உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ابوعاصم اعظمی کا ممبئی کے مشہور زو گارڈن رانی باغ کوپیر بابا سے منسوب کرنے کا مطالبہ

     سوشل میڈیا پر حاجی پیر بابا کے نام سے رانی باغ کو منسوب کئے جانے کی تصویر وائرل ہو نے کے بعد ابوعاصم اعظمی (Abu Asim Azmi) نے یہ مطالبہ کیا ہے۔

    سوشل میڈیا پر حاجی پیر بابا کے نام سے رانی باغ کو منسوب کئے جانے کی تصویر وائرل ہو نے کے بعد ابوعاصم اعظمی (Abu Asim Azmi) نے یہ مطالبہ کیا ہے۔

    سوشل میڈیا پر حاجی پیر بابا کے نام سے رانی باغ کو منسوب کئے جانے کی تصویر وائرل ہو نے کے بعد ابوعاصم اعظمی (Abu Asim Azmi) نے یہ مطالبہ کیا ہے۔

    • Share this:
    ممبئی: ممبئی کے رانی باغ میں برطانوی دور سےہی حضرت پیر بابا درگاہ واقع ہے رانی باغ کا نام تبدیل کرنے کا مسئلہ یہاں مہاراشٹر کے ایوان میں اٹھایا اور رانی باغ کو فرقہ وارانہ ہم آہنگی کے لئے رانی باغ کو حضرت پیر بابا سے منسوب کرنے کا بھی مطالبہ کیا جس پر ایوان میں وزیر نگراں ایکناتھ شندے نے فورا مخالفت کرتے ہوئے رانی باغ کو چھترپتی شیواجی مہاراج سے وابستہ کیا اور کہا شیواجی مہاراج ہمارے لئے قابل احترام ہے۔ یہ نا ممکن ہے ابھی رانی باغ جیجا ماتا ادھیان سے وابستہ ہے۔ سوشل میڈیا پر حاجی پیر بابا کے نام سے رانی باغ کو منسوب کئے جانے کی تصویر وائرل ہو نے کے بعد ابوعاصم اعظمی (Abu Asim Azmi) نے یہ مطالبہ کیا ہے۔

    ابوعاصم اعظمی کی ایوان میں مخالفت کےبعد اعظمی نے کہا کہ شیواجی مہاراج کے اصولوں پر ہی یہ سرکار چلتی ہے اس لئے ہم قومی ایکتا کو لے کر یہ بات کہہ رہے ہیں جبکہ اپوزیشن نے رانی باغ میں بدعنوانی کا مسئلہ اٹھاتے ہوئے سرکار کو نشانہ بنایا ہے۔ سدھیر منگٹی وار نے ایوان میں اس مسئلہ کو پیش کیا ۔ ابوعاصم اعظمی کے مطالبہ پر اسپیکر نے انہیں روک دیا۔

    ایوان میں وزارت داخلہ کےاضافی بجٹ پر ابوعاصم اعظمی نےبحث میں حصہ لیتے ہوئے وزارت داخلہ کے فنڈ میں تخفیف کا مسئلہ اٹھایا اور کہا کہ نظم ونسق کی برقراری کے لئےعملہ میں تقرری ضروری ہے لیکن پولس محکمہ میں 90 فیصد جگہ و اسامیاں خالی ہے۔ خواتین اور بچوں کے جرائم پر بحث کرتے ہوئے ابوعاصم اعظمی نے کہا کہ خواتین اور بچوں کے جرائم کے کیس زیر التوا ہے کیونکہ سیشن کورٹ میں تیس فیصدی ججوں کی کمی ہے۔ عملہ پر کام کا دباؤ اور دیگر معاملات بھی اس میں شامل ہےابوعاصم اعظمی نے کہا کہ خواتین کے جرائم میں 75 فیصدی بری ہو گئے پسکو کے کیس زیر التوا ہے اس لئے پسکوکے کیس کو ایک سال میں مکمل کیا جا ئے اور اس کے لئے فاسٹ ٹریک کورٹ میں سماعت ہو ۔

    قومی، بین الاقوامی اور جموں وکشمیر کی تازہ ترین خبروں کےعلاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں ۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: