہے کہ اگر اس صورتحال پر دھیان نہیں دی گئی تو حالات بگڑ سکتے ہیں اور ہیلتھ انفراسٹرکچر پر دباو کافی زیادہ بڑھے گا ۔ پیر کو مغربی بنگال میں کورونا کے 805 نئے معاملات درج کئے گئے ۔ حالانکہ یہ تعداد ٹھیک ایک دن پہلے آئے معاملات سے 184 کم تھی ۔

      مرکزی صحت سکریٹری نے خط میں کہا ہے کہ 14 اکتوبر کو ختم ہوئے ہفتہ کے موازنہ میں اس ہفتے نئے معاملات میں 25 فیصد کا اضافہ درج کیا گیا ہے ۔ وہیں ٹیسٹ پازیٹیویٹی ریٹ میں 5.6 فیصد ْاضافہ ہوا ہے ۔

      بھوشن نے زور دیا ہے کہ تہواروں کے دوران پوری احتیاط برتے جانے کی ضرورت ہے ، تاکہ وبا کے حالات اور زیادہ خراب نہ ہوپائیں ۔ بھوشن نے لکھا ہے کہ ریاست کو کورونا پروٹوکول لاگو کروانے کیلئے سبھی ضروری قدم سختی کے ساتھ اٹھانے چاہئیں ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: