ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

بغاوت کے معاملہ میں ہاردک پٹیل کومشروط ضمانت، چھ ماہ کیلئے ریاست بدر کا حکم

احمد آباد : گجرات ہائی کورٹ نے آج پاٹي دار یا پٹیل ریزرویشن تحریک کے جیل بند لیڈر ہاردک پٹیل کو غداری کے دو مقدمات میں اس شرط پر ضمانت دے دی کہ جیل سے چھوٹنے پر انہیں چھ ماہ کا وقت ریاست سے باہر گزارناہو گا۔

  • UNI
  • Last Updated: Jul 08, 2016 05:13 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
بغاوت کے معاملہ میں ہاردک پٹیل کومشروط ضمانت، چھ ماہ کیلئے ریاست بدر کا حکم
احمد آباد : گجرات ہائی کورٹ نے آج پاٹي دار یا پٹیل ریزرویشن تحریک کے جیل بند لیڈر ہاردک پٹیل کو غداری کے دو مقدمات میں اس شرط پر ضمانت دے دی کہ جیل سے چھوٹنے پر انہیں چھ ماہ کا وقت ریاست سے باہر گزارناہو گا۔

احمد آباد : گجرات ہائی کورٹ نے آج پاٹي دار یا پٹیل ریزرویشن تحریک کے جیل بند لیڈر ہاردک پٹیل کو غداری کے دو مقدمات میں اس شرط پر ضمانت دے دی کہ جیل سے چھوٹنے پر انہیں چھ ماہ کا وقت ریاست سے باہر گزارناہو گا۔ تاہم ان معاملات میں ضمانت ملنے کے باوجود وسنگر میں بی جے پی ممبر اسمبلی رشی كیش پٹیل کے دفتر پر حملے اور اس دوران ہونے والے پرتشدد واقعات اور کچھ دیگر معاملات میں ضمانت نہ ملنے کی وجہ سے وہ فی الحال جیل سے باہر نہیں آئیں گے۔

خیال رہے کہ 22 سالہ ہاردک کو گزشتہ سال اکتوبر میں راجکوٹ سے گرفتار کیا گیا تھا۔ اسی ماہ ان کے خلاف اگست کی تحریک کے پر تشدد واقعات اور صورت میں اپنے ایک حامی کو خودکشی کرنے کی بجائے پولیس والوں کو قتل کرنے کی مشورہ دینے کے سلسلے میں غداری کے یہ مختلف مقدمات احمد آباد اور سورت کے امرولي میں کرائم برانچ نے درج کرائے تھے۔ تب سے انہیں سورت کے لاجپور جیل میں رکھا گیا ہے۔ جسٹس اے جے دیسائی کی عدالت نے ہاردک کو ضمانت دیتے ہوئے انہیں ضمانت کی شرائط کے حساب سے نئے سرے سے اقبالیہ بیان عدالت میں جمع کرنے کے بھی احکامات دیے۔

ان کے وکیل رفیق لوكھنڈوالا نے صحافیوں کو بتایا کہ وسنگر معاملے میں بھی ہاردک کی ضمانت عرضی پر 11 جولائی کو سماعت ہوگی اور پھر ضمانت ملنے کی صورت میں ان کی رہائی کا راستہ صاف ہو سکے گا۔ مسٹر لوكھنڈوالا نے بتایا کہ ہاردک نے خود ہی عدالت کے سامنے یہ کہا تھا کہ اگر انہیں غداری کے کیس میں ضمانت مل جاتی ہے تو وہ چھ ماہ تک ریاست سے باہر رہنے کو تیار ہیں۔ عدالت نے ان کی ضمانت عرضی پر سماعت گذشتہ 13 جون کو ہی مکمل کر کے اپنا فیصلہ محفوظ رکھا تھا۔

سماعت کے دوران سرکاری وکیل متیش امین نے کہا تھا کہ اگر ہاردک کو ضمانت دی گئی تو وہ پھر سے قانون اور امن کے لئے خطرہ پیدا کر سکتے ہیں۔ تاہم ہاردک کے اہم وکیل جبین بھرڈا نے تب کہا کہ ان کے موکل ضمانت ملنے پر چھ ماہ کے لئے ریاست سے باہر رہنے کو تیار ہیں تاہم وہ پرامن طریقے سے جاری تحریک سے جمہوری طریقے سے جڑے رہیں گے۔

غداری سے متعلق احمد آباد کے معاملے میں ہاردک سمیت کل چھ ملزم ہیں جن میں سے دو فرار ہیں اور تین دیگر چراغ پٹیل، کیتن پٹیل اور دنیش پٹیل کو پہلے ہی ضمانت مل چکی ہے۔ سورت میں درج غداری کیس میں ہاردک کے دو معاون ملزموں وپيل دیسائی اور چراغ دیسائی کو بھی پہلے ہی ضمانت مل چکی ہے۔

First published: Jul 08, 2016 05:13 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading