ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

ممتا بنرجی پر الیکشن کمیشن کرسکتا ہے کارروائی، نندی گرام میں لگائے الزامات کو بتایا غلط

West Bengal Elections 2021: نندی گرام میں یکم اپریل کو دوسرے مرحلے کے تحت ووٹنگ ہوئی تھی۔ وہاں کے ایک ووٹر ووٹنگ مرکز کے باہر ممتا بنرجی سے کہا تھا، ’سی آر پی ایف، بی ایس ایف صرف بی جے پی کی مدد کر رہے ہیں‘۔

  • Share this:
ممتا بنرجی پر الیکشن کمیشن کرسکتا ہے کارروائی، نندی گرام میں لگائے الزامات کو بتایا غلط
ممتا بنرجی پر الیکشن کمیشن کرسکتا ہے کارروائی

نئی دہلی: مغربی بنگال (West Bengal Elections) میں یکم اپریل کو ہوئے دوسرے مرحلے کی ووٹنگ کے دوران نندی گرام (Nandigram) میں چھٹ پٹ تشدد دیکھنے کو ملی تھی۔ اس سیٹ سے الیکشن لڑ رہیں وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی (Mamata Banerjee) نے الزام لگایا تھا کہ وہاں سیکورٹی اہلکار ووٹنگ کے دوران بی جے پی کی مدد کر رہے تھے۔ اس موضوع کو لے کر وہ الیکشن کمیشن (Election Commission) تک گئی تھیں۔ اب الیکشن کمیشن نے سبھی الزامات کی جانچ پوری کر لی ہے۔ الیکشن کمیشن نے ممتا بنرجی کی طرف سے لگائے گئے سبھی الزامات کو غلط مانا ہے۔ کہا جا رہا ہے کہ اب الیکشن کمیشن اس معاملے کو لے کر ممتا بنرجی کے خلاف سخت کارروائی بھی کرسکتا ہے۔


الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ یہ مایوس کن ہے کہ ممتا بنرجی کی طرف سے میڈیا میں ان الزامات کو لے کر سوچ بنائی گئی۔ وزیر اعلیٰ کی طرف سے رائے دہندگان کو خوفزدہ کرنے کی کوشش کی گئی۔ یہ جان بوجھ کیا گیا کام کیا ہے۔ الیکشن کمیشن نے یہ بھی کہا ہے کہ جانچ میں ایسا کوئی ثبوت نہیں ملا ہے، جس سے ثابت ہو کہ وہاں تعینات سیکورٹی اہلکاروں نے رائے دہندگان کو ووٹنگ کرنے سے روکا یا ان کا برتاو نامناسب تھا۔


الیکشن کمیشن نے اطلاع دی ہے کہ آبزرور نے بوتھ کا دورہ کیا تھا۔ اس دوران انہوں نے پایا کہ وہاں ووٹنگ کا عمل بہتر طریقے سے چل رہا تھا۔ الیکشن کمیشن نے اس دوران شکایت کنندہ کو بلایا تھا، لیکن اس نے آنے سے انکار کردیا تھا۔

Published by: Nisar Ahmad
First published: Apr 04, 2021 04:53 PM IST