اپنا ضلع منتخب کریں۔

    کبھی گجرات کا کنگ ہوا کرتی تھی کانگریس، BJP بھی نہیں توڑ پائی اس کا ریکارڈ

    Youtube Video

    حالانکہ خبر لکھنے تک سامنے آنے والے رجحانات بہت ابتدائی ہیں اور حتمی نتائج اس سے مختلف ہو سکتے ہیں لیکن تجزیہ کاروں کا خیال ہے کہ گجرات میں کانگریس نے بی جے پی کے خلاف لڑائی میں نہ تو طاقت دکھائی ہے اور نہ ہی جذبہ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Gujarat, India
    • Share this:
      Gujarat Assembly Election Results 2022: گجرات اسمبلی انتخابی نتائج 2022 کے حوالے سے اب تک جو رجحانات آئے ہیں، ان میں بی جے پی ایک بار پھر مکمل اکثریت کے ساتھ حکومت بناتی نظر آرہی ہے۔ وہیں دوسری طرف، گجرات کی 182 رکنی اسمبلی میں کانگریس 50 سے بھی کم سیٹوں تک محدود دکھائی دیتی نظر آرہی ہے۔ حالانکہ خبر لکھنے تک سامنے آنے والے رجحانات بہت ابتدائی ہیں اور حتمی نتائج اس سے مختلف ہو سکتے ہیں لیکن تجزیہ کاروں کا خیال ہے کہ گجرات میں کانگریس نے بی جے پی کے خلاف لڑائی میں نہ تو طاقت دکھائی ہے اور نہ ہی جذبہ۔

      ویسے ایک وقت تھا جب اس ساحلی ریاست میں کانگریس کی طوطی  بولتی تھی۔ 1985 کے گجرات انتخابات میں کانگریس نے 55.55 فیصد ووٹ شیئر کے ساتھ 149 سیٹیں جیت کر ریکارڈ قائم کیا تھا۔ یہ ایک ایسا ریکارڈ تھا جسے گجرات میں تقریباً تین دہائیوں سے برسراقتدار بھارتیہ جنتا پارٹی بھی نہیں توڑ پائی۔

      گجرات میں کانگریس کے نام ایک اور بڑا ریکارڈ
      الیکشن کمیشن کے اعداد و شمار کے تجزیہ سے پتہ چلتا ہے کہ کانگریس واحد  ایسی پارٹی ہے جس نے ریاست میں تین بار 140 یا اس سے زیادہ سیٹیں جیتی ہیں۔ اس نے 1980 کے انتخابات 141 سیٹوں کے ساتھ اور 1972 کے انتخابات میں 140 سیٹوں  کے ساتھ کامیابی حاصل کی۔

      متاثرہ اجین کےلوگوں کی جمعیت علما کےذمہ داران سےملاقات، آشیانہ بچانے کا حکومت سےکیا مطالبہ

      عام آدمی پارٹی سرفہرست، جانیں کس وارڈ سے کون جیتا، جانئے مکمل تفصیل

      1990 کے انتخابات میں کانگریس خستہ حال ہوئی

      یہاں یہ بھی دھیان رکھنا ضروری ہے کہ 1985 کے انتخابات میں آخری بار کانگریس نے ریاست میں واحد سب سے بڑی پارٹی کے طور پر حکومت بنائی تھی۔ اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ سال 1990 کے اگلے انتخابات میں سب سے پرانی پارٹی کا ووٹ شیئر سمٹ کر تقریباً 31 فیصد تک رہ گیا ۔ اس الیکشن میں کانگریس صرف 33 سیٹوں کے ساتھ اپنی کم ترین سطح پر آگئی۔

      وہیں اگر ہم بی جے پی کی بات کریں تو یہ پارٹی پہلی بار ریاست میں 1995 میں 121 سیٹوں کے ساتھ برسراقتدار آئی تھی، پھر سال 2002 میں اس نے 49.85 فیصد ووٹ شیئر کے ساتھ 127 سیٹیں جیتی تھیں۔ ویسے سال 1990 کے بعد سے، ریاست کے ہر اسمبلی انتخابات میں کانگریس کے ووٹ شیئر میں اضافہ ہوا ہے۔ پچھلی بار یعنی 2017 کے اسمبلی انتخابات میں پارٹی کو تقریباً 43 فیصد ووٹ ملے تھے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: