உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    راجستھان کے Bharatpur میں 2 برادریوں میں تصادم، جم کر ہوئی پتھربازی اور گاڑیوں میں توڑ پھوڑ

    violence in ط: بتا دیں کہ پتھراؤ میں 2 لوگ زخمی ہوئے ہیں۔ انتظامیہ نے علاقے کو چھاؤنی میں تبدیل کر دیا ہے۔ پولیس کی بھاری نفری موقع پر تعینات ہے۔ تلاشی کے دوران بوتلیں اور پتھر برآمد ہوئے ہیں۔

    violence in ط: بتا دیں کہ پتھراؤ میں 2 لوگ زخمی ہوئے ہیں۔ انتظامیہ نے علاقے کو چھاؤنی میں تبدیل کر دیا ہے۔ پولیس کی بھاری نفری موقع پر تعینات ہے۔ تلاشی کے دوران بوتلیں اور پتھر برآمد ہوئے ہیں۔

    violence in ط: بتا دیں کہ پتھراؤ میں 2 لوگ زخمی ہوئے ہیں۔ انتظامیہ نے علاقے کو چھاؤنی میں تبدیل کر دیا ہے۔ پولیس کی بھاری نفری موقع پر تعینات ہے۔ تلاشی کے دوران بوتلیں اور پتھر برآمد ہوئے ہیں۔

    • Share this:
      Clash In Bharatpur: (دیویندر سنگھ) راجستھان  (Rajasthan) کے بھرت پور  (Bharatpur) میں مقدمے میں بری ہونے کا جشن منانے کے لیے دو برادریوں میں تصادم ہوا۔ جس کے بعد تقریباً آدھے گھنٹے تک زبردست پتھراؤ ہوتا رہا۔ شرپسندوں نے گاڑیوں کی توڑ پھوڑ بھی کی۔ رات گئے پولیس نے پورے علاقے کو سیل کر دیا۔

      متھرا گیٹ علاقے میں جھڑپیں ہوئیں
      بتا دیں کہ پتھراؤ میں 2 لوگ زخمی ہوئے ہیں۔ انتظامیہ نے علاقے کو چھاؤنی میں تبدیل کر دیا ہے۔ پولیس کی بھاری نفری موقع پر تعینات ہے۔ تلاشی کے دوران بوتلیں اور پتھر برآمد ہوئے ہیں۔ یہ واقعہ متھرا گیٹ  (Mathura Gate)   تھانہ علاقہ کے بدھ کی ہاٹ میں پیش آیا۔ اس سے قبل سال 2013 میں بھی لڑائی ہوئی تھی۔

      انٹیلیجنس آفس پرGrenade Attackکےبعد ریاست میں ہائی الرٹ، پولیس کو دہشت گردانہ حملے کی سازش



      یہ بھی پڑھئے: دہرادون۔ہریدوار سمیت 6ریلوےاسٹیشنوں کو بم سے اڑانے کی دھمکی، رڑکی کے اسٹیشن ماسٹر کو ملاخط

      جھگڑا 8 سال پرانے تنازعہ کو لیکر ہوا۔

      بتایا جا رہا ہے کہ یہ جھگڑا 8 سال پرانے تنازعہ کو لیکر ہوا۔ الزام ہے کہ 8 سال قبل اس علاقے میں واقع گردوارہ میں سکھ برادری کے لوگ بھنڈارا کر رہے تھے، جب مسلم سماج کے کچھ لوگوں نے پتھراؤ کیا۔ اس معاملے میں پولیس نے کئی مسلمانوں کو جیل بھیجا تھا۔ معلومات کے مطابق جب یہ لوگ جیل سے باہر آئے تو پارٹی منا رہے تھے۔ الزام ہے کہ پارٹی منانے کے بعد ان لوگوں نے سکھ برادری کے گھروں پر پتھراؤ کردیا۔ اس کے بعد دونوں فریق لاٹھیوں اور تلواروں سے آمنے سامنے آگئے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: