உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ممبئی میں40th Hunarhat کی شروعات، ملک بھر سے دستکاروں و فنکاروں کی اشیاء کی نمائش کے ساتھ رنگا رنگ موسیقی کے پروگراموں کا بھی انعقاد 

    نقوی نے کہاکہ ہنر ہاٹ کا مقصد ملک میں بنی ہوئی اشیاء کو مشہور کرنے کے ساتھ نوجوانوں کو روزگار سے بھی وابستہ کرنا ہے اور یہ کام ہنر ہاٹ کے توسط سے جاری ہے اس میں ہمیں کامیابی میسر آئی ہے۔ ہنر ہاٹ میں دستکار اور کاریگروں کو تقویت ملی ہے۔

    نقوی نے کہاکہ ہنر ہاٹ کا مقصد ملک میں بنی ہوئی اشیاء کو مشہور کرنے کے ساتھ نوجوانوں کو روزگار سے بھی وابستہ کرنا ہے اور یہ کام ہنر ہاٹ کے توسط سے جاری ہے اس میں ہمیں کامیابی میسر آئی ہے۔ ہنر ہاٹ میں دستکار اور کاریگروں کو تقویت ملی ہے۔

    نقوی نے کہاکہ ہنر ہاٹ کا مقصد ملک میں بنی ہوئی اشیاء کو مشہور کرنے کے ساتھ نوجوانوں کو روزگار سے بھی وابستہ کرنا ہے اور یہ کام ہنر ہاٹ کے توسط سے جاری ہے اس میں ہمیں کامیابی میسر آئی ہے۔ ہنر ہاٹ میں دستکار اور کاریگروں کو تقویت ملی ہے۔

    • Share this:
    ممبئی : ممبئی میں چالیسویں ہنر ہاٹ Hunar Haat کا افتتاح  عمل میں آیا۔ ممبئی کے باندرہ کرلا کامپلیکس کے ایم ایم آرڈی اے گراؤنڈ میں منعقد ہنر ہاٹ کے 40 ویں ایڈیشن میں 31 سے زیادہ ریاستوں اور مرکزی علاقوں کے ایک ہزار سے زیادہ دستکار، فن کار ,کاریگر اپنے سودیشی کلاں اور اشیاء کے ساتھ ہنر ہاٹ میں شرکت کی۔    مرکزی وزیربرائے اطلاعات و نشریات اور کھیل انوراگ ٹھاکر نے افتتاحی پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ وزیر اعظم مودی نے ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کیا ہے کورونا کے دوران بھی ملک نے خودمختاری کا ثبوت دیا ہے۔ کورونا کے دور میں جب پی پی ای کٹ بیرون ملک سے ہمارے ملک درآمد کی جاتی تھی۔ اسی طرز پر ہم نے پی پی ای کٹ تیار کیا اس کے ساتھ ہی مودی جی کے دور اقتدار میں نوجوانوں کو روزگار کے مواقع فراہم کر کے انہیں ہنرمندی کے ساتھ تربیت بھی دی گئی۔ یہی وہ تربیت یافتہ نوجوان ہے جو آج ملک کا مستقبل ہیں۔ اس قسم کا اظہار خیالات مرکزی وزیر کھیل اطلاعات و نشریات انوراگ  ٹھاکر نے کیا۔ ٹھاکر نے کانگریس پر تنقید کرتے ہوئے کہاکہ کانگریس کے دور اقتدار میں ہنر مندوں کی بات تو ہوتی تھی لیکن ان کے لئے کچھ نہیں کیا جاتا تھا۔ اڑیسہ جھاڑ کھنڈ جیسے صوبوں میں ہنرمند خودکشی پر مجبور ہوتے تھے لیکن آج ایسا نہیں ہے ملک ترقی کر رہا ہے نوجوانوں کو روزگار مل رہا ہے۔ انہوں نے کہاکہ مختار عباس نقوی نے مودی جی کے میرا گاؤں میرا دیش کے پروجیکٹ کے تحت 9 لاکھ نوجوانوں کو روزگار فراہم کیاہے اور یہ لوگ صرف روزگار مانگنے والے نہیں بلکہ روزگار فراہم کرنے والے بھی ہیں۔
    افتتاحی تقریب کے بعد انوراگ ٹھاکر، مختار عباس نقوی، پرکاش جاؤڈیکر اور دیویندر فڑویس نے ہنرہاٹ میں لگے اسٹال کا دورہ کیا اور ذائقوں مختلف ذائقوں سے لطف اندوزبھی ہوئے۔ انوراگ ٹھاکر نے اہلیان ممبئی سے ہنرہاٹ میں تشریف لانے اور ذائقوں سے لطف اندوز ہونے کی بھی اپیل کی۔   بی جے پی لیڈر اور سابق مرکزی وزیر پرکاش جاؤڈیکر نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ڈیجیٹل ٹکنالوجی سے ملک بھر میں کسی بھی شئے کو متعارف کروایا جاسکتا ہے۔ مودی جی کی سر براہی میں ملک ترقی کی راہ پر گامزن ہے اور روزگار کے مواقع پیدا ہوئے ہیں نوجوان نسلوں کو روزگار سے وابستہ کیا جارہا ہے یہ ملک کیلئے خوش آئند ہے۔ پرکاش جاؤڈیکر نے گھریلو بزنس, دستکاری, فن کاری اور ہنر مندی سے بنی اشیاء کو آن لائن پلیٹ فارم پر متعارف کروانے پر زور دیا۔
    مرکزی وزیر برائے اقلیتی امور مختار عباس نقوی نے کہا کہ ہنر ہاٹ وزیر اعظم کے لوکل فار وکل کا نظریہ عملی طور پر ترقی کی نئی منازل طے کر رہا ہے۔ ممبئی میں منعقد ہونے والا یہ چالیسواں ہنر ہاٹ ہے۔گزشتہ 7 برسوں میں 9 لاکھ روزگار کے مواقع پیدا ہوئے ہیں۔ ہنر ہاٹ میں ہر صوبہ سے باشندے اور ہنرمند یہاں آئے ہیں۔ پہلے فاسٹ فوڈ کا اسٹال ہوتا تھا ۔ اب یہ میرا گاؤں میرا دیش ہے اور یہاں ایک ہزار ہنرمندوں نے اس میں حصہ لیا ہے اس کے ساتھ ہی مختلف انوع و اقسام کے اسٹالس بھی اس میں شریک ہیں جو ہندوستانی تہذیب و ثفافت اور ورثہ کو بلند کرتے ہیں ۔

    نقوی نے کہاکہ ہنر ہاٹ کا مقصد ملک میں بنی ہوئی اشیاء کو مشہور کرنے کے ساتھ نوجوانوں کو روزگار سے بھی وابستہ کرنا ہے اور یہ کام ہنر ہاٹ کے توسط سے جاری ہے اس میں ہمیں کامیابی میسر آئی ہے۔ ہنر ہاٹ میں دستکار اور کاریگروں کو تقویت ملی ہے۔ اس میں ایک ہزار سے زائد کاریگر  شریک ہے ہنر ہاٹ میں کاریگر اپنے فن کا مظاہرہ کر رہے ہیں۔ انہیں ہم نے بازار فراہم کیا ہے اور اس سے ان کی معیشت کو مرکزی و قومی دھارے میں لانے میں مدد بھی ملی ہے۔ آج ملک کی مصنوعات کو اس بازار میں فروخت کیا جارہا ہے جس سے خواتین اور کاریگروں میں نئی امنگ اور امید پیدا ہوئی ہے۔

    باندرہ میں منعقدہ اس ہنر ہاٹ میں تمام صوبوں کے اسٹالس شامل ہیں جن میں راجستھان، دلی، ناگالینڈ، مدھیہ پردیش منی پور، بہار، اندھرا پردیش، جھارکھنڈی بنگ، گوا پنجاب، لداخ، کرناٹک، گجرات، ہریانہ، جموں کشمیر  مغربال، چھتیس گڑھ، تملناڈو، کیرالہ سمیت ہر خطے کی مصنوعات یہاں فروخت کی جارہی ہے جس میں باورچی خانے سے لے کر دیگر چیزیں شامل ہیں۔ اس میں کپڑوں سے لے کر روایتی ذائقوں کی شمولیت کابھی خیال رکھا گیا ہے۔ اس ہنر ہاٹ میں صر ف اسٹالس ہی نہیں بلکہ موسیقی تقریب کے ساتھ متعدد شوز بھی منعقد کئے گئے ہیں جس سے شائقین لطف اندوز ہوں گے یہ ہنر ہاٹ 27 مئی تک جاری رہے گا۔ اس موقع پر مہاراشٹر کے سابق وزیر اعلی دیویندر فڑنویس سمیت بی جے پی کے اراکین پارلیمنٹ و دیگر اراکین بھی موجود تھے۔
    دس روزہ ہنرہاٹ میں رنگا رنگ پروگرام اور موسیقی کے پروگراموں کا بھی انعقاد عمل میں آئیگا۔ معروف گلوکار شبیر کمار نے ہنر ہاٹ میں فن گلوکاری کا مظاہرہ کیا
    Published by:Sana Naeem
    First published: