ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

ایک کلو پیاز کے دام پانچ پیسے ملے ، تو کسان نے پھینک دی 13 کوئنٹل فصل

ناسک ضلع کے كرانج گاؤں کے ایک کسان نے دعوی کیا ہے کہ اسے پیاز کے لیے صرف 5 پیسے فی کلو گرام کی قیمت ملی ہے ۔

  • Agencies
  • Last Updated: Aug 25, 2016 10:53 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ایک کلو پیاز کے دام پانچ پیسے ملے ، تو کسان نے پھینک دی 13 کوئنٹل فصل
ناسک ضلع کے كرانج گاؤں کے ایک کسان نے دعوی کیا ہے کہ اسے پیاز کے لیے صرف 5 پیسے فی کلو گرام کی قیمت ملی ہے ۔

ناسک :  ناسک ضلع کے كرانج گاؤں کے ایک کسان نے دعوی کیا ہے کہ اسے پیاز کے لیے صرف 5 پیسے فی کلو گرام کی قیمت ملی ہے ۔ اس کی مخالفت میں کسان نے اپنی 13 کوئنٹل فصل کو کھیت میں ہی پھینک دیا ۔ تاہم تاجروں کا کہنا ہے کہ اس کے پیاز کا معیار انتہائی خراب تھا ، جس کی وجہ سے کسان کو اتنے کم قیمت کی پیشکش کی گئی ۔


نپاڑ تعلقہ کے سدھاکر دراڑ کے مطابق منگل کو انہیں ساكھیڑا کی مارکیٹنگ کمیٹی  میں پیاز کے لئے پانچ روپے فی کوئنٹل کی قیمت دی گئی ۔ انہوں نے کہا کہ 13 کوئنٹل کی ان کی فصل کے لئے صرف 65 روپے کا دام لگایا گیا ۔


کسان کے مطابق انہوں نے پیاز کی کاشت پر 700 روپے فی ایکڑ کا خرچ کیا اور پیداوار کو منڈی تک لانے کے لئے 780 روپے ٹرانسپورٹ پر خرچ کئے ۔ اتنی کم قیمت لگائے جانے سے ناراض کسان نے گھر آکر اپنی ساری فصل کھیت میں پھینک دی ۔


کسان کے مطابق میں نے نومبر دسمبر میں 10 ایکڑ میں پیاز کی کاشت کی تھی ۔ میں نے گھر پر تقریبا 1000 کوئنٹل پیاز کا اسٹوریج کیا تھا ، تاکہ اپریل میں اچھی قیمت مل سکے ۔ لیکن جون جولائی میں اے پی ایم سی میں 35 دن کی ہڑتال کی وجہ سے پیاز کی نیلامی بری طرح متاثر ہوئی اور اس کی وجہ سے یہ پیاز خراب ہو گیا ۔
First published: Aug 25, 2016 10:52 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading