உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    شرمناک! دو دنوں تک ماں کی لاش کے پاس روتا اور بلکتا رہا بچہ ، مگر اس خوف سے کسی نے نہیں لیا گود

    شرمناک! دو دنوں تک ماں کی لاش کے پاس روتا اور بلکتا رہا بچہ ، مگر اس خوف سے کسی نے نہیں لیا گود

    شرمناک! دو دنوں تک ماں کی لاش کے پاس روتا اور بلکتا رہا بچہ ، مگر اس خوف سے کسی نے نہیں لیا گود

    پمپری چنچواڑ کے دیگھی علاقہ میں یہ معاملہ سامنے آیا ۔ مرنے والی خاتون کا نام سرسوتی راجیش کمار ہے ۔ یہ اترپردیش کی رہنے والی ہے ۔ سرسوتی کا شوہر گاؤں گیا ہوا تھا ۔ سرسوتی اور اس کا ڈیڑھ سال کا بچہ گھر میں تنہا رہتے تھے ۔ اسی دوران سرسوتی کی موت ہوگئی ۔

    • Share this:
    پونے : پونے سے متصل پمپری چنچواڑ میں ایک ڈیڑھ سال کا بچہ اپنی ماں کی موت سے بے خبر اس کے مردہ جسم کے پاس بیٹھا ہوا بھوک سے روتا بلکتا اور چیختا چلاتا رہا ، لیکن کوئی اس کے قریب نہیں گیا اور بچہ پر کسی کو رحم نہیں آیا ۔ اس واقعہ سے یہ بھی ظاہر ہوتا ہے کہ کس طرح لوگوں کے دلوں میں کورونا کے خوف نے گھر کرلیا ہے ۔

    پمپری چنچواڑ کے دیگھی علاقہ میں یہ معاملہ سامنے آیا ۔ مرنے والی خاتون کا نام سرسوتی راجیش کمار ہے ۔ یہ اترپردیش کی رہنے والی ہے ۔ سرسوتی کا شوہر گاؤں گیا ہوا تھا ۔ سرسوتی اور اس کا ڈیڑھ سال کا بچہ گھر میں تنہا رہتے تھے ۔ اسی دوران سرسوتی کی موت ہوگئی ۔

    ڈیڑھ سال کا بچہ کبھی ماں کے مردہ جسم سے کھیلتا ، کبھی روتا بلکتا ، کبھی بھوک اور پیاس سے چلاتا رہا ۔ دو دن تک بچہ اسی طرح بیٹھا رہا ۔ آس پاس کے لوگوں کو معلوم ہوا کہ بچہ اپنی ماں کی لاش کے پاس بیٹھا ہے ، لیکن کوئی بھی بچے کو اپنی گود میں اٹھانے کیلئے نہیں آیا ۔ جب پولیس کو اس کے بارے میں معلوم ہوا تو وہ جائے واقعہ پر پہنچی اور یہ منظر دیکھ کر حیرت زدہ رہ گئی ۔

    وہاں موجود خاتون پولیس اہلکار نے بچے کو گود میں اٹھا لیا اور لاش کو اسپتال بھیج دیا ۔ بچہ بھوک سے رو رہا تھا ، اس لئے سب سے پہلے اسے اس کی ضرورت کے مطابق کھانا کھلایا گیا اور پھر بچہ کوچائلڈ رن ہوم بھیج دیا گیا۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: