ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

عجیب و غریب: 80 سال کے اس بزرگ کے پیٹ میں ڈاکٹروں نے پایا کچھ ایسا کہ رہ گئے حیران، 30 سال سے بابا کرتے تھے ایسا

سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو کافی وائرل ہو رہی ہے۔ مہاراشٹر کے ستارا کی پھلٹن تحصیل کی گاؤں ادرکی خورد میں ایک چونکا دینے والا معاملہ سامنے آیا ہے

  • Share this:
عجیب و غریب: 80 سال کے اس بزرگ کے پیٹ میں ڈاکٹروں  نے پایا کچھ ایسا کہ رہ گئے حیران، 30 سال سے بابا کرتے تھے ایسا
سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو کافی وائرل ہو رہی ہے۔ مہاراشٹر کے ستارا کی پھلٹن تحصیل کی گاؤں ادرکی خورد میں ایک چونکا دینے والا معاملہ سامنے آیا ہے

کیا کوئی ایسا بھی شخص ہوسکتا ہے جو صرف پتھر کھا کر زندہ ہو؟ ایک یا دو سال کے لئے نہیں بلکہ 30 سال سے ایسا ہی ایک شخص مہاراشٹر میں موجودہے جس کی سوشل میڈیا پر ویڈیو کافی وائرل ہو رہی ہے۔ مہاراشٹر کے ستارا کی پھلٹن تحصیل کی گاؤں ادرکی خورد میں ایک چونکا دینے والا معاملہ سامنے آیا ہے۔ گزشتہ 30 برسوں سے یہاں رہنے والے ایک بزرگ کے تعلق سے دعوی کیا جاتا ہے کہ وہ ہر روز پتھر کھاتے ہیں۔ اس بزرگ کا نام دادا رام بھاؤ بوڈ کے بتایا جاتا ہے جن کی عمر 80 سال ہے اور یہ بابا روزانہ تقریبا ڈھائی سو گرام پتھر کھاجاتے ہیں۔


شاید آپ کو اس بات پر یقین نہ ہو لیکن یہ سچ ہے۔ وہ پورے ضلع میں اس لئے جانے جاتے ہیں کیونکہ وہ پچھلے 30 سالوں سے صرف پتھر کھا کر ہی زندہ ہیں۔ یہ معاملہ اس وقت سامنے آیا جب ان کے پیٹ میں درد ہونے کے بعد گذشتہ ہفتے اسپتال میں داخل کرایا گیا۔ سی ٹی اسکین کے بعد پتہ چلا کہ ان کے پیٹ میں پتھر وں کا انبار ہے۔ پتھر کھانے والے بزرگ کو گاؤں والے 'پتھر والے بابا' کے نام سے بھی پکارتے ہیں۔ اتنا ہی نہیں اسے ایک کرشمہ سمجھ کر دور دراز سے لوگ ان سے ملنے آتے ہیں۔




کس طرح پتھر کھانا کیا تھا شروع
رام بھاؤ ممبئی میں کام کرتا تھا۔ 1989 میں ممبئی میں کام چھوڑ دیا اور وہ ستارا آگیا۔ رام بھاؤ کا کہنا ہے کہ 1973 میں ان کے پیٹ میں درد شروع ہو گیا کئی دن تک علاج چلتا رہا لیکن ان کوتکلیف سے کوئی راحت نہیں ملی۔ اس وقت گاؤں میں ہی رہنے والی ایک بزرگ خاتون نے اسے پتھر کھانے کا ایک خاص طریقہ بتایا تھا جس کے بعد انہوں نے پتھر کھانا شروع کر دیا۔ پتھر کھانے سے انہیں آرام بھی مل گیا۔ درد تو کم ہوگیا ہے لیکن رام بھاؤ کو پتھر کھانے کی عادت پڑ گئی۔ اس بات کو اب تک30 سال کا عرصہ گزر گیا وہ ہر روز پتھر کے ٹکڑے کھا رہے ہیں۔



رام بھاؤکے اس دعوے پر ڈاکٹر بھی حیران ہیں۔ ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ یہ تقریبا ناممکن ہے کہ کوئی شخص ڈھائی سوگرام سے زیادہ پتھر کھا کر زندہ رہ سکے۔ رام بھاؤ کی حالت فی الحال بہتر بتائی جاتی ہے اور ڈاکٹر ان کے پتھر کھانے کے راز کو جاننے کی کوشش کر رہے ہیں۔
Published by: Sana Naeem
First published: Mar 18, 2021 03:38 PM IST