اپنا ضلع منتخب کریں۔

    پروین توگڑیا کا دعوی ، گزشتہ 10 سالوں میں پانچ لاکھ عیسائیوں اور ڈھائی لاکھ مسلمانوں کو ہندو بنایا

    پروین توگڑیا: فائل فوٹو

    پروین توگڑیا: فائل فوٹو

    سورت : مذہبی منافرت پر مبنی بیانات کے لیے مشہور وشو ہندو پریشد کے فائر برانڈ لیڈر پروین توگڑیہ نے دعویٰ کیا ہے کہ ان کی تنظیم نے پانچ لاکھ عیسائیوں اور ڈھائی لاکھ مسلمانوں کی گھر واپسی کرائی ہے ۔

    • ETV
    • Last Updated :
    • Share this:

      سورت : مذہبی منافرت پر مبنی بیانات کے لیے مشہور وشو ہندو پریشد کے فائر برانڈ لیڈر پروین توگڑیہ نے دعویٰ کیا ہے کہ ان کی تنظیم نے پانچ لاکھ عیسائیوں اور ڈھائی لاکھ مسلمانوں کی گھر واپسی کرائی ہے ۔


      گذشتہ 10 برسوں کے دوران دونوں مذاہب کے لاکھوں افراد کو ہندو مذہب کا پیرو کار بنانے کا دعویٰ کیا ہے۔ گجرات کے سورت میں وی ایچ پی کی فنڈ رائزنگ تقریب سے خطاب کے دوران توگڑیہ نے یہ دعویٰ کیا۔


      ملک میں ہندو مت کی بقا کے لیے گھر واپسی کی مہم بڑے پیمانے پر چلانے کی کال دی ہے۔ پروین توگڑیہ نے دعویٰ کیا کہ گذشتہ برسوں میں ہر سال کم از کم 15 ہزار افراد کو ہندو مذہب کی طرف لوٹایا گیا۔ لیکن گذشتہ سال تقریبا چالیس ہزار افراد کی گھر واپسی عمل میں آئی۔ پاکستا ن کے تمام ہندو شہریوں کو ہندوستان کی شہریت دینے کا توگڑیہ نے اس موقعہ پر مطالبہ کیا۔

      First published: