ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

جے این یو تشدد کو لےکر اب احمدآباد میں ہنگامہ، این ایس یو آئی اور اے بی وی پی میں چلے لاٹھی -پتھر

جے این یو میں ہوئے تشدد کے خلاف احمدآباد میں کانگریس کی طلبہ تنظیم این ایس یوآئی کےاراکین اے بی وی پی کے دفترکے پاس مظاہرہ کر رہےتھے۔ اسی دوران اے بی وی پی اوراین ایس یوآئی کےطلباء آپس میں بھڑگئے، یہاں لاٹھی اورپتھر بھی چلے۔

  • Share this:
جے این یو تشدد کو لےکر اب احمدآباد میں ہنگامہ، این ایس یو آئی اور اے بی وی پی میں چلے لاٹھی -پتھر
این ایس یو آئی اور اے بی وی پی میں چلے لاٹھی -پتھر

احمدآباد: دارالحکومت دہلی واقع ملک کی مشہوریونیورسٹی جواہرلال نہرو یونیورسٹی (جے این یو) میں ہوئےتشدد کے بعد اب گجرات میں جھڑپ کی خبرہے۔ یہاں احمدآباد میں کانگریس کی طلبہ تنظیم این ایس یوآئی کےاراکین جےاین یوتشدد کے خلاف بی جے پی کی طلبہ تنظیم اے بی وی پی کے دفترکے پاس مظاہرہ کررہے تھے۔ اسی دوران اے بی وی پی اوراین ایس یوآئی کےطلباء آپس میں بھڑگئے اورجم کرمارپیٹ ہوئی۔


احمد آباد میں اے بی وی پی دفترکےپاس دونوں گروپوں کےدرمیان پتھراورلاٹھی چلنی شروع ہوگئی۔ اس جھڑپ میں کچھ لوگ زخمی بھی ہوئے ہیں۔ موصولہ اطلاعات کےمطابق اے بی وی پی دفترکے باہرجے این یوتشدد کولےکراحتجاجی مظاہرہ ہورہا تھا۔ تبھی وہاں این ایس یو آئی اوراے بی وی پی کےکارکنان میں جم کرٹکراؤہوا۔ دونوں پارٹیوں کےکارکنان ایک دوسرے پرلاٹھیاں چلانےلگے۔ اس دوران پولیس کوتشدد کوقابوکرنےکےلئےمظاہرین پر لاٹھی چارج کرنا پڑا۔




واضح رہےکہ جےاین یو میں تشدد اورپولیس کی ناکامی کولےکرکئی جگہ طلباء تنظیمیں احتجاجی مظاہرہ کررہی ہیں۔ جےاین یو طلبہ یونین کی صدرآئیشی گھوش سمیت کئی طلباء پر حملہ کرنے والے نقاب پوش ابھی بھی پولیس کی گرفت سے دورہیں۔ وہیں پولیس نےآئیشی گھوش سمیت زخمی ہوئے19 طلباء کے خلاف ایف آئی آردرج کی ہے۔ ان پرتوڑپھوڑاورمار پیٹ کےالزام عائد کئےگئےہیں۔ اسے لےکرکئی اہم ہستیوں اورشخصیات نےناراضگی کا اظہارکیا ہے۔
First published: Jan 07, 2020 04:34 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading