உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Rajasthan Assembly Polls: راجستھان میں اسمبلی انتخابات، سماج وادی پارٹی بھی لڑے گی الیکشن، مقابلہ ہوگا سخت

    مدھیہ پردیش اور راجستھان میں اسمبلی انتخابات 2024 کے لوک سبھا انتخابات سے ٹھیک پہلے ہونے والے ہیں۔

    مدھیہ پردیش اور راجستھان میں اسمبلی انتخابات 2024 کے لوک سبھا انتخابات سے ٹھیک پہلے ہونے والے ہیں۔

    دلچسپ بات یہ ہے کہ اس بار راجستھان میں کمیونسٹ پارٹی کی مدد سے تیسرا محاذ بنایا جا رہا ہے جو غیر بی جے پی اور غیر کانگریس پارٹیوں پر مشتمل ہوگا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ راجستھان میں کمیونسٹ پارٹیوں کی قیادت میں اس تیسرے محاذ میں سماج وادی پارٹی اہم رول ادا کرے گی۔ Rajasthan Assembly Polls

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Rajasthan | Uttar Pradesh | Madhya Pradesh | Alwar | Mumbai
    • Share this:
      Rajasthan Assembly Polls: سماج وادی پارٹی (Samajwadi Party) اتر پردیش کی سب سے بڑی اپوزیشن پارٹی اب مدھیہ پردیش اور راجستھان میں اسمبلی انتخابات لڑنے کی تیاری کر رہی ہے۔ پارٹی نہ صرف ان ریاستوں میں الیکشن لڑے گی بلکہ 2024 کے عام انتخابات تک اپنی جڑیں مضبوط کرے گی۔ اکھلیش یادو کی زیرقیادت سماج وادی پارٹی اب اتر پردیش کے بعد راجستھان اور مدھیہ پردیش میں اپنے قدموں کے نشانات کو بڑھانا چاہتی ہے۔ مدھیہ پردیش اور راجستھان میں اسمبلی انتخابات 2024 کے لوک سبھا انتخابات سے ٹھیک پہلے ہونے والے ہیں۔

      ایس پی کی معلومات کے مطابق ان کی پارٹی ایم پی اور راجستھان کی سیاست میں مستقبل کے امکانات پر نظریں جمائے ہوئے ہے۔ ذرائع یہ بھی بتاتے ہیں کہ دونوں ریاستوں میں ایس پی ان سیٹوں کے لیے ایک نیا خاکہ تیار کر رہی ہے جن پر یادو اور مسلم کمیونٹی کے ووٹروں کا غلبہ ہے۔ حال ہی میں ایس پی سپریمو اور اتر پردیش کے سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو (Akhilesh Yadav) کرشنا جنم اشٹمی (Krishna Janmashtami) کے موقع پر گوالیار پہنچے تھے اور ایم پی میں الیکشن لڑنے کا اعلان کیا تھا۔

      ہریانہ راجستھان کے الور اور یوپی کے سرحدی علاقوں میں ذات پات کا حساب سماج وادی پارٹی کے حق میں رہا ہے۔ راجستھان میں گزشتہ اسمبلی انتخابات میں ایس پی نے کانگریس کے ساتھ اتحاد میں مقابلہ کرنے کی تیاری کی تھی، لیکن اتحاد ثابت نہیں ہوسکا اور ایس پی نے ایک درجن سے زیادہ سیٹوں پر تنہا مقابلہ کیا تھا۔ اگرچہ پارٹی اس انتخاب میں کوئی نشان چھوڑنے میں ناکام رہی، اب اس نے ایک بار پھر ریاست میں ہونے والے اسمبلی انتخابات کی تیاری شروع کر دی ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      UNSC:ہندوستان نے کہا-اصلاحی کال کے تئیں سنجیدہ بحث میں شامل ہونے کا ایک صحیح موقع

      دلچسپ بات یہ ہے کہ اس بار راجستھان میں کمیونسٹ پارٹی کی مدد سے تیسرا محاذ بنایا جا رہا ہے جو غیر بی جے پی اور غیر کانگریس پارٹیوں پر مشتمل ہوگا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ راجستھان میں کمیونسٹ پارٹیوں کی قیادت میں اس تیسرے محاذ میں سماج وادی پارٹی اہم رول ادا کرے گی۔

      یہ بھی پڑھیں:

      میرا نام Azamov ہے، میں دہشت گرد ہوں، نوپور شرما تھیں روس میں پکڑے گئے ISIS خودکش دہشت گرد حملہ آور کا ٹارگیٹ

      ذرائع نے بتایا کہ دریں اثنا اکھلیش یادو کی ایس پی مدھیہ پردیش کی 55 اسمبلی سیٹوں پر توجہ مرکوز کرے گی جن میں ان سیٹوں پر مسلم اور یادو ووٹروں کا مضبوط امتزاج ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: