ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

بقرہ عید کے موقع پر بکر امنڈی لگانے کی دی جائے اجازت، میٹنگ کے ذریعے حکومت کوئی راستہ نکالے: ابو عاصم اعظمی

بقرہ عید کے موقع پر بکر امنڈی لگانے کی اجازت دی جائے، ابو عاصم اعظمی کا مطالبہ میٹنگ کے ذریعے حکومت کوئی راستہ نکالے تاکہ قربانی کے فریضہ کے ادائیگی میں دشواری نہ ہو۔

  • Share this:

ہر تہوار میں کورونا کا اثر نظر آرہا ہے۔ حکومت کے ذریعے جاری کردہ گائیڈ لائن کاخیال رکھتے ہوئے لوگ اپنے گھروں میں ہر تہوار کو منارہے ہیں۔ کورونا کے سبب مذہبی پروگراموں پر پابندی عائد ہے لیکن اب آہستہ آہستہ کورونا مریضوں کی تعداد میں کمی آ رہی ہے اور مہاراشٹرمیں کچھ راحت کے ساتھ پابندیوں میں نرمی لائی جا رہی ہے۔ عید الاضحی کا تہوار قریب ہے۔ لوگوں میں قر بانی کے فریضہ کی ادائیگی کےتعلق سے چینی بڑھ رہی ہے۔ مسلمانوں نے حکومت سے مطالبہ کیاہے کہ بقر عید کے موقع پر راحت دی جائے تاکہ تہوار منایا جاسکے۔ سماج وادی پارٹی مہاراشٹر کے ریاستی صدر اور ایم ایل اے ابو عاصم اعظمی نے ایک ویڈیو جاری کرتے ہوئے این سی پی کے سربراہ شرد پوار ، وزیر اعلی ادھو ٹھاکرے اورمیونسپل کمشنر اقبال سنگھ چہل سے مطالبہ کیا ہے کہ 21 جولائی کو بقر عید ہے۔ ریاست بھر کے مسلمان قر بانی کا فریضہ کی ادائیگی کرتے ہیں۔ قر بانی کی ادائیگی میں کوئی دشواری پیش نہ آئے حکومت اس تعلق سے غور کرے اور ایسا راستہ نکالے کہ کوئی دشواری پیش نہ آئے۔


اعظمی نے یہ بھی کہا کہ ملک کے کونے کونے سے بکروں کے تاجردیونار آتے ہیں اور اپنےجانوروں کو بیچ کر کچھ پیسے کمالیتے ہیں۔ بکروں کو پالنے والے سال بھر اپنے جانوروں کو اس امید پر دیکھ ریکھ کرتے ہیں کہ تہوار کے موقع پر جانوروں کو بیچ کر پیسےکمالےلیں گے تاکہ اس رقم سے وہ اپنے بچوں کی فیس ادا کرسکیں ، اپنی بیٹیوں کی شادی اور اپنے والد ین کا علاج کرسکیں۔ پچھلے سال 2020 میں بھی ایسی ہی صورتحال تھی اور اس دوران بہت سے بکرے شہر میں نہیں آس کے بہت سے بیو پاریوں کا کروڑوں کا نقصان ہوا۔ بکروں کو پالنے والے چھوٹےکسانوں کومشکلات سے گزر نا پڑا۔


حکومت نے راحت دی تو جانوروں کے بیو پا ریوں کو بڑی راحت ملے گی۔ اعظمی نے یہ بھی کہا کہ حالیہ انتخابات میں دیکھا گیا کہ بڑی بڑی انتخابی ریلیاں نکالی گئیں ، سب نے دیکھا کہ وزیر اعظم یہ ریلیاں کر رہے تھے۔تمام احتیاطی تدابیر اور بحران کے بیچ کمبھ میلہ بھی ہوا۔ صرف یہی نہیں گجرات کے ایک مندرمیں جمع ہوئیں اور کورونا کے خاتمے کے لئے دعا ئیں کیں اور سوشل ڈسٹینسنگ پر عمل نہیں کیا گیا۔

اعظمی نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ تمام احتیاطی تدابیر کو بروئے کار لاتے ہوئے ایک ایسا راستہ تلاش کیا جائے جس سے قربانی کا فریضہ صحیح طور پر ادا ہو سکے۔ اعظمی نے کہا کہ اگر حکومت چاہے تو درمیانی راستہ تلاش کیا جاسکتا ہے ، لہذا ایک میٹنگ کے ذریعہ ایک راستہ تلاش کیا جانا چاہئے تاکہ لوگ بکروں کی خرید و فروخت کرسکیں۔حکومت پر الزام عائد کرتے ہوئے انہوں نےکہا کہ جب بھی ناانصافی کی بجلی گرتی ہے تو صرف مسلمانوں پر ہی کیوں گرتی ہے۔ صحیح راہ تلاش کیا جائے تاکہ لوگوں کو راحت مل سکے۔ اعظمی نے تو قع کا اظہار کیا کہ حکومت یقینی طور پر کوئی راستہ تلاش کرے گی۔

 
Published by: Sana Naeem
First published: Jun 11, 2021 07:35 PM IST