உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بیوی مائیکہ جانے کیلئے کر رہی تھی ضد ، شوہر نے اٹھایا ایسا خطرناک قدم ، سبھی کے اڑ گئے ہوش

    بیوی مائیکہ جانے کیلئے کر رہی تھی ضد ، شوہر نے اٹھایا ایسا خطرناک قدم ، سبھی کے اڑ گئے ہوش

    بیوی مائیکہ جانے کیلئے کر رہی تھی ضد ، شوہر نے اٹھایا ایسا خطرناک قدم ، سبھی کے اڑ گئے ہوش

    Husband Murdered Wife : الزام ہے کہ شوہر نے اپنی بیوی کا قتل اس لئے کردیا کیونکہ وہ مائیکے جانے کی ضد کر رہی تھی ۔ یہ معاملہ دبلانا تھانہ حلقہ کے دراکانیا گاوں میں پیش آیا ہے ۔

    • Share this:
      راجستھان کے بوندی ضلع میں ایک شخص کو اس کی ہی بیوی کے قتل کے الزام میں گرفتار کیا گیا ہے ۔ الزام ہے کہ شوہر نے اپنی بیوی کا قتل اس لئے کردیا کیونکہ وہ مائیکے جانے کی ضد کر رہی تھی ۔ یہ معاملہ دبلانا تھانہ حلقہ کے دراکانیا گاوں میں پیش آیا ہے ۔ بتایا جارہا ہے کہ شوہر نے مائیکے جانے کی ضد کرنے پر لکڑی سے پیٹ پیٹ کر بیوی کا قتل کردیا ۔ اس واقعہ کے سلسلہ میں اطلاع ملنے کے بعد جائے واقعہ پر پہنچی دبلانا تھانہ پولیس کے ذریعہ جائے واردات کا معائنہ کرکے لاش کا پوسٹ مارٹم کروایا گیا ۔

      پولیس نے پی ایم کے بعد لاش کو مائیکے والوں کے حوالے کردیا ہے ۔ اس دوران پولیس نے مقتولہ کے اہل خانہ کی رپورٹ پر ملزم شوہر نند کشور کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کرکے اس کو گرفتار کرلیا ہے ۔ واردات کے سلسلہ میں پولیس اے ایس آئی اور اہل خانہ سے ملی جانکاری کے مطابق ڈابی کے دیوریا کا رہنے والا نند کشور اپنی بیوی پارا بائی کے ساتھ دراکانیا گاوں میں رہ کر ایک گرجر کے یہاں کام کررہا تھا ۔ اسی دوران واردات کو انجام دیا گیا ۔

      پولیس نے مقتولہ کے اہل خانہ کی رپورٹ پر ملزم شوہر نند کشور کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کرکے اس کو گرفتار کرلیا ہے ۔
      پولیس نے مقتولہ کے اہل خانہ کی رپورٹ پر ملزم شوہر نند کشور کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کرکے اس کو گرفتار کرلیا ہے ۔


      پولیس سے ملی جانکاری کے مطابق بیوی کے بار بار مائیکے جانے کی ضد کئے جانے سے دونوں کے درمیان کہا سنی ہوگئی اور اس کے بعد ملزم شوہر نے لکڑی سے پیٹ پیٹ بیوی کا قتل کردیا ۔ اس معاملہ میں ملزم شوہر کو گرفتار کرکے معاملہ کی جانچ کی جارہی ہے ۔ اس معاملہ میں مقتولہ کے مائیکے اور سسرال دونوں فریقوں سے پوچھ گچھ کی جارہی ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: