ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

مہاراشٹر: اسپیکر سے 'بدسلوکی' کے الزام میں بی جے پی کے 12 ایم ایل ایز ایک سال کیلئے اسمبلی سے معطل

Maharashtra Assembly: ان 12 اراکین میں بی جے پی کے سنجے کوٹے ، آشیش شیلار ، ابھیمنو پوار ، گریش مہاجن ، اتل بھاتکھلکر ، پراگ الوانی ، ہریش پمپلے ، رمیش ساتپوتے ، وجئے کمار راول ، یوگیش ساگر ، نارائین کوچے ، کیرتی کمار بنگاڈیہ شامل ہیں ۔

  • UNI
  • Last Updated: Jul 05, 2021 06:50 PM IST
  • Share this:
مہاراشٹر: اسپیکر سے 'بدسلوکی' کے الزام میں بی جے پی کے 12 ایم ایل ایز ایک سال کیلئے اسمبلی سے معطل
مہاراشٹر: اسپیکر سے 'بدسلوکی' کے الزام میں بی جے پی کے 12 ایم ایل ایز ایک سال کیلئے اسمبلی سے معطل۔ علامتی تصویر ۔

ممبئی : مہاراشٹر ایوان اسمبلی میں مراٹھا اور او بی سی ریزرویشن کولے کر ایوان میں ہنگامہ آرائی کی پاداش میں بی جے پی کے 12 اراکین اسمبلی کو ایک سال تک معطل کر دیا گیا ہے ۔ ان اراکین اسمبلی کو ممبئی اور ناگپور اسمبلی اجلاس میں شرکت کی اجازت نہیں ہوگی ۔ یہ کارروائی پارلیمانی ایوان وزیر انیل پرب نے عارضی اسپیکر بھاسکر جادھو کے حکم پر کی ہے ۔ بھاسکر جادھو نے بتایا کہ اوبی سی ریزرویشن پر آج جو حرکت کی گئی وہ ناقابل برداشت اور سیاہ دن ہے ۔ یہاں ہنگامہ آرائی کے بعد میرے کیبن میں آکر مجھ سے بدکلامی کی گئی اور دھکا مکی کی گئی ۔ جس وقت ایوان اسمبلی میں اوبی سی ریزرویشن پر بحث جاری تھ ، اس وقت حالات معمولات پر آگئے تھے اور کارروائی دوبارہ شروع ہوگئی تھی ۔ پھر اس کے بعد مجھے دوبارہ نشانہ بنایا گیا اور مجھ سے حجت و تکرار کی گئی ۔


اپوزیشن لیڈر دیویندر فڑنویس سمیت دیگر اراکین میرے کیبن میں داخل ہوگئے ۔ یہ غصہ سے سرخ تھے اور پھر مجھے گھیر لیا گیا ، یہاں تک کہ مجھے گالیاں تک دی گئیں ۔ یہ ایوان کی روایت کے خلاف تھا ، اس سے مجھے کافی تکلیف پہنچی ہے ، اس لئے میں ان سب کے خلاف کارروائی کا حکم دیتا ہوں ، جس پر انیل پرب نے ایوان کی کارروائی کے دوران اور کیبن میں دھکامکی کر نے والے 12 بی جے پی اراکین کو ایک سال کیلئے معطل کرنے کا حکم صادر کیا ہے ۔


12 اراکین میں بی جے پی کے سنجے کوٹے ، آشیش شیلار ، ابھیمنو پوار ، گریش مہاجن ،  اتل بھاتکھلکر ،  پراگ الوانی ،  ہریش پمپلے ، رمیش ساتپوتے ، وجئے کمار راول ، یوگیش ساگر ، نارائین کوچے ، کیرتی کمار بنگاڈیہ شامل ہیں ۔ ان تمام اراکین کو ایک سال تک ایوان کی کارروائی میں شرکت کی اجازت نہیں ہوگی ۔


ایوان اسمبلی میں بی جے پی کے اراکین اسمبلی کو ایک سال تک معطل کئے جانے پر بی جے پی کے لیڈر آف اپوزیشن دیویندر فڑنویس نے ایوان کی کارروائی سے بائیکاٹ کیا اور کہا کہ سرکار کی کارروائی مغلائی راج ہے ۔ ایوان میں فڑنویس نے اس کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ جس وقت ہنگامہ آرائی شروع ہوئی ، اس وقت بی جے پی اور شیوسینا کے اراکین آمنے سامنے آگئے تھے اور دونوں طرف سے ٹکراؤ ہوا تھا ۔ دیویندر فڑنویس نے اس کا اعتراف کیا کہ اسپیکر کے کیبن میں اراکین داخل ہوئے تھے وہاں حجت و تکرار ضرور ہوئی،  لیکن ایوان میں اس قسم کی تجویز منظور نہ کی جائے جو کر نے کی کوشش کی جارہی ہے ، ایوان میں جو حرکت ہوئی یا کیبن میں جو معاملہ ہوا ، اس کیلئے اراکین نے معذرت بھی طلب کی ہے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ جو واقعہ وقوع پذیر ہوا ، اس میں اپوزیشن کو سامنے طلب کر کے بات چیت ہونی چاہئے ۔ دونوں اراکین کو آمنے سامنے لا کر کوئی حل نکالا جانا چاہئے نہ کہ اپوزیشن کی تعداد کم کر نے کے لئے اپوزیشن کے اراکین کو معطل کرنا غیر ضروری اور جمہوریت کے خلاف ہے۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 05, 2021 06:50 PM IST