உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Maharashtra Politics: مہاراشٹر کی شندے حکومت نے اسمبلی میں ثابت کی اکثریت

    Youtube Video

    شیو سینا کے چیف وہپ بھرت گوگاولے ، جنہیں شندے گروپ نے مقرر کیا ہے، نے اسپیکر کے پاس ایک درخواست دائر کی ہے جس میں پارٹی وہپ کی خلاف ورزی کرنے پر ادھو گروپ کے 16 ایم ایل ایز کو معطل کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ اسپیکر راہل نارویکر کے دفتر نے کہا کہ گوگاولے کی عرضی کو قبول کر لیا گیا ہے اور جلد ہی ادھو گروپ کے 16 ایم ایل ایز کو 'معطلی کا نوٹس' جاری کیا جائے گا۔

    • Share this:
      مہاراشٹرا اسمبلی میں ایکناتھ شندے کی قیادت والی حکومت 144 کی اکثریت پر پہنچ گئی، گنتی ابھی جاری ہے۔ آپ کو بتاتے چلیں کہ 288 رکنی مہاراشٹر قانون ساز اسمبلی میں اکثریتی تعداد 145 ہے لیکن فی الحال میوان کے ارکان کی تعداد صرف 286 ہے۔


      ادھو گروپ کے ایک اور ایم ایل اے شیامندر شندے نے اعتماد کے ووٹ سے ٹھیک پہلے ایکناتھ شندے گروپ میں شمولیت اختیار کرلی۔ کل سے شیو سینا کے مزید 2 ایم ایل ایز نے شندے گروپ کا رخ کیا ہے۔ آدتیہ ٹھاکرے ابھی تک ایوان میں نہیں پہنچے ہیں۔


      مہاراشٹر قانون ساز اسمبلی ، بی جے پی کے سدھیر منگنٹیوار اور شیوسینا کے بھرت گوگاولے  نے اعتماد کے ووٹ کی حمایت کی۔ صوتی ووٹ کے بعد اعتماد کے ووٹ کی تحریک پر اپوزیشن نے ووٹ کی تقسیم کا مطالبہ کیا۔ اسپیکر نے اپوزیشن کا مطالبہ مان لیا اور ووٹوں کی تقسیم شروع کر دی، ارکان کو گنتی کے لیے کھڑے ہونے کو کہا۔

      شیو سینا کے چیف وہپ بھرت گوگاولے ، جنہیں شندے گروپ نے مقرر کیا ہے، نے اسپیکر کے پاس ایک درخواست دائر کی ہے جس میں پارٹی وہپ کی خلاف ورزی کرنے پر ادھو گروپ کے 16 ایم ایل ایز کو معطل کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ اسپیکر راہل نارویکر کے دفتر نے کہا کہ گوگاولے کی عرضی کو قبول کر لیا گیا ہے اور جلد ہی ادھو گروپ کے 16 ایم ایل ایز کو 'معطلی کا نوٹس' جاری کیا جائے گا۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: