உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    قومی اتحاد کی انوکھی مثال ، گنیش وسرجن کے بعد مسلمانوں نے کیا سابرمتی ریور فرنٹ صاف

    ان دنوں سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو زبردست وائرل ہو رہا ہے جس میں کچھ مسلم لوگ گنیش جی کی مورتی کو اٹھا کر اچھی طرح سے رکھ رہے ہیں اور صفائی کر رہے ہیں: فوٹو، نیوز 18

    احمد آباد میں ایک بار پھر قومی اتحاد کی منفرد مثال دیکھنے کو ملی ۔ صفائی کرنے والے لوگ بھلے ہی ایک پارٹی سے جڑے ہوئے ہیں لیکن ان کے اس شاندار کام کو سیاسی نہیں بلکہ انسانیت کے نظریہ سے دیکھاجانا چاہئے ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      احمد آباد میں  ایک بار پھر قومی اتحاد کی منفرد مثال دیکھنے کو ملی ۔ صفائی کرنے والے لوگ بھلے ہی ایک پارٹی سے جڑے ہوئے ہیں لیکن ان کے اس شاندار کام کو سیاسی نہیں بلکہ انسانیت کے نظریہ سے دیکھاجانا چاہئے ۔  دراصل گزشتہ دنوں ہونے والے گنیش وسرجن کے بعد سابرمتی ریورفرنٹ کافی گندا ہو گیا تھا اور جگہ جگہ پر گنیش جی کی مورتیاں پڑئی ہوئی تھیں ،  جسے مسلم برادری کے لوگوں نے اٹھا کر صاف کیا اور قومی اتحاد کا ایک منفرد پیغام دیا۔

      ان دنوں سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو زبردست وائرل ہو رہا ہے ،  جس میں کچھ مسلم لوگ گنیش جی کی مورتی کو اٹھا کر اچھی طرح سے رکھ رہے ہیں اور صفائی کر رہے ہیں ۔ یہ ویڈیو احمد آباد کے جمال پور علاقہ میں رہنے والے مسلم برادری کے لوگوں کے شاندار کام کی گواہی دیتا ہے ۔

      دراصل اس سال احمد آباد ميونسپل کارپوریشن نے سابرمتی دریا میں گنیش وسرجن پر پابندی لگا دی تھی ،  جس کے بعد ندی کے پاس میں ہی گڈھے بنائے گئے تھے ، جس میں گنیش وسرجن کیا گیا ۔ گنیش وسرجن کے بعد گڈھے کا پانی ختم ہو گیا اور دیکھنے کو ملا کہ جگہ جگہ پر گنیش جی کی مورتياں پڑی ہں ۔  جس کو صحیح جگہ پر پہنچانے کا کام  جمال پور اسمبلی حلقہ کے ایم ایل اے عمران كھیڑاوالا اور ان کی ٹیم نے کیا ۔ ان کے اس کام کی  ہندو برادری کے لوگ بھی جم کر تعریف کر رہے ہیں ۔

      جمال پور علاقہ کے کانگریسی ایم ایل اے عمران كھیڑاوالا کو جیسے ہی پتہ چلا کہ گنیش وسرجن کے بعد سابرمتی ریور فرنٹ پر کافی زیادہ گندگی ہے ، فورا ہی وہ اپنی ٹیم کو لے کر پہنچ گئے اور گنیش جی کی مورتياں وہاں سے اٹھا کر صفائی کی اور مورتیوں کو اچھی جگہ پر رکھوایا  ۔ اس کام میں علاقہ کی ميونسپل کاونسلر رضیہ شیخ، شاہنواز شیخ اور احمدآباد شہر کانگریس اقلیتی ڈپارٹمنٹ کے نائب صدر عمر خان نے حصہ لیا ۔
      First published: