உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ماہ کے دوران 29 افراد نے نابالغ کا مختلف مقامات پر کیا ریپ، عاشق نے کھیلا خوفناک کھیل

    اب تک 23 ملزمین کو گرفتار کیا جا چکا ہے۔ اس بارے میں تازہ ترین معلومات سامنے آرہی ہیں کہ متاثرہ لڑکی کو 9 ماہ قبل ایک نابالغ عاشق نے زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔

    اب تک 23 ملزمین کو گرفتار کیا جا چکا ہے۔ اس بارے میں تازہ ترین معلومات سامنے آرہی ہیں کہ متاثرہ لڑکی کو 9 ماہ قبل ایک نابالغ عاشق نے زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔

    اب تک 23 ملزمین کو گرفتار کیا جا چکا ہے۔ اس بارے میں تازہ ترین معلومات سامنے آرہی ہیں کہ متاثرہ لڑکی کو 9 ماہ قبل ایک نابالغ عاشق نے زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
    مہاراشٹر کے ڈومبیولی میں ایک دل دہلا دینے والا واقعہ سامنے آیا ہے۔ یہاں 29 افراد پر 15 سالہ لڑکی سے اجتماعی آبروریزی کا الزام لگایا گیا ہے۔ متاثرہ کے اہل خانہ کی شکایت پر مان پاڑہ پولیس اسٹیشن میں عصمت دری اغوا اور پوکسو ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ اب تک 23 ملزمین کو گرفتار کیا جا چکا ہے۔ اس بارے میں تازہ ترین معلومات سامنے آرہی ہیں کہ متاثرہ لڑکی کو 9 ماہ قبل ایک نابالغ عاشق نے زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔ اس دوران ملزم نے عصمت دری کی ویڈیو بھی بنائی تھی۔

    اس ویڈیو کی بنیاد پر دوسرے ملزمین نے متاثرہ کو بلیک میل کیا اور اس کی عزت سے کھلواڑ کیا۔ واقعے کی تحقیقات کے لئےایک خصوصی پولیس ٹیم تشکیل دی گئی ہے اور دیگر ملزمین کی تلاش جاری ہے۔ پولیس کے مطابق یہ واقعہ ڈومبیولی کے بھوپر علاقے میں پیش آیا۔ نابالغ کو 29 لوگوں نے مختلف اوقات اور مختلف مقامات پر لے جا کر اجتماعی عصمت دری کی۔ لڑکی کو جنوری 2021 سے 22 ستمبر 2021 تک زیادتی کا نشانہ بنایا گیا۔ اس سے تنگ آکر متاثرہ نے کل رات مان پاڑہ پولیس اسٹیشن میں شکایت درج کروائی۔ پولیس نے اس معاملے میں ملزمین کو ڈومبیولی ، بدلاپور ، ربالے اور مرباڈسے گرفتار کیا ہے۔گرفتار ملزمین میں سے کئی مختلف سیاسی جماعتوں سے بھی وابستہ ہیں۔

    ایڈیشنل کمشنر آف پولیس دتاترے کرلے نے بتایا کہ 21 افراد کو گرفتار کیا گیا ہے جبکہ دو دیگر زیر حراست نابالغ ہیں۔ پولیس باقی چھ ملزمین کی تلاش میں ہے۔ کلیدی ملزم متاثرہ کا دوست بتایا جاتا ہے جس نے پہلی بار جنوری میں لڑکی کا ریپ کیا اور اس کی ویڈیو بھی بنائی۔بعد میں دیگر ملزمین نے اسی ویڈیو کا استعمال کرتے ہوئے لڑکی کو بلیک میل کیا اور مختلف مقامات بشمول ڈومبولی ، بدلاپور ، ربالے اور مرباڈ گئے۔متاثرہ نے بدھ کی رات پولیس سے رجوع کیا جس کے بعد عصمت دری کا مقدمہ درج کیا گیا۔

    تمام ملزمین کے خلاف انڈین پینل کوڈ 376 (ریپ) ، 376 (n) ، 376 (3) ، 376 (d) (a) اور 4.6 اور 10 پروٹیکشن آف چلڈرن فار جنسی جرائم ایکٹ (POCSO) کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: