ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

حج 2019 کو بہتربنانے کا دعویٰ، آن لائن عمل 18 اکتوبرجبکہ آف لائن عمل کا آغاز22 اکتوبرسے

اقلیتی امور کے وزیر مختار عباس نقوی نے کہا ہے کہ آزادی کے بعد یہ پہلا موقع ہے کہ ملک میں حج 2018 کے اختتام کے فوراً بعد اگلے برس کے سفر حج کی تیاریاں شروع ہوگئی ہیں۔

  • UNI
  • Last Updated: Oct 17, 2018 07:17 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
حج 2019 کو بہتربنانے کا دعویٰ، آن لائن عمل 18 اکتوبرجبکہ آف لائن عمل کا آغاز22 اکتوبرسے
مختار عباس نقوی ۔ فائل فوٹو ۔

اقلیتی امور کے وزیر مختار عباس نقوی نے کہا ہے کہ آزادی کے بعد یہ پہلا موقع ہے کہ ملک میں حج 2018 کے اختتام کے فوراً بعد اگلے برس کے سفر حج کی تیاریاں شروع ہوگئی ہیں۔ مختارعباس نقوی نے بدھ کے روز حج ہاؤس، ممبئی میں ایک میٹنگ میں حج 2019 کی تیاریوں کا جائزہ لیا۔ اس موقع پر اقلیتی امور کی وزارت، وزارت خارجہ، سول ایوی ایشن اور وزارت صحت کے علاوہ ہندوستانی حج کمیٹی، سعودی عرب میں ہندوستانی سفارتخانہ اور قونصل خانہ کے نمائندے موجود تھے۔

انہوں نے کہا کہ حج کا عمل جلد شروع ہوجانے سے آئندہ برس کے سفر حج کے انتظامات سے متعلق بہتر سہولیات یقینی بنانے میں مدد ملے گی۔ اس کے علاوہ ہندوستان اور سعودی عرب میں متعلقہ ایجنسیوں کو انتظامات کے لئے کافی وقت مل سکے گا۔  نقوی نے بتایا کہ حج 2019 کے لئے آن لائن عمل 18 اکتوبر سے شروع ہوگا ، جبکہ آف لائن عمل 22 اکتوبر سے شروع ہوجائے گا۔ حج 2018 کے لئے 3 لاکھ 55 ہزار 604 درخواستیں موصول ہوئی تھیں جن میں ایک لاکھ 66 ہزار 387 خواتین شامل تھیں۔

میٹنگ میں اطلاع دی گئی کہ حج 2018 میں حج سبسڈی ختم کئے جانے کے باجوود عازمین کے جوش میں کوئی کمی نہیں آئی ہے۔ بچولیوں کے ختم ہونے اور سو فیصد آن لائن اور شفاف عمل نے اس بات کو یقینی بنا دیا کہ حج سبسڈی ختم کئے جانے کے بعد عازمین پر کوئی غیر ضروری مالی بوجھ نہیں پڑا ہے۔

حکومت کی جانب سے 2017 میں ایک لاکھ 24 ہزار 852 عازمین حج کے لئے مختلف ایئر لائنس کو مجموعی طور پر 1030 کروڑ روپے کرائے کے طور پر ادا کئے گئے تھے جبکہ 2018 میں ایک لاکھ 28 ہزار 702 عازمین حج کے لئے ایئر لائنس کو مجموعی طور پر 973 کروڑ روپے کی ادائیگی کی گئی۔ یہ سبھی عازمین حج کمیٹی آف انڈیا کے ذریعہ سفر حج پر گئے تھے۔ اس کا مطلب یہ ہوا کہ حج سبسڈی ختم کئے جانے کے بعد اس برس ایئر لائنس کو 57 کروڑ روپے کم رقم ادا کرنی پڑی۔

مختارعباس نقوی نے کہا کہ 2018 کا سفر حج کافی کامیاب رہا اور یہ آزادی کے بعد پہلا موقع ہے جب ریکارڈ ایک لاکھ 75 ہزار 25 مسلمان سفر حج پر روانہ ہوئے اور انہیں کسی طرح کی سبسڈی نہیں دی گئی۔ انہوں نے کہا کہ ہوائی خدمات کے لئے ٹینڈر نومبر تک مکمل کرلئے جائیں گے اور مکہ اور مدینہ میں رہائش سے متعلق کارروائی دسمبر 2018 اور جنوری 2019 تک پوری کرلی جائیں گی۔

سعودی عرب میں رہائش کا خرچ اتنا ہی رہے گا جنتا 2018 کے حج کے دوران تھا۔ عازمین حج کالی کٹ ہوائی اڈے سے بھی سفر حج پر جاسکیں گے۔ مسٹر نقوی نے حج 2018 کا عمل کامیابی سے مکمل ہونے پر سعودی عرب حکومت اور دیگر متعلقہ ایجنسیوں کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ عازمین کی سکیورٹی، بہتر خدمات اور طبی سہولیات دستیاب کرانا حکومت کی اولین ترجیح ہے اور اس معاملے میں کسی بھی طرح کی لاپروائی نہیں برتی جائے گی۔ اس میٹنگ میں حج 2019 سے متعلق مختلف امور جیسے حج کے لئے درخواست کا عمل، رہائش، ٹرانسپورٹ اور طبی سہولیات کے بارے میں غور و خوض کیا گیا۔

First published: Oct 17, 2018 06:04 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading