உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    3مئی تک بند کریں مساجد کے Loudspeaker، ورنہ ہم بجائیں گے ہنومان چالیسہ، راج ٹھاکرے کا مہاراشٹر حکومت کو انتباہ

    راج ٹھاکرے Raj Thackeray نے دھمکی دی کہ اگر شیوسینا کی زیرقیادت ریاستی حکومت نے 3 مئی سے پہلے مساجد Mosque سے لاؤڈ اسپیکر   Loudspeaker نہیں ہٹائے تو MNS کارکنان مساجد کے سامنے ہنومان چالیسہ بجائیں گے۔

    راج ٹھاکرے Raj Thackeray نے دھمکی دی کہ اگر شیوسینا کی زیرقیادت ریاستی حکومت نے 3 مئی سے پہلے مساجد Mosque سے لاؤڈ اسپیکر Loudspeaker نہیں ہٹائے تو MNS کارکنان مساجد کے سامنے ہنومان چالیسہ بجائیں گے۔

    راج ٹھاکرے Raj Thackeray نے دھمکی دی کہ اگر شیوسینا کی زیرقیادت ریاستی حکومت نے 3 مئی سے پہلے مساجد Mosque سے لاؤڈ اسپیکر Loudspeaker نہیں ہٹائے تو MNS کارکنان مساجد کے سامنے ہنومان چالیسہ بجائیں گے۔

    • Share this:
      ممبئی۔ مہاراشٹر نونرمان سینا (ایم این ایس) کے سربراہ راج ٹھاکرے نے منگل کو یکساں سول کوڈ کی وکالت کی اور آبادی میں اضافے کو کنٹرول کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے یہاں ایک ریلی میں اپنے اس مطالبے کو بھی دہرایا کہ مساجد سے لاؤڈ اسپیکر ہٹائے جائیں۔ اس کے لیے انہوں نے مہاراشٹر حکومت کو خبردار کیا کہ وہ 3 مئی سے پہلے کارروائی کریں۔

      راج ٹھاکرے Raj Thackeray نے دھمکی دی کہ اگر شیوسینا کی زیرقیادت ریاستی حکومت نے 3 مئی سے پہلے مساجد Mosque سے لاؤڈ اسپیکر   Loudspeaker نہیں ہٹائے تو MNS کارکنان مساجد کے سامنے ہنومان چالیسہ بجائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ یہ کوئی مذہبی مسئلہ نہیں بلکہ سماجی مسئلہ ہے کیونکہ لاؤڈ اسپیکر ہر کسی کو پریشانی کا باعث بنتے ہیں۔ ٹھاکرے نے کہا، 'وزیر اعظم نریندر مودی کو اس ملک میں یکساں سول کوڈ نافذ کرنا چاہیے۔' انھوں نے کہا کہ آبادی میں اضافے کو روکنے کے لیے قانون لایا جانا چاہیے۔


      یہ بھی پڑھیں: اذان کی مخالفت میں مسجد کے سامنے MNS کارکنوں نے پیڑ پر Loudspeaker لگاکر بجایا بجایا ہنومان چالیسہ، لگا جرمانہ


      ٹھاکرے نے اس تنقید کا جواب دیا کہ وہ 2019 کے لوک سبھا انتخابات سے پہلے وزیر اعظم نریندر مودی اور بی جے پی پر حملہ کرتے تھے لیکن انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی) کی نوٹس موصول ہونے کے بعد ان کے سر بدل گئے۔ انہوں نے کہا کہ ایسا بالکل نہیں ہے کہ ان کا سیاسی موقف تبدیل ہو تا رہا ہے۔ ایم این ایس سربراہ نے کہا کہ اگر بی جے پی حکومت نے کوئی غلط فیصلہ لیا تو وہ اس پر دوبارہ تنقید کرنے سے نہیں ہچکچائیں گے۔ انہوں نے نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (این سی پی) کے سربراہ شرد پوار پر ذات پات کی سیاست کرنے کا بھی الزام لگایا۔
      یہاں بھی پڑھیں: Ramazan 2022: رمضان المبارک میں سحری و افطار کے کھانے میں رکھیں ان چیزوں کا خاص خیال  

      اس معاملے پر شیوسینا لیڈر سنجے راوت اور نائب وزیر اعلیٰ اجیت پوار کا ردعمل بھی آچکا ہے۔ یہ معاملہ اس وقت گرمایا تھاجب راج ٹھاکرے نے مہاراشٹر حکومت سے کہا تھا کہ مساجد سے لاؤڈ اسپیکر ہٹا دیے جائیں۔ انہوں نے یہ بھی وارننگ دی تھی  کہ وہ مساجد کے سامنے لاؤڈ اسپیکر لگا کر ہنومان چالیسہ بجائیں گے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: