ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

مالیگاؤں بم دھماکہ کیس : کلیدی ملزمہ سادھوی پرگیہ کی قسمت کا فیصلہ 28 جون کو

ممبئی : مالیگاؤں 2008 بم دھماکہ کی کلیدہ ملزمہ سادھو پرگیاسنگھ کی قسمت کا فیصلہ خصوصی مکوکا عدالت 28جون کو کریگی نیز سادھوی کی ضمانت کی حمایت کرنے والی عرضداشت کو آج عدالت نے مسترد کردیا ۔

  • UNI
  • Last Updated: Jun 20, 2016 10:11 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
مالیگاؤں بم دھماکہ کیس : کلیدی ملزمہ سادھوی پرگیہ کی قسمت کا فیصلہ 28 جون کو
ممبئی : مالیگاؤں 2008 بم دھماکہ کی کلیدہ ملزمہ سادھو پرگیاسنگھ کی قسمت کا فیصلہ خصوصی مکوکا عدالت 28جون کو کریگی نیز سادھوی کی ضمانت کی حمایت کرنے والی عرضداشت کو آج عدالت نے مسترد کردیا ۔

ممبئی : مالیگاؤں 2008 بم دھماکہ کی کلیدہ ملزمہ سادھو پرگیاسنگھ کی قسمت کا فیصلہ خصوصی مکوکا عدالت 28جون کو کریگی نیز سادھوی کی ضمانت کی حمایت کرنے والی عرضداشت کو آج عدالت نے مسترد کردیا ۔

موصولہ اطلاعات کے مطابق آج سادھوی کی ضمانت عرضداشت پرایک بار پھر جمعیۃ علماء مہاراشٹر(ارشدمدنی) کے وکلاء اور سادھوی کے وکلاء نے بحث کی جس کے بعد خصوصی جج ایس ڈی ٹیکولے نے ضمانت عرضداشت پر فیصلہ صادر کرنے کے لیئے28 تاریخ مقرر کرتے ہوئے معاملے کی سماعت ملتوی کردی۔

مالیگاؤں کے بھکو چوک نامی علاقے میں2008میں ہوئے بم دھماکہ معاملے جس میں8 مسلم نوجوان شہید اور سیکڑوں زخمی ہوئے تھے کی کلیدہ ملزمہ سادھوی پرگیان سنگھ ٹھاکر کو ضمانت پر رہا کیئے جانے کی وکالت کرتے ہوئے ایڈوکیٹ مشراء اور ایڈوکیٹ مگو نے عدالت کو بتایا کہ اس معاملے میں مداخلت کار نے جو بھی اعتراضات اٹھائے ہیں اس کی قانوناً کوئی حیثیت نہیں ہے کیونکہ قومی تفتیشی ایجنسی NIAنے اس معاملے میں پہلے ہی سادھو ی سمیت دیگر ملزمین کو کلین چٹ دیئے جانے کا اعلان کیا ہے ۔

بھگواء ملزمہ کی ضمانت پر بحث کرتے ہوئے اس کے وکلاء نے عدالت کو مزید بتایا کہ اس معاملے میں عدالت کو سادھوی کے ساتھ انصاف کرنا چاہئے کیونکہ وہ بے قصور ہے اور اسے اس معاملے میں اے ٹی ایس نے بلا وجہ پھنسا کر رکھا ہے ۔

بھگواء ملزمہ کے وکلاء کی بحث کا جواب دیتے ہوئے جمعیۃ علماء کی جانب سے ایڈوکیٹ عبدالوہاب خان نے عدالت کو بتایا کہ عدالت کے سامنے دونوں تفتیشی ایجنسیوں کے ثبوت وشواہد موجود ہیں اور عدالت کو فیصلہ کرنا ہیکہ کس تفتیشی ایجنسی پر یقین کیا جائے لیکن عدالت کو فیصلہ صادر کرتے وقت اس بات کا خصوصی خیال رکھنا ہوگا ان بم دھماکوں میں8 بیت قصور مسلم نوجوان شہید اور سیکڑوں زخمی ہوئے تھے ۔

ایڈوکیٹ عبدالوہاب خان نے عدالت کو مزید بتایا کہ اس معاملے میں سپریم کورٹ تک نے ملزمہ کی ضمانت عرضداشت خارج کی ہے کیونکہ عدالت عظمی نے اس بات کو تسلیم کیا تھا کہ ملزمہ نے بم دھماکوں کی سازش میں حصہ لیا تھا او ر اسی کی موٹر سائیکل پر بم نصب کیا گیا تھا ۔ اسی درمیان سادھوی پرگیاسنگھ ٹھاکر کو ضمانت پر رہا کئے جانے کی مانگ کرنے والے ایک مداخلت کار کی عرضداشت کو آج عدالت نے مسترد کردیا ۔
جمعیۃ علماء مہاراشٹر قانونی امداد کمیٹی کے سربراہ گلزار اعظمی نے کہا کہ بھگواء ملزمین کی ضمانت عرضداشت کی مخالفت کرنے میں دفاعی وکلاء نے کوئی کثر نہیں چھوڑی ہے اور انہیں امید ہے کہ خصوصی عدالت ان کے دلائل کو مد نظر رکھتے ہوئے کوئی فیصلہ صادر کریگی ۔
First published: Jun 20, 2016 10:11 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading