ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

ٹیچر پر طالبات نے لگایا سنگین الزام ، "وہ میری برا کی جانب کرتا تھا اشارہ ... پرائیویٹ پارٹ کو پکڑتا تھا"، مچا ہنگامہ

ملزم ٹیچر نے ایسے چیٹس کی جانکاری ہونے پر طلبہ و طالبات کو وارننگ دی ہے کہ وہ پولیس میں شکایت کرے گا ۔

  • Share this:
ٹیچر پر طالبات نے لگایا سنگین الزام ،
ٹیچر پر طالبات نے لگایا سنگین الزام ، "وہ میری برا کی جانب کرتا تھا اشارہ ... پرائیویٹ پارٹ کو پکڑتا تھا"، مچا ہنگامہ

قومی راجدھانی دہلی میں بوائز لاکر روم کے معاملہ کے بعد سوشل میڈیا پر ریپ کلچر کی بحث کافی بڑھ گئی ہے ۔ کئی متاثرین اب سامنے آرہے ہیں اور اپنے ساتھ پیش آئے واقعات کو بیان کررہے ہیں ۔ ایسا ہی ایک گروپ مہاراشٹر میں واقع نوی ممبئی کے اسکول کے موجودہ اور قدیم طلبہ بنایا ہے ۔ طلبہ اور طالبات نے اس گروپ میں اپنے اپنے تجربات شیئر کئے ہیں ۔ طلبہ اور طالبات نے ایک پرائیویٹ انسٹاگرام چیٹ پر الزامات لگائے ہیں کہ ایک ٹیچر پانچ سالوں سے جنسی استحصال کررہا ہے ۔ اتنا ہی نہیں دو سابق طلبہ نے اسکول میں ای میل کے ذریعہ شکایت بھی کی ہے ۔ ممبئی مرر نے ایک رپورٹ میں دعوی کیا ہے کہ ان کے پاس اس سے وابستہ کئی اسکرین شاٹس ہیں ۔


رپورٹ کے مطابق طالبات نے بتایا کہ ٹیچر ان کی برا اور اسکرٹس پر تبصرے کرتا تھا ۔ اتنا ہی نہیں ایک مرتبہ ٹیچر نے ایک لڑکے کے پرائیویٹ پارٹ تک کو پکڑلیا تھا ۔ مرر کی رپورٹ میں دعوی کیا گیا ہے کہ ایک لڑکی نے گروپ چیٹ میں بتایا کہ وہ کئی مرتبہ میری برا کی جانب دیکھتا اور اشاروں میں کہتا کہ سائز کافی بڑا ہوگیا ہے ۔ ایک دیگر لڑکی نے گروپ چیٹ میں بتایا کہ ایک مرتبہ وہ بارش میں بھیگ گئی تھی اور اپنے دوستوں کا انتظار کررہی تھی ، اسی دوران ٹیچر بھی وہاں سے گزرا اور اس نے کہا کہ یہ کیا کالا پیلا ( اس کا اشارہ میری برا کے رنگوں کی جانب تھا ) پہن کر آئی ہو ؟ ۔


وہیں ملزم ٹیچر نے ایسے چیٹس کی جانکاری ہونے پر طلبہ و طالبات کو وارننگ دی ہے کہ وہ پولیس میں شکایت کرے گا ۔ رپورٹ میں دعوی کیا گیا ہے کہ ٹیچر نے جس تھانہ کا ذکر کیا ہے ، وہاں کے ایک سینئر افسر نے بتایا کہ ایسی کوئی شکایت ابھی تک نہیں آئی ہے ۔


اتنا ہی نہیں ملزم ٹیچر نے یہاں تک کہا کہ ان کی شکایت کرنے کا وقت غلط ہے ۔ رپورٹ کے مطابق ٹیچر نے مبینہ طور پر طالبات سے کہا کہ آپ خود سوچیں کہ کوئی لڑکی بارش میں بھیگی ہو اور اس کی برا نظر آئے ، تو یہ دیکھنے میں برا لگتا ہے ۔ کچھ ایسی باتیں ہیں جو مجھے اچھی نہیں لگتی ، لیکن اب یہ شکایت کیوں کی جارہی ہے ؟ یہ سالوں پہلے کی باتیں ہیں ۔ آخر اس وقت اپنے گھر والوں سے کیوں نہیں کہا ؟ اسی وقت مجھ سے بات کرسکتی تھیں ، تھپڑ مار سکتی تھیں ، وہیں اسکول نے ای میل سے آئی شکایتوں پر توجہ دی ہے اور جانچ شروع کردی ہے ۔

یہ بھی پڑھیں : ۔ 

آن لائن کلاس کے دوران بچے نے پوسٹ کی پورن فوٹو ، گروپ میں شروع کردی ایسی فحش باتیں ، سب کے اڑ گئے ہوش ، مچا ہنگامہ

فیس بک پر نام بدل کر لڑکیوں کو اپنی جال میں پھنساتا تھا ، پھر فحش تصاویر منگوا کر کرتا تھا ایسا گھنونا کام ، کھلا راز تو مچا ہنگامہ

پاکستان میں شادی سے پہلے اب ہر جوڑے کو کرانا ہوگا یہ خاص ٹیسٹ ، تبھی ہوگی شادی رجسٹرڈ ، جانئے کیوں

پاکستان کے اس سابق گورنر کے سالی کے ساتھ تھے ناجائز تعلقات ، کتاب میں انکشاف ، مچا ہنگامہ

سہاگ رات میں بیوی کا گھونگھٹ اٹھاتے ہی دولہا کا اڑگیا ہوش ، کہا : ہائے اللہ یہ کیا ہوگیا ...

First published: May 09, 2020 08:50 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading