உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اجمیر میں خواجہ معین الدین چشتی کا سالانہ عرس آج قل کی رسم کے ساتھ اختتام پذیر

    فوٹو نیوز 18

    فوٹو نیوز 18

    رجب کے مہینے کی چھ تاریخ کے موقع پر جمعرات کو آستانہ شریف کو گلاب، کیوڑے کے پانی سے دھویا گیا۔ اسی کے ساتھ عرس کی پہلی تاریخ کو کھولا گیا جنتی دروازہ بھی بند کردیا گیا ہے

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

       راجستھان کے اجمیر میں جاری خواجہ معین الدین چشتی (رح) کا 807 واں سالانہ عرس آج قل کی رسم کے ساتھ ہی اختتام پذیر ہوگیا۔ رجب کے مہینے کی چھ تاریخ کے موقع پر جمعرات کو آستانہ شریف کو گلاب، کیوڑے کے پانی سے دھویا گیا۔ اسی کے ساتھ عرس کی پہلی تاریخ کو کھولا گیا جنتی دروازہ بھی بند کردیا گیا ہے۔ حالانکہ عرس کے موقع پر کل پندرہ مارچ کو جمعہ کی نماز اور 17 مارچ کو بڑے قل کی رسم ہونا باقی ہے۔


      اس موقع پر صبح درگاہ کے احاطہ نور میں چھٹی کی فاتحہ پڑھی گئی اور خدام خواجہ (خادموں) کی جانب سے آستانہ شریف میں چادر پیش کر کے ملک میں امن وسکون، خوشحالی اور قومی اتحاد اور بھائی چارے کی دعا کی گئی۔ صبح گیارہ بجے درگاہ دیوان زین العابدین کی صدارت میں درگاہ میں واقع محفل خانے میں قل کی محفل منعقد کی گئی اور قرآن خوانی کی رسم اد ا کی گئی۔


      اس دوران آستانہ شریف میں کسی بھی زائرین کو داخل نہیں ہونے دیا گیا اور خدام خواجہ نے ہی آستانہ شریف میں قل کے ساتھ دعا مانگی۔ تقریبا سوا بجے دیوان زین العابدین جنتی دروازہ سے داخل ہوکر آستانہ شریف پہنچے۔ اس کے بعد عرس کے دوران کھلنے والے جنتی دروازہ کو بھی بند کر دیا گیا۔

      First published: