ہوم » نیوز » No Category

جرمن بیکری بم دھماکہ کیس کی سماعت ملتوی ، اگلی سماعت 29 ستمبر کو

ممبئی: جرمن بیکری بم دھماکے معاملے میں حمایت بیگ کے مقدمے کی سماعت میں آج اس وقت رکاوٹ پیدا ہو گئی جب سرکاری وکیل راجہ ٹھاکرے نے اپنی عدیم الفرصتی کو جواز بناکر عدالت کے رو برو یہ در خواست کی کہ معاملے کی سماعت کے لئے آئندہ کی تاریخ مقرر کی جائے

  • UNI
  • Last Updated: Sep 21, 2015 09:18 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
جرمن بیکری بم دھماکہ کیس  کی سماعت ملتوی ، اگلی سماعت 29 ستمبر کو
ممبئی: جرمن بیکری بم دھماکے معاملے میں حمایت بیگ کے مقدمے کی سماعت میں آج اس وقت رکاوٹ پیدا ہو گئی جب سرکاری وکیل راجہ ٹھاکرے نے اپنی عدیم الفرصتی کو جواز بناکر عدالت کے رو برو یہ در خواست کی کہ معاملے کی سماعت کے لئے آئندہ کی تاریخ مقرر کی جائے

ممبئی: جرمن بیکری بم دھماکے معاملے میں حمایت بیگ کے مقدمے کی سماعت میں آج اس وقت رکاوٹ پیدا ہو گئی جب سرکاری وکیل راجہ ٹھاکرے نے اپنی عدیم الفرصتی کو جواز بناکر عدالت کے رو برو یہ در خواست کی کہ معاملے کی سماعت کے لئے آئندہ کی تاریخ مقرر کی جائے سرکاری وکیل کے اس اعتذار کو عدالت نے منظور کرتے ہوئے اس معاملے کی سماعت کے لئے آئندہ 29 ستمبر کی تاریخ مقرر کی ہے ۔جس پر دفاع کی جا نب سے عدالت کے رو برو سخت بر ہمی کا اظہار کیا گیا۔


واضح رہے کہ جرمن بیکری بم دھماکہ معاملے میں تقریبا ایک ماہ سے عدالت میں سماعت جاری تھی اور سر کاری وکیل راجہ ٹھاکرے عدالت کے رو برو ملزم پر عائد الزامات اور نچلی عدالت کے فیصلوں کی بنیاد پر بحث کر رہے تھے ،امید کی جا رہی تھی کہ سر کاری وکیل کی بحث آئندہ چند سماعتوں میں مکمل ہو جائے گی ،لیکن سر کاری وکیل کی جانب سے آج عدالت میں سماعت کی تاریخ ملتوی کرنے کی در خواست کی گئی اور اس کا جواز انہوں نے اپنی عدیم الفرصتی بتایا ۔سرکاری وکیل کی اس درخواست پر دفاع کی جانب سے عدالت کے رو برو سخت اعتراض کیا گیا ۔


یہاں جاری کردہ ایک پریس ریلیز کے مطابق وکیل دفاع نے عدالت سے کہا ہمارے موکل حمایت بیگ کا مقدمہ پہلے سے ہی التواء کا شکار ہے نچلی عدالت کے فیصلوں کے خلاف ممبئی ہائی کورٹ میں اپیل دائر کرنے کے بعد تقریبا دو سال تک یہ معاملہ معلق رہا اب جب کہ عدالت اس معاملے کی سماعت کرنے کو تیار ہے تو سر کاری وکیل اپنی عدیم الفرصتی کا بہانہ بناکر سماعت کو مزید التواء میں ڈال رہے ہیں یہ نہ صرف آئین کے خلاف ہے بلکہ ملزم کو حاصل بنیادی انسانی حقوق کے بھی خلاف ہے ۔


واضح رہے کہ اس مقدمے کی سماعت ممبئی ہائی کورٹ میں جسٹس این ایچ پاٹل اور جسٹس شکرے پر مشتمل بنچ کے رو برو جاری ہے اگر سماعت مستقل جا ری رہے تو عنقریب ملزم حمایت بیگ کے حق میں کوئی اہم فیصلہ آسکتا ہے۔ لیکن اس معاملے میں سرکاری وکیل کی جا نب سے ٹال مٹول کیا جا رہا ہے ۔


جمعیۃ علماء مہاراشٹر کے صدر حافظ ندیم صدیقی نے کہا بے قصورملزم حمایت بیگ سماعت معاملے میں سرکاری وکیل کی جا نب سے تاریخ کو ملتوی کرانا انتہائی افسوس ناک پہلو ہے اس کی وجہ سے ملز م کو انصاف ملنے میں دن بدن تاخیرہو رہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ بے قصوروں کی رہائی کے لئے ہماری کوشش اسی طرح جاری رہے گی دیر سہی لیکن ایک نہ ایک دن انصاف ضرور ملے گا ۔عدالت میںآج اس موقع پر جمعیۃ مہا راشٹر کے لیگل سیل کے سینر کریمنل ایڈوکیٹ تہور خان پٹھان ایڈوکیٹ عشرت خان مو جود تھے۔

First published: Sep 21, 2015 09:17 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading