ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

8 سالہ بچے سے بیت الخلا صاف کروایا مہاراشٹر کےبلڈھانہ میں شرمناک واقعہ، بچوں کے تحفظ پر سوالیہ نشان

بلڈھانہ کی تحصیل سنگرام پور کے گاؤں مروڈ میں کورونا مریضوں کے لئے بنائے جانے والے کوارنٹائن سینٹر میں ایک غیر انسانی واقعہ پیش آیا ہے۔ یہاں ایک آٹھ سالہ معصوم بچے کے ذریعہ اسکول میں بنائے گئے کوا رنٹائن سینٹر کےبیت الخلا صاف کروایا گیا۔

  • Share this:
8 سالہ بچے سے بیت الخلا صاف کروایا مہاراشٹر کےبلڈھانہ میں شرمناک واقعہ، بچوں کے تحفظ پر سوالیہ نشان
بلڈھانہ کی تحصیل سنگرام پور کے گاؤں مروڈ میں کورونا مریضوں کے لئے بنائے جانے والے کوارنٹائن سینٹر میں ایک غیر انسانی واقعہ پیش آیا ہے۔

مہاراشٹر کے بلڈھانہ ضلع میں ایک انتہائی شرمناک اور دل کو جھنجھوڑ نے والی ویڈیو سامنے آ ئی ہے۔ بلڈھانہ کی تحصیل سنگرام پور کے گاؤں مروڈ میں کورونا مریضوں کے لئے بنائے جانے والے کوارنٹائن سینٹر میں ایک غیر انسانی واقعہ پیش آیا ہے۔ یہاں ایک آٹھ سالہ معصوم بچے کے ذریعہ اسکول میں بنائے گئے کوا رنٹائن سینٹر کےبیت الخلا صاف کروایا گیا۔ اس واقعے کی ویڈیو فی الحال ریاست میں زیر بحث ہے۔ ایک طرف جہاں ریاستی حکومت بچوں کی حفاظت کا دعوی کرتی ہے۔


وہیں دوسری طرف ایسی تصاویر بچوں کی حفاظت پر سوالیہ نشان کھڑی کرتی ہیں۔ مہاراشٹرحکومت نے دیہی علاقوں کے سرکاری اور غیر سرکاری اسکولوں کو قرنطین مراکز میں تبدیل کردیا ہے۔ تاکہ کورونا سے متاثرہ مریضوں کو وہیں رکھا جاسکے تاکہ دوسرے لوگوں کو انفیکشن سے بچایا جاسکے۔ لیکن بلڈھانہ کے اس عجیب و غریب واقعے نے بچوں کی حفاظت پر سوالیہ نشان لگا دیا ہے۔ سوال یہ بھی ہے کہ اگر اس بچے کو کورونا ہوجاتا تو اس کا ذمہ دار کون ہوتا؟ کیا ریاست کے دوسرے اسکولوں میں بھی ایسی ہی صورتحال ہے؟ب


دقسمتی کی بات یہ بھی ہے کہ گرام پنچایت ملازم ایک بچے سے بیت الخلا کی صفائی کرواتا رہااور دوسری طرف اس نے یہ بھی کہا کہ اس بارے میں معلومات گروپ ڈویلپمنٹ آفیسر کو ہے۔ اگر میڈیا نے اس واقعے کی ویڈیو پر نگاہ ڈالی تو انتظامیہ بھی حرکت میں آگئی ہے۔


بلڈھانہ کے ضلع مجسٹریٹ نے اس معاملے کی تحقیقات کے لئے ایک کمیٹی تشکیل دی ہے۔ انہیں تین دن میں اپنی رپورٹ پیش کرنی ہوگی۔ نیز اس معاملے میں جو بھی قصوروار ہے اس کے خلاف بھی کارروائی کی جائے گی۔ اس واقعہ پر بی جے پی لیڈرچترا واگھ نے وزیر اعلی سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ متعلقہ ملازم ، گروپ ڈویلپمنٹ آفیسر اور ضلع مجسٹریٹ کے خلاف کارروائی کرے۔
Published by: Sana Naeem
First published: Jun 02, 2021 12:42 PM IST