ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

بابری مسجد کی شہادت پر ممبئی میں یوم سیاہ، رضا اکیڈمی کا بابری مسجد کی برسی پر اذان دینے کی مسلمانوں سے اپیل

ممبئی شہر و مضافات میں چھ دسمبر کے پیش نظر پولس نے ریڈ الرٹ جاری کیا ہے دوسری طرف مسلم تنظیموں نے یہاں بابری مسجد کی شہادت کی برسی پر یوم سیاہ اور اذان دینے کا فیصلہ کیا ہے۔

  • Share this:
بابری مسجد کی شہادت پر ممبئی میں یوم سیاہ، رضا اکیڈمی کا بابری مسجد کی برسی پر اذان دینے کی مسلمانوں سے اپیل
بابری مسجد کی شہادت پر ممبئی میں یوم سیاہ

ممبئی شہر و مضافات میں چھ دسمبر کے پیش نظر پولس نے ریڈ الرٹ جاری کیا ہے دوسری طرف مسلم تنظیموں نے یہاں بابری مسجد کی شہادت کی برسی پر یوم سیاہ اور اذان دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ بابری مسجد کی شہادت 6 دسمبر 1992کو باقاعدہ طور پر یوم شہادت منایا جائے بابری مسجد کی ملکیت پر رام مندر کی تعمیر اور سنگ بنیاد کے بعد بھی رضااکیڈمی نے یہ واضح کیا ہے کہ وہ بابری مسجد کے قضیہ کے بعد بھی وہاں تاقیامت تک مسجد ہی مانتے ہیں کیونکہ عرش سے لے کر فرش تک یہ جگہ مسجد ہی رہے گی اس کا کوئی بدل نہیں ہے۔ اس لئے مسلمانوں کا عقیدہ او ر ایمان ہے کہ جس جگہ پر مسجد قائم ہو وہ تاقیامت تک مسجد ہی رہےگی۔ اس لئے برسہا برس سے یوم شہادت پر رضا اکیڈمی مسجد کی بازیافت اور اس کی آزادی کے لئے دعا کرتی ہے یہ سلسلہ آئندہ بھی جاری ہے گا ۔ رضا اکیڈمی کے روح رواں الحاج سعید نوری نے کہا کہ بابری مسجد کی یوم شہادت پر باقاعدگی سے بطور احتجاج یوم سیاہ منایا جاتا ہے۔ یہ ملک کی تاریخ پر بدنما داغ ہے کہ ایک مسجد کو دن دہاڑے کارسیوکوں اورغنڈوں نے شہید کر دیا اور فیصلہ بھی خلاف توقع ہی آیا ہے۔ اس لئے مسلمان یہ مانتا ہے کہ آج بھی یہاں بابری مسجد ہی ہے اور یہ ملکیت تاقیامت بابری مسجد ہی رہے گی اس لئے مسجد کی بازیابی کے لئے چھ دسمبر کو دعا اور اذانیں دی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ کھتری مسجد ۔ مینارہ مسجد ۔ نواب ایاز مسجد سمیت ممبئی ہی نہیں ملک میں سہ پہر 3:45 منٹ کو باقاعدہ طور پر اذان دی جائے گی اور یوم سیاہ بھی منایا جائے گاانہوں نے کہا کہ یہ سلسلہ جب تک جاری رہے گا جب تک بابری مسجد کی بازیافت نہیں ہو جاتی کیونکہ مسلمان کے لئے آج بھی اس جگہ مسجد ہی ہے ایسی صورتحال میں مسلمان یوم سیاہ کے طور پر چھ دسمبر مناتے ہیں اور اذان کا بھی انقعادکرتے ہیں۔ کیونکہ غنڈوں نے چھ دسمبر کو سہ پہر گنبدوں پر چڑ ھ کر ایک قدیم اورتاریخی مسجد کو شہید کر دیاتھا یہ کھلی دہشت گردی تھی جسےملک نے دیکھاتھا بابری مسجد کی جگہ رام مندر کی تعمیر کے فیصلہ کے بعد بھی ملک میں مسلم تنظیموں نے یوم سیاہ اورتین بجکر 45 منٹ پر اذان دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد یہ پہلی بابری مسجد کی برسی ہے جسے مسلمانوں نے یوم سیاہ کےطور پر منانے کا فیصلہ کیا ہےبابری مسجدکی برسی اورڈاکٹر باباصاحب امبیڈکر کی یوم وفات پورنتیتیہ ممبئی شہر میں الرٹ جاری کیا گیا ہے۔ شہر میں حکم امنتاعی کا نفاذ ہے ۔


شہر میں پیر ا گلائڈر ائیر کرافٹ سمیت آتش بازی پابندی

ممبئی ممبئی شہر میں ڈرون۔ پیراگلائڈر سمیت آتش بازی پر مکمل طور پر پابندی عائد کر دی گئی ہے ممبئی پولس نےحکم امتناعی میں توسیع کر دی ہے۔ اس کے علاوہ شہر میں کورونا وائرس کے پھیلاؤکے روک تھام کے لئے 188 کا اطلاق کیا گیا ہے۔ ممبئی شہر میں 29 دسمبر تک حکم امتناعی میں توسیع کر دی گئی ہے امسال سال نو کا جشن بھی کورونا وائرس کی نذر ہو گا کیونکہ حکم ثانی تک یہ حکم نامہ جاری رہےگا ۔ ممبئی شہر میں چار سے زائد افرادکے مجمع پر پابندی عائد کی گئی ہے شہر میں ایک مرتبہ پھر حکم امتناعی میں توسیع کر دی گئی ہے اس ائیر کرافٹ اور میزائل اور دیگر پیراگلائڈر پر بھی پابندی عائد کر د ی گئی ہے ۔

ممبئی میں پولس کمشنر پرم بیر سنگھ کی ہدایت پر ایڈیشنل پولس کمشنر ایس بی ون سنیل کو لہے چھ دسمبر کے پیش نظر سخت نگرانی رکھ رہے ہیں۔ سوشل میڈیا پر اشتعال انگیزی اور افواہوں پر بھی توجہ دی جارہی ہے۔ ممبئی پولس نے مسلمانوں سے اپیل کی ہےکہ وہ سوشل میڈیا پر اشتعال انگیزی اور متنازع مشمولات کی شکایت پولس سے کریں کیونکہ سماج دشمن عناصر شہر میں بدامنی پیدا کرنے کی سازش کر رہے ہیں۔ ایسی صورت میں ہمیں ان سے محتاط رہنے کی ضرورت ہے ایڈیشنل کمشنر ایس بی ون سنیل کولہے نے اپیل کی ہے کہ چھ دسمبر پر اشتعال انگیزی یا متنازع پیغامات کو عام نہ کیا جائے اگر کوئی ایسا کرتا ہے تو اس کے خلاف کارروائی ہو گی۔

انہوں نے کہا کہ شہر کے حالات کو خراب کرنے کے لئے شرپسند عناصر مذہبی منافرت پھیلانے کی کوشش کر سکتے ہیں جس سے بدامنی پھیل سکتی ہے اس لئے ہمیں ایک اچھے شہری کی طرح سوشل میڈیا پر زہر افشانی پھیلانے والوں کے دام میں آنے کے بجائے اس کی شکایت پولس میں کرنی چاہئے۔ انہوں نے مزید کہا کہ چونکہ چھ دسمبر کو بابا صاحب امبیڈکر کی یوم وفات اور بابری مسجد کی شہادت کی برسی منائی جاتی ہے ایسی صورت میں شرپسند عناصر شہر کا ماحول خراب کرنے کے درپے ہیں اس سے ہمیں الرٹ رہنا چاہئے اس کے پیش نظر شہر اورریاست بھر میں الرٹ جاری کیا گیا ہے۔
Published by: sana Naeem
First published: Dec 03, 2020 05:54 PM IST