உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    نوٹوں کی منسوخی سے کالے دھن کی معیشت پر زیادہ اثر نہیں پڑے گا : ماہر اقتصادیات وجے شنکر ویاس

    ہندوستان میں نوٹوں کی منسوخی اور اس سے پیدا انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے موضوع پر منعقد لیکچر میں کہا کہ حکومت کے اس تغلقی فیصلے سے کالے دھن والی معیشت پر زیادہ اثر نہیں پڑےگا۔

    ہندوستان میں نوٹوں کی منسوخی اور اس سے پیدا انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے موضوع پر منعقد لیکچر میں کہا کہ حکومت کے اس تغلقی فیصلے سے کالے دھن والی معیشت پر زیادہ اثر نہیں پڑےگا۔

    ہندوستان میں نوٹوں کی منسوخی اور اس سے پیدا انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے موضوع پر منعقد لیکچر میں کہا کہ حکومت کے اس تغلقی فیصلے سے کالے دھن والی معیشت پر زیادہ اثر نہیں پڑےگا۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      جےپور: معروف ماہر اقتصادیات پروفیسر وجے شنکر ویاس نے کہا ہے کہ نوٹوں کی منسوخی سے کالے دھن کی معیشت پر کوئی زیادہ اثر نہیں پڑے گا۔ پروفیسر ویاس آج یہاں بین الاقوامی انسانی حقوق کے دن پر ہندوستان میں نوٹوں کی منسوخی اور اس سے پیدا انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے موضوع پر منعقد لیکچر میں کہا کہ حکومت کے اس تغلقی فیصلے سے کالے دھن والی معیشت پر زیادہ اثر نہیں پڑےگا۔
      انہوں نے اس سے عام آدمی،کسانوں،مزدوروں،طلبہ پر پڑنے والے اثرات کو بھی منفی بتایا۔ انہوں نے مشہور و مقبول ماہر اقتصادیات جے ایم کنس کی مثال دے کر بتایا کہ نوٹوں کی منسوخی کے ہندوستانی معاملے میں یہ کہنا کہ یہ فیصلہ معیشت کو طویل عرصے میں فائدہ دے گا ،کسی بھی نظریہ سے مناسب نہیں ہے۔نوٹوں کی منسوخی کا یہ فیصلہ سماج کے مختلف طبقوں کےمعمولات زندگی اور ذریعہ معاش کے حق کو شدید طورپر نقصان پہنچائے گا۔
      First published: