ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

راجستھان: اشوک گہلوت وزیراعلیٰ، سچن پائلٹ نے نائب وزیراعلیٰ کا لیا حلف، تقریب میں وسندھرا راجے بھی

راجستھان کے 22 ویں وزیر اعلی کے طور پر اشوک گہلوت نے حلف لے لیا ہے

  • Share this:
راجستھان: اشوک گہلوت وزیراعلیٰ، سچن پائلٹ نے نائب وزیراعلیٰ کا لیا حلف، تقریب میں وسندھرا راجے بھی
سچن اس دوران اپنے والد آنجہانی راجیش پائلٹ کے انداز میں سر میں لال پگڑی باندھے ہوئے نظر آئے

راجستھان کے 22 ویں وزیر اعلی کے طور پر اشوک گہلوت نے حلف لے لیا ہے۔ گورنر کلیان سنگھ نے انہیں عہدہ اور رازداری کا حلف دلایا۔ اسی کے ساتھ وہ ریاست کے تیسری بار وزیر اعلی بنے ہیں۔ ان کے ساتھ سچن پائلٹ نے بھی حلف لیا۔ انہیں راجستھان کا نائب وزیر اعلی مقرر کیا گیا ہے۔


سچن اس دوران اپنے والد آنجہانی راجیش پائلٹ کے انداز میں سر میں لال پگڑی باندھے ہوئے نظر آئے۔ سابق وزیر اعلی وسندھرا راجے بھی حلف برداری تقریب میں موجود رہیں۔ تقریب میں کانگریس صدر راہل گاندھی کے ساتھ منموہن سنگھ، ملک ارجن کھڑگے، جیوتی رادتیہ سندھیا، نوجوت سنگھ سدھو، جتن پرساد سمیت یو پی اے کے کئی قدآور لیڈران موجود رہے۔ جے پور کے تاریخی البرٹ ہال میں حلف برداری کی تقریب منعقد ہوئی۔


حلف برداری کے دوران اشوک گہلوت اور سچن پائلٹ کے لئے کارکنوں میں جوش نظر آیا۔ دونوں لیڈر جب حلف لے رہے تھے تو حامیوں میں بھاری جوش دیکھنے کو ملا۔ وہیں اپوزیشن اتحاد کے مظاہرہ کے طور پر کرناٹک کے وزیر اعلی ایچ ڈی كمارسوامی، ٹی ڈی پی لیڈر چندرا بابو نائیڈو، این سی پی صدر شرد پوار، پرفل پٹیل، شرد یادو، نیشنل کانفرنس کے فاروق عبداللہ، آر جے ڈی لیڈر تیجسوی یادو، جھارکھنڈ مکتی مورچہ کے ہیمنت سورین، جیتن رام مانجھی اور ڈی ایم کے صدر ایم کے اسٹالن منچ پر موجود رہے۔


حالانکہ مدھیہ پردیش میں کانگریس کو حمایت دینے والی بی ایس پی سپریمو مایاوتی اور ایس پی صدر اکھلیش یادو یہاں شامل نہیں ہوئے۔





ریاست میں تیسری بار وزیر اعلیٰ بننے والے اشوک گہلوت چوتھے لیڈر ہیں۔ گہلوت سے پہلے بھیروں سنگھ شیخاوت اور ہری دیو جوشی ہی تین۔ تین بار وزیراعلیٰ بنے۔ حالانکہ، موہن لال سکھاڑیا سب سے زیادہ چار بار اس عہدہ پر رہے۔ ریاست کے نئے وزیراعلیٰ کے طور پر کام کاج سنبھالنے جا رہے گہلوت 1998 میں یہاں پہلی بار وزیر اعلیٰ بنے تھے۔
First published: Dec 17, 2018 11:40 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading