اپنا ضلع منتخب کریں۔

    وزیر اعظم نریندر مودی نے اپنا حق رائے دہی کیا استعمال، خواتین و نوجوان ووٹرس سے ووٹ ڈالنے کی اپیل

    پی ایم مودی ووٹ ڈالنے کے بعد اپنی سیاہی والی انگلی دکھاتے ہوئے

    پی ایم مودی ووٹ ڈالنے کے بعد اپنی سیاہی والی انگلی دکھاتے ہوئے

    وزیر اعظم نے لوگوں پر زور دیا کہ وہ بیلٹ پر جائیں اور ملک بھر میں ہونے والے متعدد ضمنی انتخابات میں اپنا حق رائے دہی استعمال کریں۔ ٹویٹر پی ایم مودی نے کہا کہ ان تمام لوگوں سے اپیل کی کہ وہ سیاسی شعور کے ساتھ ووٹ ڈالیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Gujarat | Delhi | Mumbai | Hyderabad | Lucknow
    • Share this:
      گجرات اسمبلی انتخابات: وزیر اعظم نریندر مودی نے آج بروز پیر کو عوام خاص طور پر خواتین اور نوجوان ووٹروں سے اپیل کی کہ وہ باہر نکلیں اور بڑی تعداد میں اپنے حق رائے دہی کا استعمال کریں۔ گاندھی نگر حلقے میں ووٹ ڈالتے وقت مودی ایک قطار میں کھڑے تھے اور اپنا ووٹ ڈالنے کے بعد وہ اپنی سیاہی والی انگلی دکھا کر اور دوسروں کو ووٹ دینے کی ترغیب دیتے ہوئے بھیڑ کے سامنے سے چلے گئے۔

      وزیر اعظم نے لوگوں پر زور دیا کہ وہ بیلٹ پر جائیں اور ملک بھر میں ہونے والے متعدد ضمنی انتخابات میں اپنا حق رائے دہی استعمال کریں۔ ٹویٹر پی ایم مودی نے کہا کہ ان تمام لوگوں سے جو گجرات انتخابات کے دوسرے مرحلے میں ووٹ ڈال رہے ہیں، خاص طور پر نوجوان ووٹروں اور خواتین ووٹرز سے بڑی تعداد میں ووٹ ڈالنے کی اپیل کرتا ہوں۔

      واضح رہے کہ گجرات انتخابات کے دوسرے اور آخری مرحلے کے لیے وسطی گجرات کے 14 اضلاع بشمول احمد آباد، وڈودرا اور گاندھی نگر میں ووٹ ڈالا جارہا ہے، رائے دہندوں میں جوش و خروش دیکھا جارہا ہے۔ اس سے قبل 89 نشستوں کے لیے پولنگ 1 دسمبر کو ہوئی تھی۔ نتائج کا اعلان 8 دسمبر کو کیا جائے گا۔ سال2017 میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے پولنگ کے پہلے مرحلے میں 89 میں سے 48 سیٹیں جیتیں اور دوسرے مرحلے میں 51 سیٹیں حاصل کیں، جس سے اس کی کل تعداد 182 میں سے 99 ہو گئی۔

      یہ بھی پڑھیں: 



      وزیر اعظم نریندر مودی نے 3 نومبر کو انتخابی تاریخوں کا اعلان ہونے کے بعد سے ریاست میں 35 سے زیادہ ریلیاں کیں اور 1 و 2 دسمبر کو احمد آباد میں دو بیک ٹو بیک روڈ شو کیے، جن میں ایک 50 کلومیٹر کا روڈ شو بھی شامل تھا جس میں 14 ریلیاں شامل تھیں۔ مرکزی وزراء امت شاہ، راج ناتھ سنگھ، گجیندر سنگھ شیخاوت، اسمرتی ایرانی اور بی جے پی کے صدر جے پی نڈا نے بھی دوسرے مرحلے میں حکمراں جماعت کے لیے مہم چلائی۔



      اتر پردیش میں مین پوری لوک سبھا سیٹ اور پانچ ریاستوں کی چھ اسمبلی سیٹوں پر ضمنی انتخابات ہو رہے ہیں، جن میں اتر پردیش کے رام پور صدر اور کھٹولی، اڈیشہ میں پدم پور، راجستھان میں سردارشہر، بہار میں کرہانی، اور چھتیس گڑھ میں بھانوپرتاپور شامل ہیں۔ سماج وادی پارٹی (ایس پی) کے بانی ملائم سنگھ یادو کی موت کے بعد مین پوری لوک سبھا ضمنی انتخاب ضروری ہو گیا ہے۔ ایس پی لیڈر ڈمپل یادو، ملائم سنگھ کی بہو اس سیٹ سے الیکشن لڑ رہی ہیں۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: