உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    حج 2022 : 65 سال سے زیادہ عمرکے عازمین بھی دے سکتے ہیں Hajj کیلئے درخواست، مرکزی حج کمیٹی نے جاری کیا سرکولر

    حج کا یہ عظیم موقع دنیا کے لاکھوں لوگوں کی زندگی اور معاش کو ہمارے تصورات سے کہیں زیادہ مربوط کرتا ہے۔ یہ صرف اسمارٹ کارڈز کو آپریٹنگ اور خدمات سے منسلک کرنے کے بارے میں نہیں ہے، بلکہ یہ موقع معاشی اعتبار سے بھی بہت اہمیت کا حامل ہے۔

    حج کا یہ عظیم موقع دنیا کے لاکھوں لوگوں کی زندگی اور معاش کو ہمارے تصورات سے کہیں زیادہ مربوط کرتا ہے۔ یہ صرف اسمارٹ کارڈز کو آپریٹنگ اور خدمات سے منسلک کرنے کے بارے میں نہیں ہے، بلکہ یہ موقع معاشی اعتبار سے بھی بہت اہمیت کا حامل ہے۔

    مرکزی حج کمیٹی کے سی ای او یعقوب شیخا نے بتایاکہ حج 2022 کورونا وائرس کی وجہ سے مخصوص شرائط و ضوابط کے تحت منعقد کیا جائیگا۔ انہوں نے کہاکہ سعودی حکومت اور وزارت برائے اقلیتی امور حکومت ہند کی ہدایات پر گائیڈ لائن میں ترمیم ممکن ہے۔

    • Share this:
    حج کمیٹی آف انڈیا نے حج 2022 کیلئے زائد عمر کی حد منسوج کردی ہے۔ اب 65 سال سے عمر کے عازمین حج بھی حج کیلئے درخواست کرسکتے ہیں۔ مرکزی حج کمیٹی نے باقائدہ ایک سرکیولرجاری کرتے ہوئے یہ اطلاع دی ہے۔ سرکیولر میں بتایا گیا ہے کہ پیراگراف چار حج گائیڈ لائن برائے 2022 میں تبدیلی کرتے ہوئے زائد عمر کی حد منسوخ کردی گئی ہے۔ اب 65 سال سے زائد عمر کے عازمین بھی درخواست دے سکتے ہیں ۔ واضح رہے کہ حج پالیسی 2018 - 22 کے تحت 70 سال کے زائد عمر کے عازمین کے ساتھ اس کا ایک محرم رشتہ دار بغیر قرعہ اندازی کے حج کا اہل قرار پاتا ہے۔

    اب صرف وہی محرم رشتہ دار ساتھی کے طور پرحج کا اہل قرارپائیگا جس نے زندگی میں حج نہیں کیا ہو ۔ اس کے ساتھ ہی ریاستوں کو فراہم کئے گئے خصوصی زمرے کے کوٹے سے زائد درخواستیں موصول ہونے پر ان کے درمیان قرعہ اندازی کی جائیگی۔ کمپینین یعنی 70 سال سے زائد عمر والے عازمِ حج کے ساتھ محرم رشتہ دارکے طور پر حج پر روانہ ہونے کے خواہش مند افراد کو حلف نامہ بھی داخل کرنا پڑے گا۔ اگر معمر شخص کا حج منسوخ ہوتا ہے تو اس محرم رشتہ دار کی درخواست بھی ازخود منسوخ ہوجائیگی۔

    مرکزی حج کمیٹی کے سی ای او یعقوب شیخا نے بتایاکہ حج 2022 کورونا وائرس کی وجہ سے مخصوص شرائط و ضوابط کے تحت منعقد کیا جائیگا۔ انہوں نے کہاکہ سعودی حکومت اور وزارت برائے اقلیتی امور حکومت ہند کی ہدایات پر گائیڈ لائن میں ترمیم ممکن ہے۔

    قومی، بین الاقوامی اور جموں وکشمیر کی تازہ ترین خبروں کےعلاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں ۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: