உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    گجرات کے نئے سی ایم پر منتھن جاری، وجے روپانی کے استعفیٰ کے بعد نتن پٹیل کانام سرفہرست

    پارٹی یہاں کوئی خطرہ مول لینا نہیں چاہتی تھی۔ آج وجے روپانی کے متبادل چہرے پر مہر لگ سکتی ہے۔

    پارٹی یہاں کوئی خطرہ مول لینا نہیں چاہتی تھی۔ آج وجے روپانی کے متبادل چہرے پر مہر لگ سکتی ہے۔

    پارٹی یہاں کوئی خطرہ مول لینا نہیں چاہتی تھی۔ آج وجے روپانی کے متبادل چہرے پر مہر لگ سکتی ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی. آج سیاسی حلقوں میں سب کی نظریں گجرات پر لگی ہوئی ہیں۔ وجے روپانی کے استعفیٰ (Vijay Rupani Resigns) کے بعد جو گجرات کے اگلے وزیر اعلیٰ ہوں گے اس کا اعلان آج سہ پہر کیا جا سکتا ہے۔ آج دوپہر تین بجے بی جے پی ایم ایل اے کی میٹنگ ہوگی۔ آپ کو بتا دیں کہ مرکزی وزراء پرہلاد جوشی اور نریندر سنگھ تومر اتوار کو قانون ساز پارٹی کی میٹنگ کے لیے گجرات پہنچ گئے ہیں۔ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے انہیں مرکزی نگراں کے طور پر وہاں بھیجا ہے۔

      اگلے سال ہونے والے اسمبلی انتخابات سے پہلے گجرات میں ایک بڑی سیاسی ہلچل پیداہوگئی ہے۔ چیف منسٹر وجے روپانی نے ہفتہ کو اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا۔ وجے روپانی پہلی اور دوسری اننگز کو ملا کر گجرات میں پانچ سال تک اقتدار میں رہے۔ پچھلے الیکشن میں بھارتیہ جنتا پارٹی نے گجرات میں بہت مشکل سے کامیابی حاصل کی تھی۔ اس کے بعد یہ معاملہ کسی نہ کسی طرح چار سال تک چلتا رہا لیکن الیکشن کے لیے ایک سال باقی رہ گیا ہے۔ پارٹی یہاں کوئی خطرہ مول لینا نہیں چاہتی تھی۔ آج وجے روپانی کے متبادل چہرے پر مہر لگ سکتی ہے۔

      گجرات میں انتخابی سرگرمیوں سے قبل وزیر اعلیٰ وجے روپانی (Chief Minister Vijay Rupani) کے استعفے کے بعد بی جے پی میں سیاسی ہلچل تیز ہو گئی ہے۔ وجے روپانی کے استعفی کے بعد آج بی جے پی گجرات کے نئے سی ایم کا اعلان کرسکتی ہے ۔ دو پہر دو بجے یجسلیچر پارٹی کی میٹنگ ہوگی۔ قابل ذکر ہے کہ گجرات میں آئندہ سال اسمبلی انتخابات ہونے والے ہیں۔ ایسے میں وجے روپانی کا استعفیٰ بی جے پی کے لئے بڑا جھٹکا مانا جا رہا ہے۔ حالانکہ وجے روپانی نے کیوں اپنے عہدے سے استعفیٰ دیا، اس کا پتہ نہیں چل پایا ہے۔

      وزیر اعلیٰ کے عہدے سے استعفیٰ دینے کے بعد وجے روپانی نے کہا، میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے تئیں اپنا اظہار تشکر پیش کرتا ہوں، میرے جیسے پارٹی کے کارکن کو وزیر اعلیٰ جیسے عہدے کی ذمہ داری دی۔ میری مدت کار کے دوران وزیر اعظم نریندر مودی کی خاص رہنمائی ملتی رہی ہے۔ وزیر اعظم نریندر مودی کی رہنمائی میں گجرات مکمل ترقی کے راستے پر آگے بڑھتے ہوئے نئے باب کی طرف گامزن ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ پانچ سالوں میں مجھے تعاون دینے کا موقع ملا۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: