ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

19 ماہ کی زینب کی جان بچانے کیلئے فنڈ کے ذریعے رقم جمع کرنے کی کوشش، 16 کروڑ روپے کے انجیکشن کی ضرورت

زینب کے والد اشفاق چودھری نے بتایا کہ بچی کا علاج سوئٹزرلینڈ میں ایک دوا ساز کمپنی کی بنائی ہو ئی انجکشن سے کیا جاسکتا ہے لیکن اس کی قیمت 16 کروڑ روپے ہے۔ جس کے لئے خاندان والوں سے مدد کی اپیل کی۔

  • Share this:
19 ماہ کی زینب کی جان بچانے کیلئے فنڈ کے ذریعے رقم جمع کرنے کی کوشش، 16 کروڑ روپے کے انجیکشن کی ضرورت
زینب کے والد اشفاق چودھری نے بتایا کہ بچی کا علاج سوئٹزرلینڈ میں ایک دوا ساز کمپنی کی بنائی ہو ئی انجکشن سے کیا جاسکتا ہے لیکن اس کی قیمت 16 کروڑ روپے ہے۔ جس کے لئے خاندان والوں سے مدد کی اپیل کی۔

ممبئی میں رہنے والی 19 ماہ کی زینب چودھری جو 19 ماہ کی عمر کے بعد بھی چل نہیں سکتی اور نہ بیٹھ سکتی ہے۔ جب زینب کے والدین نے ڈاکٹر کو اس بارے میں بتایا تو انہیں معلوم ہوا کہ زینب کو ایسی بیماری ہے۔ جسے اسپائنل مسکولر اٹروفی کہا جاتا ہے جس میں بچے کی ریڑھ کی ہڈی چلنے پھرنےکے قابل نہیں ہوتی ہے۔ یہ صرف زمین پر ہی لیٹ سکتی ہے۔


زینب کے والد اشفاق چودھری نے بتایا کہ بچی کا علاج سوئٹزرلینڈ میں ایک دوا ساز کمپنی کی بنائی ہو ئی انجکشن سے کیا جاسکتا ہے لیکن اس کی قیمت 16 کروڑ روپے ہے۔ جس کے لئے خاندان والوں سے مدد کی اپیل کی۔ زینب کی والدہ امرین چودھری بھی اپنی بیٹی کےلئے لوگوں سے اپیل کررہی ہیں تاکہ ان کی بیٹی عام بچوں کی طرح اپنی زندگی گزارسکے نیورولوجسٹ ڈاکٹر نیلو دیسائی کے مطابق یہ جینیاتی بیماری ہے۔ اگر اس بیماری کا بروقت علاج نہ کیا جائے تو چھوٹے بچوں کی زندگی بھی خطرے میں پڑ جاتی ہے۔


چھوٹے بچوں کو بھی اس مرض کی وجہ سے اٹھنے ، بیٹھنے اور چلنے میں پریشانی ہوتی ہے۔ تین سال قبل بنایا گیا زولگنسا انجکشن اس بیماری کے علاج کے لئے کافی کارآمد ثابت ہورہا ہے لیکن اس کی قیمت زیادہ ہونے کی وجہ سے یہ سب کے لئے دستیاب نہیں ہے۔ زینب کو انجکشن کروڑوں روپے دیا جائے گا۔ زینب کو جین تھراپی کے لئے جو انجکشن درکار ہے وہ زولگنسما کہلاتی ہے یہ انجکشن سوئٹزرلینڈ نیوٹس نام کی ایک کمپنی نے تیار کیا ہے۔

Published by: Sana Naeem
First published: May 30, 2021 09:31 PM IST