உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ذاکر نائک ملک مخالف سرگرمی میں کبھی شامل نہیں ہو سکتے، ان کے ادارے کو نشانہ بنانا غلط: ابو عاصم اعظمی

    ابو عاصم اعظمی: فائل فوٹو

    ابو عاصم اعظمی: فائل فوٹو

    ایس پی لیڈر نے کہا کہ میں شروع سے ہی یہ کہتا چلا آ رہا ہوں کہ ذاکر نائک گزشتہ پچیس سال سے دینی خدمات انجام دے رہے ہیں اور وہ کسی بھی ملک مخالف سرگرمی میں ہرگز شامل نہیں ہو سکتے۔

    • Agencies
    • Last Updated :
    • Share this:
      ممبئی۔ سماج وادی پارٹی کے سینئر اور تیز طرار لیڈر ابو عاصم خان اعظمی نے معروف اسلامی اسکالر ڈاکٹر ذاکر نائیک کے ادارے اسلامک ریسرچ فاونڈیشن پر مرکزی حکومت کے عاید کردہ پانچ سال کی پابندی کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ مرکز بغیر کسی جواز کے ان کے ادارے کو نشانہ بنا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ادارے کے خلاف غیر قانوی سرگرمیوں ( روک تھام) کا ایکٹ لگانا ہی غلط ہے۔ میرے خیال میں ذاکر نائک کے ادارے کو دہشت گردانہ کارروائیوں سے جوڑنے کی سازش کی جا رہی ہے۔

      ذرائع کے مطابق، ایس پی لیڈر نے کہا کہ میں شروع سے ہی یہ کہتا چلا آ رہا ہوں کہ ذاکر نائک گزشتہ پچیس سال سے دینی خدمات انجام دے رہے ہیں اور وہ کسی بھی ملک مخالف سرگرمی میں ہرگز شامل نہیں ہو سکتے۔ اعظمی نے این آئی اے کی جانچ پر بھی سوال کھڑے کئے۔ انہوں نے کہا کہ ذاکر نائک کو نہ تو کبھی طلب کیا گیا اور نہ ہی انہیں کوئی نوٹس دی گئی۔

      خیال رہے کہ مرکزی حکومت نے ذاکر نائک کے ادارے پر پانچ سال کے لئے پابندی عاید کر دی ہے اور بیرونی چندے لینے پر بھی روک لگا دی ہے۔
      First published: